ماروتی سوزکی جموں اور کشمیر میں5سو لیٹر فی منٹ پیداواری صلاحیت کے2آکسیجن جنریٹر پلانٹ لگائے گا

جموں //ملک کی سب سے بڑی آٹوموبائل مینوفیکچر ماروتی سوزوکی انڈیا لمیٹڈ نے کارپوریٹ سماجی ذمہ داری (سی ایس آر) کے تحت جموں وکشمیر میں  500 لیٹر فی منٹ صلاحیت کے2 آکسیجن پی ایس اے جنریٹر پلانٹ نصب کرنے پر اتفاق کیا ہے۔لیفٹیننٹ گورنرکی منوج سنہا کی کارپوریشنوں سے اپیل کا جواب دیتے ہو ئے جس میں موصوف نے کہا تھا کہ کارپوریٹس سے آئیں کہ وہ یوٹی کے علاقوں میں آکسیجن جنریٹر پلانٹ لگانے میں مدد کے لئے آگے آئیں ، ماروتی سوزوکی انڈیا لمیٹڈ (ایم ایس آئی ایل) نے جموں اور سری نگر میڈیکل کالجوں میںایک ایک پلانٹ لگانے کی پیش کش کی ہے۔سابق ایم ایل سی اور وہیکلڈس گروپ آف کمپنیوں کے چیرمین دیویندر سنگھ رانا نے بدھ کی شام  یہاںلیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کو اس کی آگاہی دی ، جنہوں نے ماروتی سوزوکی انڈیا لمیٹڈ کی اس پیش کش کو قبول کرتے ہوئے جموں وکشمیر کے لوگوں کی جانب سے کمپنی کا شکریہ ادا کیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے ایم ایس آئی ایل اور اس کے اعلی مینجمنٹ چیئرمین مسٹر آر سی سی بھارگوا اور منیجنگ ڈائریکٹر مسٹر کینیچی ایوکاوا کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے  وبائی مرض میں جموں و کشمیر کے عوام کی مدد کے لئے آگے آنے کی پہل کی۔اس سے قبل دیویندر سنگھ رانا نے ماروتی سوزوکی انڈیا لمیٹڈ (ایم ایس آئی ایل) سے درخواست کی تھی کہ وہ جذبہ خیر سگالی کے تحت جموں و کشمیر میں کوروناوباء کے دوران صحت کی دیکھ بھال کی کوششوں میں مدد کریں۔لیفٹیننٹ گورنر نے دیگر کارپوریشنوں سے بھی اپیل کی کہ وہ MSIL کی تقلید کریں اور وبائی امراض سے لڑنے کے لئے حکومت کی کوششوں کو پورا کرنے کے لئے آگے آئیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے فنانشل کمشنر ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن اتل ڈلو کو ایم ایس آئی ایل کے ساتھ دونوں پلانٹوں کی جلد تنصیب کے عمل کو مربوط کرنے کی ہدایت دی۔MSIL کی اعلی انتظامیہ اس سرگرمی کو مربوط اور نگرانی میں شامل ہے اور امید ہے کہ اس سے COVID کے خلاف قومی لڑائی میں کچھ فرق پڑے گا۔جموں و کشمیر کے لئے2 آکسیجن PSA جنریٹر پلانٹس جون کے پہلے ہفتے تک تک پہنچ جائیں اور ان پر1.30 کروڑ روپے کی لاگت آنے کا امکان ہے۔