عید کی خریداری پر بھدرواہ کے بازاروں میں لوگوں کا اژدھام

بھدرواہ//عید الفطر کے مبارک موقعہ پر بھدرواہ کے بازاروں اور ودی چناب کے شاپنگ مراکز  ،خصوصی طور سے بھدرواہ قصبہ کے مہشور اوپن مارکیٹ میں لوگوں کی کافی تعداد خریداری کے لئے اُمڑ پڑی۔ عید سے قبل ہی لوگ خریداری میں مست رہے۔بازار خصوصاً سیری بازار کا اوپن مارکیٹ ،جو کہ ضلع ڈوڈہ میں خریداری کا اہم مرکز ہے ،میں بازار صُبح سویرے ہی کھولے گئے۔نصف شب میں ہی کئی پھڑی والوں کو جگہ پر قبضہ کرتے ہوئے دیکھا گیا ۔بھدرواہ،بھالہ ،ٹھاٹھری ،چھرالہ اور گندوہ کے مختلف علاقوں سے لوگ فیشن ہائوسوں، بُٹیکوں وغیرہ میں ہزاروں کی تعداد میں شام دیر گئے تک خریداری کرتے رہے۔لوگ ریڈی میڈ کپڑے، برتن ،الیکٹرانک اشیاء اشیائے خوردنی و دیگر اشیا ء کی خریداری کرتے رہے۔وادی بھدرواہ میںکاروباری مرکز سیری بازار ،لوگوں سے کھچا کھچ بھرے رہے۔گنپت مارکیٹ، کھالرو مارکیٹ اور صدر بازار میں بھی لوگوں کی کافی بھئیڑ دیکھنے کو ملی۔خریداری کرنے والوں میں نہ صرف مسلمان ،بلکہ غیر مسلم بھی عید سے قبل خریداری میں مصروف رہے کیونکہ عید کے موقعہ پر  مارکیٹ قدرے سستا رہتا ہے۔لوگوں خصوصاً دیہی علاقوں کے لوگ سال بھر اس تہوار کا انتظار کرتے ہیں تاکہ وہ ریڈی میڈ کپڑے، برتن، اور الیکٹرانک اشیاء اوپن مارکیٹ سے سسٹے داموں خرید سکیں۔یہ  کپواڑہ کے ایک دوکاندار مشتاق احمد لون نے کہا کہ عید کے موقعہ پر لوگ تقریبا سال بھر کی خریداری کرتے ہیں وہ بھی پورے کُنبہ کے لئے کرتے ہیں۔دوکاندار بھی اس موقعہ پر خوش دکھائی دیتے ہیں کیونکہ انکی سیل کافی بڑ جاتی ہے۔بھدرواہ میں اوپن مارکیٹ کا تصور 1993 میں چند مقامی پھڑی والوں سے شروع ہوا لیکن آجکل یہ اب وادی چناب میں سب سے بڑا اور پُر ہجوم مارکیٹ بن گیا ہے جہاں پر خریداروں کی کافی بئیڑ دکھائی دیتی ہے۔بھدرواہ کے ایک سرکردہ کاروباری امتیاز الرحمان نے کہا عید سے قبل کے تین دنوں میں پورے سال سے بھی زیادہ سیل ہوجاتی ہے۔مقامی کاروباریوں کے علاوہ پنجاب، ہماچل پردیش اور ہریانہ کے کاروباری بھی ان دنوں کافی سیل کرتے ہیں۔پنجاب جگرائوں کی ایک خاتوں کاروباری نے کہا کہ ہمارا گروپ150پھڑی والوں پر مشتمل ہے جو کہ ریڈی میڈ کپڑوں سے لیکر مصالحہ جات کا کاروبار کر رہے ہیں۔اُس نے کہا کہ ہمارے سارے گروپوں نے اچھی سیل کی ہے۔اُس نے کہا کہ سیل کے ساتھ ساتھ ہم یہاں کے خوشوار موسم کا بھی لظف اُٹھاتے ہیں۔بازاروں مٰں کافی بھیئڑ ہونے کی وجہ سے انتظامیہ نے سیکورٹی کے معقول انتظامات کئے ہیں۔