شیخ محمد عبداللہ کو39ویں برسی پرجموں میں خراج عقیدت پیش

 جموں//نیشنل کانفرنس کے رہنماؤں نے شیخ محمد عبداللہ کو ان کی 39 ویں برسی پر شاندار خراج تحسین پیش کیا اور عہد کیا کہ وہ سب سے بڑے لیڈر کی طرف سے وراثت ، بھائی چارے اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی وراثت کو برقرار رکھنے رکھنے کا عہد کرتے ہیں۔ صوبائی صدردیویندر سنگھ رانا نے شیر کشمیر بھون میں شیخ محمد عبداللہ کو خراج عقیدت پیش کرنے میں پارٹی کیڈر اور قیادت کی قیادت کرتے ہوئے شیخ محمد عبداللہ کو مہاتما گاندھی اور خان عبدالغفار خان کے دور کے قدآور رہنماؤں میں سے ایک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کا سیکولر اور ترقی پسند نقطہ نظر نسلوں کے لیے تحریک کا ذریعہ رہے گا۔ رانا نے شیخ محمد عبداللہ کی زندگی کے مختلف پہلوؤں پر روشنی ڈالی اور لوگوں کی بہتری کے لیے ان کی قربانی کو یاد کیا۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے سابق وزیر اور سینئر لیڈر اجے کمار سدھوترا نے سب کو ترقی اور ترقی کے یکساں مواقع کو یقینی بنانے میں شیخ محمد عبداللہ کی رول کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ وہ تمام علاقوں کے لوگوں کی خواہشات کو پورا کرنے کے مضبوط حامی تھے۔ سدھوترا نے کہا کہ شیخ محمدعبداللہ نے معاشرے کے مختلف طبقات کے مابین فرقہ وارانہ بندھن کو مضبوط کرنے کے لیے ساری زندگی جدوجہد کی۔ رتن لال گپتا نے اپنے خراج عقیدت میں شیخ عبداللہ کو ایک نظریہ ساز قرار دیا ، جنہوں نے لوگوں کی سیاسی بااختیاری کے لیے کام کیا اور ریاست کی ترقی کے لیے مضبوط بنیادیں رکھی۔گپتا نے مرحوم کے متعارف کرائے گئے تاریخی اور علمی اصلاحات ایکٹ کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ اس نے کسانوں کو ان کی اپنی قسمت کا مالک بنا کر بااختیار بنایا ہے۔سابق وزیر اور ریاستی سیکرٹری سید مشتاق احمد بخاری نے دوستی ، بھائی چارے اور سکون کے رشتوں کو مضبوط بنانے میں شیخ عبداللہ کے اہم کردار کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ ان کے ویژن اور دور اندیشی نے جموں و کشمیر کو ایک متحرک ہستی کے طور پر ترقی میں مدد دی۔سابق وزیر اور چیئرمین ایس سی او بی سی سیل بابو رامپال نے کہا کہ مساوات اور سماجی انصاف پر مبنی معاشرے کے لیے کام کرنے میں مرحوم رہنما کا کردارپر روشنی ڈالی۔صوبائی یوتھ نیشنل کانفرنس کے صدر اعجاز جان نے شیخ عبداللہ کو عالمی سطح کا رہنما قرار دیا جو ایک ایسے معاشرے پر یقین رکھتے ہیں جہاں تمام مذاہب سے تعلق رکھنے والے افراد کو ترقی کے یکساں مواقع حاصل ہوں۔سابق وزیر اور سینئر لیڈر عبدالغنی ملک نے مرحوم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ ریاست کی حکمرانی میں ان کی شراکت جموں و کشمیر کو دوبارہ امن ، ترقی اور خوشحالی کی راہ پر ڈالنے کے لیے ہمیشہ ایک تحریک ہوگی۔کارروائی کا انعقاد کرتے ہوئے صوبائی سیکرٹری شیخ بشیر نے بھی شیخ عبداللہ کو خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے تعلیم کے پھیلاؤ اور معاشرے کے پسماندہ طبقات کو بااختیار بنانے میں مرحوم کے شاندار کردار کو یاد کیا۔ اس سے قبل شیر کشمیر بھون میں مرحوم رہنماکیلئے قرآن خوانی کے علاوہ ان کی تصویر پر پھولوں کی چادر چڑھائی گئی۔
Box
doda NC
 
 

 ڈوڈہ میں کچلو و سہروردی سمیت متعدد کارکنوں نے پیش کیا خراج تحسین 

اشتیاق ملک
ڈوڈہ //نیشنل کانفرنس نے پارٹی کے بانی رہنما شیخ محمد عبداللہ کی 39ویں برسی پر شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کی تعمیری، سیاسی و سماجی خدمات کو یاد کیا ہے۔سابق وزیر و پارٹی کے سینیئر لیڈر سجاد احمد کچلو نے اپنے ایک بیان میں مرحوم شیخ محمد عبداللہ کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر کی عوام ان کی خدمات کو آسانی سے فراموش نہیں کر سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ مرحوم نے پوری زندگی جموں و کشمیر کے تینوں خطوں کی یکساں تعمیر و ترقی کے لئے مثالی کام کیا ہے اور بلا لحاظ مذہب و ملت کے ہر طبقہ و خطہ کی نمائندگی کرتے تھے۔انہوں نے مرحوم کی ایصال ثواب کیلئے دعائے مغفرت کرتے ہوئے پارٹی کارکنوں پر زور دیا کہ وہ ان کے مشن کو آگے بڑھائیں اور اسی جوش و جذبہ کے ساتھ آپسی بھائی چارہ و عوامی مسائل پر اپنی توجہ مرکوز کریں۔ادھر ڈوڈہ میں سابق وزیر و ضلع صدر خالد نجیب سہروردی و جنرل سیکرٹری ظفراللہ راتھر کی نگرانی میں الگ الگ تقریبات کا انعقاد کیا گیا جس دوران این سی کارکنوں نے شیخ محمد عبداللہ کی حیات و خدمات پر روشنی ڈالی اور انہیں شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم شیخ محمد عبداللہ نے جہاں جموں و کشمیر کی خصوصی پوزیشن کو برقرار رکھنے کے لئے جدوجہد کی وہیں ہندو، مسلم و سکھ اتحاد کی مضبوطی کیلئے بھی اہم کردار ادا کی۔ اس دوران سابق ایم سی و نائب صدر ضلع محمد اقبال بٹ، صوبائی نائب صدر شیخ محبوب اقبال، ضلع نائب صدر محمد اشرف کیلو، بلاک صدر ٹھاٹھری شمیم احمد بٹ، ایس ٹی سیل جنرل سیکرٹری چوہدری سلام دین، حاجی محمد عباس خان، ریاض احمد زرگر، محمد رفیع چوہدری، پریتم سنگھ و سوامی راج نے بھی گندوہ میں شیخ محمد عبداللہ کی 39ویں برسی پر منعقد تقریب میں شرکت کی جس دوران انہوں نے مرحوم کی خدمات کو یاد کرتے ہوئے ان کی ایصال ثواب کیلئے دعائے مغفرت کی ہے۔