دفاتر میں خواتین کی جنسی ہراسانی

جموں //محکمہ پبلک ورکس (آر اینڈ بی) نے عمومی انتظامیہ محکمہ (جی اے ڈی) کی جانب سے کام کرنے والے مقامات پر خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے (روک تھام ، ممانعت ، اور ازالہ) ایکٹ، 2013 کے تحت ایک شکایتی کمیٹی تشکیل دی ہے۔حکم نامہ میں کہا گیا ہے "کام کی جگہ پر خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے (روک تھام ، ممانعت اور ازالہ) ایکٹ ، 2013 کے سیکشن 4 (1) کی پیروی میں ،   شعبہ تعمیرات عامہ کی خواتین ملازمین کے خلاف جنسی طور پر ہراساں کرنے کا کوئی معاملہ ہے توکمیٹی کے سامنے شکایات کے اندراج اور انکوائری کرنے اور ان کے تصفیہ کرنے کا حکم دیا گیا ہے ،‘‘۔اس کمیٹی کی سربراہی ایڈیشنل سکریٹری ، رجنیش کمار کریں گے ۔ دیگرچار دیگر ممبران میں انڈر سکریٹری ، نسیمہ نذیر ، ہیڈ اسسٹنٹ ، ناہیدہ نثار ، محکمہ سوشل ویلفیئر کی جانب سے نامزد کردہ این جی او کی نمائندہ اور چیئرپرسن شامل ہیں۔کمیٹی حکومت کو زیر غور لانے کے لئے محکمہ پی ڈبلیو (آر اینڈ بی) کی خواتین ملازمین کے خلاف جنسی طور پر ہراساں کرنے کے بارے میں موصول ہونے والی ہر شکایت پر کمیٹی کو رپورٹ کرے گی۔"موصولہ شکایات کی کل تعداد کے بارے میں سہ ماہی / سالانہ رپورٹیں ، کی گئی انکوائری اور اسی پر کارروائی کی گئی۔ کمیٹی جنسی طور پر ہراساں کرنے کی تمام شکایات کا ازالہ کرے گی اور سہ ماہی / سالانہ بنیاد پر قواعد کے مطابق خصوصی سفارشات کے ساتھ حکومت سے کارروائی کی رپورٹیں پیش کرے گی۔