خانہ بدوش طبقہ کو بی پی ایل زمرے میں شامل کرنے کی مانگ

 جموں //گوجر بکروال طبقہ نے ریاستی حکومت سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ریاست جموں وکشمیر میں رہائش پذیر خانہ بدوش طبقہ کی فلاح وبہبود کیلئے ان کو بی پی ایل زمرے میں شامل کیا جائے ۔ٹرائبل ریسر چ اینڈ کلچرل فائونڈیشن کی جانب سے ’جموں وکشمیر میں خانہ بدوش طبقہ کے اقتصادی مسائل ‘پر منعقدہ ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہاکہ ریاستی انتظامیہ کو چاہئے کہ وہ خانہ بدوش گوجر بکروال طبقہ کی موجودہ اقتصادی حالت کے سلسلہ میں جلداز جلد سروے کیا جائے تاکہ ان کو درپیش اقتصادی مسائل کے بارے میں جانکاری موصول ہو سکے ۔اپنے خطاب میں ٹرائبل ریسر چ اینڈ کلچرل فائونڈیشن کے صدر ڈاکٹر جاوید راہی نے تشویشن کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ایک بڑی تعداد میں خانہ بدوش اور نیم خانہ بدوش گوجر بکروال طبقہ کے لوگ مرکزی حکومت کی جانب سے شروع کی گئی سوشل سیکورٹی اسکیموںسے باہر ہیں جبکہ مذکورہ طبقہ کو درپیش مسائل کو حل کرنے کیلئے تاز ہ سروے کرنے کی اشد ضرورت ہے ۔موصوف نے کہاکہ سروے کے بعد اس طبقہ کی فلاح و بہبود کیلئے ان کو بی پی ایل زمرے میں شامل کیا جائے ۔ڈاکٹر جاوید راہی نے کہاکہ خانہ بدوش طبقہ کو فراہم کی جارہی ہیلتھ سروسز کے بارے میں بھی سروے کرنے کی ضرورت ہے تاکہ اس طبقہ کی خواتین اور بچوں کو صحت سے متعلق درپیش مسائل حل کئے جاسکیں ۔انہوں نے کہاکہ خانہ بدوش طبقہ کے بچوں کی ایک بڑی تعداد نامناسب حالات کی وجہ سے اپنی تعلیم جاری نہیں رکھ سکتے جبکہ ن بچوں کو دوبارہ سے تعلیمی سسٹم میں لانے کی ضرورت ہے ۔اسکے علا وہ اجلاس میں خانہ بدوش طبقہ کے مویشوں کو مختلف بیماریوں سے بچانے و دیگر سہولیات پر بھی روشنی ڈالی گئی ۔اجلاس سے خطاب کرنے والوں میں اشتیاق چوہدری ،نوید چوہدی ،چوہدری ایم امین ،چوہدری مجید ودیگران شامل ہیں ۔