جنوبی کشمیر میں آخری انتخابی مرحلے کی مہربانی

پلوامہ، شوپیان//جنوبی کشمیر کی پارلیمانی نشست اننت ناگ کے آخری مرحلے کی پولنگ سے 3روز قبل ہی انتظامیہ نے جنوبی کشمیر کے پلوامہ اور شوپیان کے ساتھ ساتھ دیگر علاقوں میں انٹرنیٹ سروس پر روک لگادی ہے جس کے نتیجے میں عام لوگوں کے ساتھ ساتھ تجارت پیشہ افراد اور علاقے میں کام کر رہے صحافیوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ادھرمتعلقہ علاقوں کے لوگوں نے انتخابات سے قبل اس طرح کی کاروائیوں پر شدید برہمی کا اظہار کیا ہے ۔ پارلیمانی انتخابات کے تیسرے اور آخری مرحلہ کی پولنگ سے3روز قبل ہی جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان اور پلوامہ میں انٹرنیٹ سروس پر روک لگادی گئی جس کے نتیجے میں عام لوگوں کے ساتھ ساتھ تجارتی افراد اور صحافیوں کو علاقے سے خبریں ارسال کرنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ ادھر مقامی لوگوں نے اس طرح کی کاروائی کو قبل از وقت پابندی کرنے پر سخت برہمی کا اظہار کیا ہے ۔ مقامی نوجوانوں نے بتایا سرکار کو اگر مجبوری تھی تو انتخابات کے دن ہی سروس روک دی جا سکتی ہے تاہم تین روز قبل سروس پر پابندی عائد کر سرا سر زیادتی ہے۔