’جموں کشمیر زمین کا ٹکڑا نہیں، ہمارے وجود کا لازمی حصہ‘

نئی دہلی//لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا ہے کہ جموں کشمیر زمین کا ایک ٹکڑا ہی نہیں بلکہ ہمارے وجود کا ایک حصہ ہے جس کیساتھ ہماری طرز زندگی اور ہمارا شعور وابستہ ہے۔نئی دہلی میں جواہر لعل کول کی "جموں کشمیر: زخموں کی جنت"  کتاب کی اجرائی کے موقعہ پر ایل جی کا کہنا ہے کہ جموں و کشمیر کی تاریخ میں پہلی بار لوگ وزیراعظم کے ترقیاتی ایجنڈے سے فائدہ اٹھا رہے ہیں۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا’’جموں و کشمیر واقعی زمین پر جنت ہے ، لیکن یہ کئی دہائیوں سے ترقی اور خوشحالی سے محروم تھا، اب ، ہم اس کی کھوئی ہوئی عظمت کو دوبارہ حاصل کرنے کی راہ پر گامزن ہیں‘‘۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ یہ صرف زمین کا ٹکڑا نہیں ہے بلکہ ہمارا شعور ، ہمارا طرز زندگی اور ہمارے وجود کا ایک لازمی حصہ ہے جو کہ اب بھی انفرادی مخلوقات کی آفاقیت پر یقین رکھتا ہے۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ اسی جذبے کے ساتھ حکومت یونین ٹیریٹری کی سماجی و اقتصادی ترقی کے لیے کام کر رہی ہے۔صحت کے بنیادی ڈھانچے ، تعلیم ، صنعتوں ، فوڈ پروسیسنگ ، سیاحت ، بجلی ، نوجوانوں کے روزگار ، آبی ذخائر کی ترقی ، سائنس اور ٹیکنالوجی ، زراعت ، باغبانی جیسے شعبے زمینی توڑ تبدیلی دیکھ رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کاروبار اور کسانوں کی ترقی کے لیے ترقی پسند قوانین نافذ کیے گئے ہیں۔وزیر اعظم اور معزز وزیر داخلہ کی رہنمائی میں نئی صنعتی ترقیاتی اسکیم جموں و کشمیر میں بڑی سرمایہ کاری کو راغب کر رہی ہے اور پچھلے دو مہینوں میں ملک کی معروف صنعتوں سے 25 ہزار کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کی تجاویز موصول ہوئی ہیں۔ اور ، ہم پرامید ہیں کہ اگلے سال مارچ تک یہ تعداد 50ہزارکروڑ روپے تک پہنچ جائے گی ، جس سے کم از کم 10 لاکھ نوجوانوں کو روزگار کے مواقع ملیں گے۔ اس کے علاوہ پہلی بار جموں و کشمیر میں حکومت کی منظوری سے نجی صنعتی اسٹیٹ شروع کی گئی ہے۔ہم اپنی نوجوان آبادی کو تعمیری سرگرمیوں میں شامل کرکے پڑوسی ملک کی مذموم سازش کو شکست دینے کے لیے پرعزم کوششیں کر رہے ہیں۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ حکومت نے نوجوانوں کی پائیدار معاش کے لیے کئی اسکیمیں شروع کی ہیں۔
 
 

عالمی یوم خواندگی پر لیفٹیننٹ گورنر کا پیغام

نیوز ڈیسک
 
 سرینگر//’’عالمی یوم خواندگی‘‘ پر لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا ہے کہ تعلیم واحد ذریعہ ہے جو جہالت کے اندھیروں اور پسماندگی کی رکاوٹوں کو دور کرتا ہے۔منوج سنہا نے ایک ٹویٹ میں لوگوں کو عالمی خواندگی کے دن 2021 کی مبارکباد دی۔منوج سنہا نے کہا ’’ خواندگی کا عالمی دن ہمیں یاد دلاتا ہے کہ آج بھی دنیا میں ایسے بہت سے لوگ موجود ہیں جن کے پاس مناسب تعلیم کا فقدان ہے ، جو علم اور سائنسی ایجادات سے چلتا ہے‘‘۔ انہوںنے کہا کہ تعلیم ہی واحد ذریعہ ہے جو ہمیں جہالت کے اندھیروں اور پسماندگی کی رکاوٹوں سے نجات دلاتی ہے۔ لیفٹیننٹ گورنرنے مزید کہا کہ جموں و کشمیر حکومت نے لوگوں کو تعلیم کی نعمت پہنچانے کیلئے متعدد کامیاب اقدامات کئے ہیں ، بشمول دور دراز علاقوں میں رہنے والوںکوبہترتعلیمی سہولیات کی فراہمی ۔منوج سنہا نے مزید کہا کہ جموں و کشمیر کے تمام پڑھے لکھے افراد لوگوں میں بیداری پھیلانے اور یہاں کے ہر فرد کو تعلیم یافتہ اور جدید دنیا کے علم سے بااختیار بنانے میں اپنی کوششیں کریں۔