’تب ہم کیا تھے جب آپ بھاجپا میں وزیر رہے‘

جموں //بی جے پی کے سینئر لیڈر سست پال شرما نے قانون ساز اسمبلی میں وزیر اعلیٰ کے ماتحت محکموں کے مطالبات زر پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبدللہ کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ،جب وہ بھاجپا میں وزیر رہے تب ہم سادھو تھے اور اب ہم شیطان بن گئے ۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ اُن کی یہ بیان بازیاں اقتداد سے بے دخلی کی وجہ ہو رہی ہیں ۔انہوں نے اپوزیشن جماعتوں پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ لوگ سچ ہی کہتے ہیں کہ نہ نیشنل کانفرنس اور نہ کانگریس چاہتی ہے حالات ٹھیک ہوں اور ان جماعتوں نے وہاں کے حالات کو خراب کرنے کی کوشش کی ۔انہوں نے کہا کہ فوج کے کام کی سراہانہ کرنے اور انہیں وہ ہر سہولیات فراہم کرنے کے بجائے اس ایوان میں فوج کے کام پر انگلیاں اٹھائی جا رہی ہیں کیونکہ ہماری فوج پتھر بھی کھا رہی ہے گولی بھی ،انہیں سزا بھی دی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ عمر عبداللہ نے اگرچہ انہیں سیدھے طور شیطان نہیں کہا لیکن اُس کا اشارہ اُن ہی کی طرف تھا ۔انہوں نے کہا کہ اقتداد سے باہر رہنے کی وجہ سے یہ لوگ پریشان ہیں جس کا اظہار ہم سب نے دیکھ لیا ۔انہوں نے کہا کہ یہاں فوج کو کوسا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ سنگ بازوں کو سرکار کی طرف سے دی گئی معافی ایک اچھا قدم ہے ۔انہوں نے کھٹوعہ معاملے پر کچھ ایک جماعتوں کو سیاست کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ہم اس کے حق میں ہیں کہ ملزم کو سزا ملے ۔انہوں نے ریاستی وزیر اعلیٰ سے مطالبہ کیا کہ آصفہ کا کیس سی بی آئی کو دیا جائے ۔