آب و ہوا کی تبدیلی کے مطالعے اور منصوبہ بندی | زرعی یونیورسٹی میں10 روزہ تربیتی پروگرام اختتام پذیر

سرینگر//شیر کشمیر یونیورسٹی ایگریکلچر سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میں ’’ زراعت اور اس سے منسلک علوم میں تحقیق کے آلے کے طور پر ڈی ایس ایس اے ٹی ‘‘ کے بارے میں دس روزہ تربیتی پروگرام جمعرات کو اختتام پذیر ہوا۔ایس سی یو اے ایس ٹی کے ادارہ جاتی ترقی کے لئے ورلڈ بینک،آئی سی اے آر کے مالی تعاون سے قومی زرعی ہائر ایجوکیشن پروجیکٹ کے تعاون سے ایگرومیٹ فیلڈ یونٹ سرینگر کے زیر اہتمام ڈی ایس ایس اے ٹی کی تربیت میں ملک اور بیرون ملک کے مختلف حصوں سے 35 سے زائد سائنس دانوں اور اسکالروں نے حصہ لیا۔تربیت دینے والوں کو ورچوئل موڈ میں ڈی ایس ایس اے ٹی کے بارے میں تربیت دی گئی۔جس میں مختلف فائلوں کی تیاری ،ڈی ایس ایس اے ٹی کے آلے میں اپ لوڈ ، اس ماڈل کو چلانے کے لئے عملی مشقیں جن کے لئے قومی شہرت کے دیگر اساتذہ کے ساتھ سائنس دانوں کے ہمراہ ایگومیٹ فیلڈ یونٹ کے سائنسی عملے نے تربیت کے کامیاب انعقاد میں حصہ لیا۔ انچارج ایگرومیٹ فیلڈ یونٹ نوڈل آفیسر ڈاکٹر سمیرا قیوم نے معززین کا خیرمقدم کیا اور حاضرین کو تربیت سے آگاہ کیا۔ایگومیٹ فیلڈ یونٹ کے ایسوسیٹ پروفیسر ڈاکٹر بلال احمد لون نے تربیتی پروگرام کے دوران اپنی ماہرانہ تربیت سے اراکین کو خاکہ پیش کیا۔اختتامی تقریب میں مہمان خصوصی کے طور پرفلوریڈا امریکہ میں زرعی اور حیاتیاتی انجینئرنگ یونیورسٹی برائے پائیدار فوڈ سسٹم کے پروفیسر ڈاکٹر جیریٹ ہوگن بوم نے ورچوئل موڈ میں اس طرح کے تربیتی پروگراموں کے انعقاد پر ایس کیو اے ایس ٹی کے سائنسدانوں کی تعریف کرتے ہوئے شرکاء کو خطاب کرتے ہوئے زراعت ، پیش گوئی ، آب و ہوا کی تبدیلی کے مطالعے اور پالیسی منصوبہ بندی اور دیگر مطالعات میں DSSAT کے آلے کے استعمال سے انھیں روشناس کرایا۔ایگروونومی کے ایسوسیٹ پروفیسر ڈاکٹر پرشوتم سنگھ نے اس تقریب میں شریک تمام معززین ، سائنس دانوں ، شرکاء ، منتظمین کا شکریہ ادا کیا۔