اومیکرون اور کووڈ19- عالمی اقدامات ہی مہلک وبا سے دفاع

 

 
سرینگر// ہلاکت خیز عالمی وبا کووڈ کی انتہائی تبدیل شدہ اومیکرون ویرینٹ نے دنیا بھر کے سائنسدانوں کو الرٹ کردیا ہے۔ تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ عام زکام کے ساتھ جینیاتی مواد کے اشتراک کی وجہ سے اومیکرون زیادہ پھیلتا ہے۔
سائنسدانوں کے مطابق اومیکرون سے ظاہر ہوتا ہے کہ کووڈ پرکنٹرول نہیں، عالمی سطح پر اقدامات ہی اس کو روک سکتے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق اومیکرون اور عام زکام میں گہرا تعلق سامنے آیا ہے۔اومیکرون ایک ایسی جینیاتی ترتیب پر مشتمل ہے جو دوسرے وائرس میں عام ہے جو زکام کا سبب بنتے ہیں۔
سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ وائرس کا اومیکرون ویرینٹ ممکنہ طور پرکسی دوسرے وائرس سے عام زکام کا سبب بننے والاجینیاتی مواد حاصل کر لیتا ہے یہ مواد اسی متاثرہ خلیہ میں موجود ہوتا ہے۔
یہ جینیاتی ترتیب پہلے کسی بھی کورونا ویرئنٹ میں ظاہر نہیں ہوئی۔ یہ وائرس آسانی سے منتقل ہوتا ہے اور غیر علامتی بیماری کاسبب بنتا ہے۔