اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ

رام بن //سول سوسائٹی کے ممبران اور ضلع رام بن کے محنت کشوں نے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی کرنے کیلئے ضروری اقدامات کئے جائیں ۔کیونکہ غریب طبقہ مہنگائی کے بھوج تلے دب کر رہ گیا ہے جس کے نتیجے میں انہیں شدید پریشانی کا سامنا ہے ۔انہوں نے کہا کہ رام بن ضلع میں مہنگائی عروج پر ہے ،نہ صرف کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں، وہیں کنسٹرکشن میٹریل جس میں سیمٹ ، اینٹ اور لوہا بھی خریدنا ایک عام شہری کی پہنچ سے باہر ہو گیا ہے ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ عوام کو دو دو ہاتھوں سے لوٹا جا رہا ہے اور کورونا لاک ڈائون میں لوگ فاقہ کشی کے شکار ہو چکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بہت سے مزدور اور محنت کش جنہیں کورونا لاک ڈائون کی وجہ سے کام نہیں مل رہا ہے۔ ان کیلئے مہنگے داموں میں اشیائے ضروریہ انتہائی پریشان کن ہے ۔ جبکہ ایندھن کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ سے بھی ٹرانسپوٹروں کے علاوہ دیگر طبقہ سے وابستہ لوگ پریشان کن صورتحال سے دوچار ہیں ۔جبکہ رسوئی گیس کی قیمت بھی بڑھ چکی ہے ۔لوگوں کا کہنا ہے پہلے رسوئی گیس ، مٹی کے تیل اور دیگر کھانے پینے کی چیزوں میں سب سڈی ملتی تھی لیکن اس میں بھی کٹوتی کی گئی ہے ۔اسی طرح بجلی فیس میں بھی اضافہ ہوا ہے جس سے ایک عام انسان کی زندگی پر اس کا زبردست اثر پڑھا ہے ۔مقامی لوگوں نے حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ قیمتوں کو اعتدال پر رکھنے کیلئے اقدامات کئے جائیں اور نرح ناموں کے مطابق قیمتوں کو رکھنے کیلئے دکانداروں اور تاجروں کو جواب دے بنایا جائے تاکہ لوگوں کی مشکلات کا ازلہ ہو سکے ۔