راجیہ سبھا میں جموں و کشمیر سے متعلق تین بلوں کو منظوری

عظمیٰ ویب ڈیسک

نئی دہلی// راجیہ سبھا نے جمعہ کو جموں اور کشمیر سے متعلق تین بلوں پر غور کرنے کے بعد منظوری دے دیجو مقامی اداروں میں دیگر پسماندہ طبقات کو ریزرویشن فراہم کرنے اور مرکز کے زیر انتظام علاقے میں درج فہرست ذاتوں اور درج فہرست قبائل کی فہرستوں میں ترمیم پر مشتمل ہیں۔
جموں و کشمیر لوکل باڈیز قوانین (ترمیمی) بل، 2024؛ آئین (جموں و کشمیر) شیڈول کاسٹس آرڈر (ترمیمی) بل، 2024؛ اور آئین (جموں و کشمیر) شیڈولڈ ٹرائب آرڈر (ترمیمی) بل، 2024 کو اس ہفتے کے شروع میں لوک سبھا نے منظور کیا تھا۔
جموں و کشمیر لوکل باڈیز لاز (ترمیمی) بل، 2024، مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ نتیانند رائے کے ذریعہ پیش کیا گیا، مرکزی زیر انتظام علاقے میں مقامی اداروں میں او بی سی کو ریزرویشن فراہم کرنے کی کوشش کرتا ہے۔
فی الحال، جموں و کشمیر میں پنچایتوں اور میونسپلٹیوں میں او بی سی کے لیے سیٹوں کے ریزرویشن کا کوئی انتظام نہیں ہے۔
آئین (جموں و کشمیر) شیڈول کاسٹس آرڈر (ترمیمی) بل، 2024، سماجی انصاف اور بااختیار بنانے کے وزیر وریندر کمار کے ذریعہ پیش کیا گیا، والمیکی برادری کو درج فہرست ذاتوں کی فہرست میں چورا، بالمیکی، بھنگی اور مہتر برادریوں کے مترادف کے طور پر شامل کرتا ہے۔
اس بل میں 1956 کے آئین (جموں و کشمیر) شیڈول کاسٹس آرڈر میں ترمیم کرنے کی کوشش کی گئی ہے، جس میں جموں و کشمیر اور لداخ میں درج فہرست ذاتوں کی مانی جانے والی ذاتوں کی فہرست دی گئی ہے۔
قبائلی امور اور زراعت اور کسانوں کی بہبود کے مرکزی وزیر نے آئین (جموں و کشمیر) شیڈول ٹرائب آرڈر (ترمیمی) بل، 2024 پیش کیا جس میں آئین (جموں و کشمیر) شیڈول ٹرائب آرڈر 1989 میں ترمیم کرنے کی کوشش کی گئی ہے تاکہ جموں و کشمیر اور لداخ کے لیے شیڈیولڈ ٹرائب کے لیے علیحدہ فہرستیں بنائی جا سکیں۔
آئین (جموں و کشمیر) شیڈولڈ ٹرائب آرڈر (ترمیمی) بل، 2024 کے زریعے چار کمیونٹیز – گدا برہمن، کوہلی، پاڈری قبیلہ، اور پہاڑی ایتھنک گروپ کو جموں اور کشمیر میں درج فہرست قبائل کی فہرست میں شامل کیا گیا۔