کرناٹک حجاب معاملہ | سپریم کورٹ درخواستوں کی سماعت پر غور کرنے پر راضی

نیوز ڈیسک
نئی دہلی// سپریم کورٹ نے حجاب پر پابندی کے حکم کو چیلنج کرنے والی عرضیوں پر اگلے دو دنوں میں منگل کو سماعت کرنے کا اشارہ دیا۔چیف جسٹس این۔ وی رمنا کی سربراہی والی سنگل بنچ نے سینئر ایڈوکیٹ میناکشی اروڑہ کی عرضی پر دو دن بعد کرناٹک ہائی کورٹ کے فیصلے کو چیلنج کرنے والی عرضیوں کی فہرست بنانے کا اشارہ دیا۔محترمہ اروڑہ نے یہ عرضی چیف جسٹس کی سربراہی میں سنگل بنچ کے سامنے ‘خصوصی تذکرہ’ کے دوران کی تھی، جس میں کہا گیا تھا کہ حجاب تنازعہ سے متعلق درخواستیں اہم ہیں۔جسٹس رمنا نے جلد سماعت کی ان کی درخواست کو قبول کرتے ہوئے کہا کہ دو دن انتظار کریں۔ میں اس معاملے کی فہرست بناؤں گا۔”اس سے قبل عدالت عظمیٰ متعدد بار خصوصی رخصت کی درخواستوں کی فوری سماعت کی درخواست کو مسترد کر چکی ہے ۔کرناٹک ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں پری یونیورسٹی کالجوں میں حجاب پر پابندی کو برقرار رکھا۔ چیف جسٹس ریتو راج اوستھی کی سربراہی جسٹس کرشنا ایس دکشت اور جسٹس جے ۔ ایم کھجی کی ڈویژن بنچ نے 15 مارچ کو فیصلہ سنایا تھا۔ عدالت نے اپنے حکم میں اسلامی عقیدے میں ضروری مذہبی عمل کا حصہ نہ ہونے کی وجہ سے کلاس رومز میں حجاب پہننے پر پابندی کو برقرار رکھا تھا۔ ہائی کورٹ کی اس ڈویژن بنچ نے کلاس رومز میں حجاب پہننے کی اجازت دینے کی درخواست کو خارج کر دیا تھا۔