کانگریس نے 50 برسوں میں ملک کے لئے کچھ نہیں کیا:گڈکری

اورنگ آباد// مرکزی وزیر برائے سڑک و نقل وحمل اور بھارتیہ جنتا پارٹی ( بی جے پی) کے سینئر لیڈر نتن گڈکری نے سنیچر کو کہا کہ جب سے بی جے پی کی زیرقیادت قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے ) حکومت اقتدار میں آئی ہے تب سے ترقی کے کئی پروگراموں کو انجام دیئے گئے ہیں جنہیں کانگریس ملک میں 50 برسوں کے اپنے دور اقتدار میں مکمل نہیں کرپائی تھی۔مسٹر گڈکری نے مہاراشٹر کے اورنگ آباد ضلع ہیڈکوارٹر سے 60 کلومیٹر دور سنت ایکناتھ مہاراج شہر پیٹھان میں انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کانگریس پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ اس نے (کانگریس نے ) اپنے دور اقتدار میں ملک میں ترقیاتی کوئی کام ہی نہیں کئے ۔ وہ جالنہ پارلیمانی حلقہ سے بی جے پی۔شیوسینا ۔ریپلکن پارٹی آف انڈیا گٹھ بندھن کے امیدوار راؤ صاحب دانوے ، جو مسلسل پانچویں مرتبہ ممبر پارلیمنٹ منتخب ہونے کی کوشش کررہے ہیں کے حق میں انتخابی مہم میں شرکت کرنے آئے تھے ۔مسٹر گڈکری نے کہا کہ اس مرتبہ جو لوگ ترقی کے نام پر ووٹ نہیں مانگ سکتے انہوں نے ذات پات کے نام پر ووٹ مانگنا شروع کردیا ہے ۔ ‘غریبی ہٹاؤ’ نعرے کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی نے پھر سے یہ نعرہ دیا ہے جیسے کہ ابتدا سے ہی کانگریس کہتی آرہی ہے ۔ آج عام آدمی کی غریبی نہیں ہٹی ہے لیکن کانگریس کے لوگوں کی غریبی دکھائی دینے لگی ہے ۔مسٹر گڈکری نے کہا کہ ریاست میں کئی سینچائی اسکیموں سے متعلق کام پورے کئے گئے ہیں۔ ڈیڑھ برسوں کے دوران آبپاشی کے پانی کی اسٹوریج کی صلاحیت میں اضافہ ہوجائے گا۔ انہوں نے مراٹھواڑہ میں کئے گئے کئی ترقیاتی کاموں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس علاقے کے 5ء5 لاکھ ایکڑ زمین میں سینچائی کی سہولت ہوجائے گی۔مسٹر گڈکری نے کہا کہ اس علاقے میں 70 ہزار کروڑ وپے کی لاگت سے قومی شاہراہ کی تعمیر کرائی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صرف ا ن کے محکمہ نے مہاراشٹر میں ترقیاتی کاموں پر پانچ لاکھ کروڑ روپے خرچ کئے ۔مسٹر گڈکری نے کہا کہ گوداوری ندی میں پانی نہیں ہونے کی وجہ سے جیکواڑی بند میں پانی نہیں ہے ۔ اب ہم دامن گنگا پیگر منصوبہ سے گوداوری میں پانی چھوڑنے کا منصوبہ بنارہے ہیں جس سے مستقبل میں مذکورہ بند میں صد فیصد پانی کی سہولت رہے ۔