پاکستان بھیک کاکٹورالئے پھرتاہے: مودی | مضبوط حکومت نے 370کو ہمیشہ کیلئے دفن کیا

عظمیٰ نیوزڈیسک

چندی گڑھ//وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتہ کے روز کہا کہ پاکستان جو پچھلے 70 سالوں سے ہندوستان کو بموں سے پریشان کرتا تھا، اب مرکز میں مضبوط حکومت کی وجہ سے ’بھیک کے کٹورے‘ کے ساتھ گھوم رہا ہے۔ہریانہ کے امبالا میں ایک ریلی سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب ملک میں ‘دھکڑ’ کی حکومت ہوتی ہے تو دشمن بھی کچھ کرنے سے پہلے 100 بار سوچتے ہیں۔پاکستان 70 سال سے بھارت کو پریشان کر رہا تھا، اس کے ہاتھ میں بم تھے۔ آج اس کے ہاتھوں میں ‘بھیک کا کٹورا’ (بھیک مانگنے کا کٹورا) ہے۔ جب ‘دھکڑ’ حکومت ہو تو اس طرح دشمن کانپتے ہیں۔ وہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ سے پاکستان کے بیل آؤٹ پیکجز کا حوالہ دے رہے تھے۔اپنی حکومت کے لیے ایک کیس بناتے ہوئے، پی ایم مودی نے یہ بھی کہا کہ ان کی ‘دھکڑ’ حکومت نے آرٹیکل 370 کی دیواریں گرا دیں۔انہوں نے کہا،’’کیا ایک کمزور حکومت جموں و کشمیر کے حالات کو بدل سکتی ہے؟ وہ وقت یاد کریں جب کانگریس کی حکومت تھی اور ہریانہ کی بہادر مائیں دن رات پریشان رہتی تھیں؟ آج 10 سال ہو گئے ہیں۔ مودی کی ‘دھکڑ’ حکومت نے آرٹیکل 370 کی دیوار گرا دی اور کشمیر ترقی کی راہ پر چلنا شروع کر دیا‘‘۔انڈیا بلاک کو “ملک دشمن طاقتیں” بتاتے ہوئے پی ایم مودی نے کہا کہ ہریانہ کے لوگ ملک دشمن طاقتوں سے بخوبی واقف ہیں اور 4 جون کو انڈیا بلاک کو شکست ہو جائے گی۔ “جون میں صرف 17 دن باقی ہیں۔ 4 (گنتی کا دن) انتخابات کے چار مرحلوں میں، چاروں کھانے چٹ ہو چکے ہیں، ہندوستانی اتحاد نے جو بھی حربے استعمال کیے، وہ سب ہریانہ ہی نے شکست دی ہے۔ ہریانہ اپنی رگوں میں موجود حب الوطنی کو اچھی طرح جانتا ہے۔وزیر اعظم نے کانگریس پر مسلح افواج اور فوجیوں کو دھوکہ دینے کا بھی الزام لگایا۔ “کانگریس نے ہندوستانی مسلح افواج کی صلاحیتوں کو کمزور رکھا تاکہ وہ بیرون ملک سے اسلحے کی درآمد کے نام پر بھاری منافع کما سکیں۔ ہمارے فوجیوں کو مناسب کپڑے، جوتے، بلٹ پروف جیکٹس فراہم نہیں کی گئیں، انہیں اچھی رائفلیں بھی نہیں ملیں۔” ہندوستانی فوج کو آتم نیربھار بنانے کی مہم، آج فوج ہندوستان میں ہتھیار حاصل کر رہی ہے، جو کبھی دوسرے ممالک سے ہتھیار درآمد کرتا تھا، اب وہ دوسرے ممالک کو ہتھیار بیچ رہا ہے۔ہریانہ کی تمام 10 سیٹوں کے لیے چھٹے مرحلے کے ایک ہی مرحلے میں 25 مئی کو ووٹنگ ہوگی۔