مینڈھر میں طبی و بیداری کیمپ کا اہتمام کیا گیا

جاوید اقبال
مینڈھر //فوج کے ایس آف سپیڈ یونٹ کے زیر اہتمام مینڈھر گنرز بٹالین نے پیر کو گورنمنٹ ڈگری کالج مینڈھر میں ایک خصوصی میڈیکل کم بیداری کیمپ کا انعقاد کیا جو راجوری ڈے 2022 کی تقریبات کے ایک حصے کے طور پر منعقد کیا گیا تھا۔فوج نے کہا کہ اس سال قوم کی طرف سے ’آزادی کا امرت مہوتسو‘ کے طور پر منایا جا رہا ہے اور ہندوستانی فوج اپنی اخلاقیات اور روایات کو برقرار رکھتے ہوئے لائن آف کنٹرول کے قریب دیہی علاقوں کے لوگوں کو طبی امداد اور مشاورت فراہم کرنے کے لئے ان تک پہنچ رہی ہے۔ کیمپ کا انعقاد مقامی لوگوں کو مفت چیک اپ اور خصوصی طبی سہولیات فراہم کرنے کے مقصد سے کیا گیا تھا۔اس کیمپ کے انعقاد کیلئے نیشنل انٹیگریٹڈ میڈیکل ایسوسی ایشن، ناسک مہاراشٹر سے آرتھوپیڈکس، سرجری، اطفال، گائنی، پیتھالوجی، سائیکاٹری اور میڈیسن کے دس ماہر ڈاکٹروں کی ایک ٹیم آئی تھی۔ ملحقہ علاقوں سے پانچ سو سے زائد مریض آئے اور ان سہولیات سے استفادہ کیا۔میڈیکل کیمپ میں آرمی اور سویلین سپیشلسٹ ڈاکٹروں نے مفت ادویات کی تقسیم کے ساتھ ہر قسم کی بنیادی اور ماہر علاج فراہم کی۔کیمپ میں بلاک میڈیکل آفیسر مینڈھر ڈاکٹر پرویز احمد خان اور ان کی ٹیم نے بھی خصوصی تعاون کیا۔شرکاء سے بات چیت کرتے ہوئے ڈاکٹر سنجنا بردے اور ڈاکٹر سچن جادھو نے کہا کہ کیمپ میں بنیادی طور پر عمر رسیدہ افراد، خواتین اور بچوں پر توجہ مرکوز کی گئی تھی۔صحت کی بنیادی سہولتوں کیلئے دور دراز علاقوں کے لوگوں کو طویل فاصلہ طے کرنا پڑتا ہے لیکن بھارتی فوج کی مدد سے انہیں یہ سہولیات ان کے گھر پر فراہم کی گئیں۔بہت سے سرکاری افسران بشمول سب ڈویژنل مجسٹریٹ مینڈھر، ڈاکٹر ساحل جنڈیال، پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج مینڈھر، ڈی ڈی سی ممبران، سرپنچوں، پنچوں اور مقامی آبادی نے مینڈھر گنرز کے کمانڈنگ آفیسر، دس ماہر ڈاکٹروں، آر ایم او مینڈھر گنرز اور دیگر ممبران کا شکریہ ادا کیا۔