مزید خبریں

مجہ گنڈ میں سڑک حادثہ  معمر شہری فوت 

سرینگر//ارشاد احمد//مجہ گنڈ سرینگر میں سکوٹی اور ٹرک کے مابین ٹکر ہونے سے معمر شہری لقمہ اجل بن گیا۔ پولیس کے اعلی حکام نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ 70سالہ عبدالسلام شیخ ساکنہ بخشی پورہ شالہ ٹینگ سرینگر میں پیر کی شام مجہ گنڈ کے مقام پر سکوٹی اور ٹرک کے درمیان ٹکر ہوئی جس کے نتیجے میں وہ مذکورہ شہری شدید زخمی ہوگیا ۔ خون میں لت پت مذکورہ معمر شہری کو فوری طور پرجے وی سی ہسپتال بمنہ لے جایاگیاجہاں سے اسے میڈیکل انسٹیچوٹ صورہ منتقل کیا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دیا۔اس سلسلے میں پولیس تھانہ پارمپورہ میں کیس درج کرکے قانونی کارروائی مکمل کرکے نعش لواحقین کے سپرد کی اور تحقیقات شروع کی۔
 

سوشل سائنس میں تحقیق کاطریقہ کار

کشمیریونیورسٹی میں 7 روزہ سمینار ختم

سرینگر//’سوشل سائنس میں تحقیق کاطریقہ کار‘موضوع پر کشمیر یونیورسٹی میں ایک ہفتہ تک کاورچیول ورکشاپ ختم ہوا۔اس کا انعقاد یونیورسٹی کے سوشل سائنس کے شعبے نے کیاتھا اور اس میں سوشل سائنس کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے50اسکالروں نے شرکت کی۔ورکشاپ کے دوران معروف ریسورس پرسنزپروفیسروویک کمار(جے این یو)،پروفیسراجیالیونیومائی(حیدرآبادیونیورسٹی)،پروفیسرمہندرٹھاکور(جے این یو)،پروفیسرپرم جیت جج(صدرانڈین سوشیالوجیکل سوسائٹی)پروفیسرشفیق احمد(جامعہ ملیہ ) اور پروفیسر ایس کے شرما(پنجاب یونیورسٹی) ،پروفیسراندرارامورا(میسوریونیورسٹی) اورپروفیسرابھاچوہان(جموں یونیورسٹی )نے اپنے تجربات اورعلم سے ابھرتے محققوں کوآگاہ کیا۔ صدر سوشیالوجی شعبہ پروفیسرانیسہ شفیع نے کہا کہ ورکشاپ کامقصدشرکاء کوتحقیق کے مختلف پہلوئوں سے باخبر کرناتھااوران میں آزادانہ طور تحقیق کرنے کی صلاحیت کو پیداکرناتھا۔
 
 

سرینگر اور بارہمولہ میں این سی تنظیمی چنائو

پیر آفاق اور ڈاکٹر سجاد شفیع    بلا مقابلہ صدور منتخب

ظفر اقبال
 
سرینگر+بارہمولہ//نیشنل کانفرنس تنظیمی انتخابات کے سلسلے میں سوموارکو سرینگر اور بارہمولہ کے ضلع صدور کا انتخاب عمل میں لایا گیا۔ پارٹی ہیڈکوارٹر پر ضلع سرینگر کے ڈیلی گیٹوںکی ایک تقریب پر ضلع صدر سرینگر کا الیکشن ڈاکٹر بشیر احمد ویری کی نگرانی میں منعقد ہوا ۔ اس دوران پارٹی کے سینئر لیڈر پیر آفاق احمد کو چوتھی مرتبہ بلا مقابلہ سرینگر کیلئے پارٹی کا ضلع صدر منتخب کیا گیا۔ اس موقعے پر پارٹی صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ، جنرل سکریٹری علی محمد ساگر کے علاوہ بلاک صدور اور عہدیداران بھی موجود تھے۔ اُدھر ضلع صدر بارہمولہ کا انتخاب پارٹی کی سنٹرل سیکریٹری سکینہ ایتو کی نگرانی میں منعقد ہوا ۔ اس دوران پارٹی لیڈر ڈاکٹر سجاد شفیع کو بلا مقابلہ ضلع صدر بارہمولہ منتخب کیاگیا۔ دونوں منتخب ضلع صدور کیلئے پارٹی لیڈران نے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور اُمید ظاہر کی کہ تمام نو منتخب عہدیداران پارٹی کی مضبوطی کیلئے لوگوں کے ساتھ قریبی رابطہ رکھیں گے۔ 
 
 

زرہامہ ترہگام میں آگ 

۔ 2رہائشی مکانات خاکستر ،لاکھو ں کی املاک تباہ

اشرف چراغ 
کپوارہ//ترہگام کے مضافاتی گائوں زرہامہ میں دوران شب آگ کی ایک ہولناک واردات میں 2رہائشی مکانات خاکستر ہوگئے جس کے نتیجے میں لاکھو ں روپئے کی جائیداد راکھ ہو گئی ۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ اتوار اور پیر کی درمیانی شب کو محمد آصف لون ولد سرور لون ساکن کیرن حال گجر پتی زرہامہ کے مکان میں اچانک آگ نموادہوئی جس کے بعد آگ نے اس کی ہمسائیگی میں عبدالمجید رینہ ولد بشیر حمد رینہ ساکن جمہ گنڈ حال گجر پتی زرہامہ کے مکان کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ۔ آگ اس قدر بھیانک تھی کہ اس کے شعلے دور دور تک دکھائی دے رہے تھے جس کے بعد مقامی لوگ وہاں پہنچ گئے اور افراد خانہ کو مکانو ں سے صحیح سلامت نکالا۔آگ لگنے کے بعد اگرچہ فوری طور ترہگام فائر سروس کا عملہ سازوسامان سمیت وہا ں پہنچ گیا اور آگ بجھانے میں جٹ گئے تاہم دونو ں رہائشی مکانات خاکستر ہوگئے اور ان میں لاکھوں روپئے کی جائیداد راکھ ہوگئی ۔
 
 

اُردو یونیورسٹی میں آن لائن داخلوں کا سلسلہ جاری

سرینگر//مولانا آزاد نیشنل اُردو یونیورسٹی کے ریگولر کورسز میں میرٹ کی بنیاد پر ایم اے ، بی اے اور پیرا میڈیکل کورسز میں داخلوں کی توسیع شدہ آخری تاریخ 30؍ ستمبر ہے۔داخلے اور ای پراسپکٹس کیلئے یونیورسٹی ویب سائٹ manuu.edu.in پر لاگ ان کریں۔ پوسٹ گریجویٹ پروگرامس میں اُردو، انگریزی، ہندی، عربی،مطالعات ترجمہ ،فارسی ؛ مطالعات نسواں، نظم و نسق عامہ، سیاسیات،سوشل ورک، اسلامک اسٹڈیز، تاریخ، معاشیات، سماجیات؛ صحافت و ترسیل عامہ؛ ایم کام اور ایم ایس سی (ریاضی) شامل ہیں۔  انڈر گریجویٹ بی اے، بی اے(آنرس) جے ایم سی، بی کام، بی ایس سی ؛ بیچلر آف ووکیشنل کورسس کے تحت میڈیکل امیجنگ ٹکنالوجی (ایم آئی ٹی) اور میڈیکل لیبارٹری ٹکنالوجی (ایم ایل ٹی)؛ برج (رابطہ) کورسز، لیٹرل انٹری کے تحت بی ٹیک اور پالی ٹیکنیک کورسز دستیاب ہیں۔لکھنؤ کیمپس میں اردو، فارسی، انگریزی اور عربی میں بی اے،ایم اے اور سری نگر کیمپس میں معاشیات، اسلامک اسٹڈیز، اردو اور انگریزی میں ایم اے کورسز دستیاب ہیں۔ 
 
 
 

تین سال سے بند نن ناگ سیموہ سڑک کھول دی گئی

غیر ضروری طور راستہ روکنے والے افراد کو انتظامیہ کی تنبیہ

سید اعجاز
 
ترال//ضلع ترقیاتی کمشنر پلوامہ بصیر الحق چودھری نے کہا ہے کہ غیر ضروری طور راستہ روکنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی ہوگی۔موصوف نے پیر کے روز سیموہ علاقے میں 3سال سے بند پڑی ایک سڑک کو کھول دیا جس کی وجہ سے مقامی لوگوں اورمالکان باغات نے راحت کی سانس لی ۔انہوںنے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے بتایا کہ کچھ خود غرض لوگ ایک دوسرے کا راستہ غیر ضروری طور روکتے ہیں جس کا کوئی جواز نہیں ہوتا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ کسی بھی زمین ،گائوں یا محلے تک سڑک کی وجہ سے یہاں روز گار کے زیادہ مواقع پیدا ہوتے ہیں اور ارضی کی قیمت بھی بڑجاتی ہے ۔ڈپٹی کمشنر نے بتایاکہ جو لوگ راستہ روکتے ہیں وہ خود کہاں سے چلتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جو بھی شخص غیر ضروری طور راستہ روکے گا اسکے خلاف سخت قانونی کارروائی ہوگی ۔
 
 
 

سرکاری محکموں کی طرف سے حاصل کی گئی اراضی 

معاوضہ کی فراہمی میں تاخیر پرعثمان مجید کا اظہارِتشویش

سرینگر//اپنی پارٹی کے نائب صدر عثمان مجید نے مختلف سرکاری محکموں کی طرف سے حاصل کی گئی اراضی کا معاوضہ فراہم کرنے میں تاخیر پر تشویش کا اظہار کیا ۔ایک بیان میں انہوںنے کہاکہ سابق ریاست جموں وکشمیر میں ضلع ترقیاتی کمشنروں کی سربراہی میںپرائیویٹ نیگوسی ایشن کمیٹیوں(پی این سی)نے اراضی حصولیابی معاملات کی قیمتیں متعین کی تھیں۔ انہوں نے کہاکہ پچھلے کئی سالوں سے لوگوں کو معقول معاوضہ نہیں دیاگیا اور وہ اپنے حقوق کی حصولیابی کے لئے در در کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں۔ انتظامیہ کی لاپرواہی کی وجہ سے فنڈز کی واگذاری میں کی جارہی تاخیر کے سبب لوگ پریشان ہیں۔ انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے گذارش کی کہ اِس مسئلہ کو حل کرنے کے لئے انتظامی اداروں کو ہدایات جاری کئے جائیں۔
 
 

 حقوق اللہ وحقوق العبادکی ادائیگی کے بغیرسکون ناممکن

تنظیم المدارس اہلسنت کی دارالعلوم صابریہ میں کانفرنس

سرینگر//تنظیم المدارس اہلسنت جموں وکشمیر کے اہتمام اور آل انڈیا علما ومشائخ بورڈ کے اشتراک سے دارالعلوم جامعہ صابریہ کنزالایمان کے احاطہ میں صوفی کانفرنس منعقد ہوئی جس میں مقتدر علما ء کے علاوہ سینکڑوںلوگوںنے شرکت کی ۔کانفرنس میں مولانا سید محمد اشرف  الجیلانی اترپردیش نے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی ۔ کانفرنس میں علماء نے کہا کہ عالم انسانیت کو عصر حاضر میں درپیش مشکلات و آزمائشوں سے نبردآزما ہونے کیلئے پرامن وسازگار ماحول کی ضرورت ہے جو بغیر سکون وراحت ناممکن ہے اور اس کے لئے تقوی وطہارت ،پاکیزگی ونفاست کے ساتھ حقوق اللہ وحقوق العبادکی ادائیگی وپاسداری ناگزیر ہے ۔انہوں نے کہا کہ مدارس اسلامیہ ومکاتب اسلامیہ میں منظم ومربوط لائحہ عمل کے تحت تصوف کی تعلیم کو عام کرنا لازمی ہے اور اس صالح عمل کو روبہ عمل لانے کے لئے تنظیم المدارس اہلسنت جموں وکشمیر کی خدمات حاصل کی جا سکتی ہیں ۔مولانا سید اشرف الجیلانی نے کشمیر کو قدرت کا کرشمہ اور صوفیاکرام کی دعائوں کا اثر قرار دیتے ہوئے تلقین کی کہ اہل تصوف سے وابستگی قائم رکھنے کے لئے مدارس اسلامیہ میں تصوف پر خصوصی دھیان دیا جائے اور اولیائے کرام کی دین متین کی ترویج واشاعت کو ہمہ وقت رکھا جائے ۔ 
 
 

انجمن نصرۃ الاسلام کا اظہار تعزیت

سرینگر//انجمن نصرۃ الاسلام سرینگر نے ادارہ کے سابق جنرل سیکریٹری و سابق چیف انجینئر مرحوم محمد ابراہیم شاہ ساکن گوگجی باغ کی اہلیہ کی وفات پر دکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے ۔بیان میں مرحومہ کو ایک انتہائی دیندار خاتون قرار دیتے ہوئے مرحومہ کو خراج عیقدت پیش کیا گیا۔انجمن نے اپنے جملہ اراکین خاص طور پر میرواعظ محمد عمر فاروق کی طرف سے مرحومہ کی وفات پر شاہ خاندان کے ساتھ تعزیت اور ہمدردی کا ظہار کرتے ہوئے لواحقین کیلئے صبر جمیل اور مرحومہ کیلئے جنت نشینی کیلئے دعا کی۔اس دوران انجمن کے جنرل سیکریٹری الطاف احمد بٹ اور اسلامیہ اورینٹل کالج کے پرنسپل مفتی غلام رسول سامون نے ایک وفد کے ہمراہ مرحومہ کے گھر گوگجی باغ جاکر پسماندگان کے ساتھ  میرواعظ کشمیر کی جانب سے تعزیت کا اظہار کیا اور مرحومہ کے حق میں فاتحہ خوانی کی ۔خاندانی ذرائع کے مطابق مرحومہ کی اجتماعی فاتحہ خوانی29 ستمبر2021بروز بدھوار10:30بجے آبائی مقبرہ گوگجی باغ میں انجام دی جائے گی۔
 
 

ڈاکٹر فاروق کا شمی اوبرائے کے ساتھ اظہارِ تعزیت

سرینگر// نیشنل کانفرنس ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے پارٹی ٹریجرر شمی اوبرائے کے چچا امرجیت سنگھ اوبرائے ساکن گاندھی نگر جموں کے سرگباش ہونے پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے آنجہانی کے جملہ سوگواران خصوصاً شمی اوبرائے کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا اور آنجہانی کی آتما کی شانتی کیلئے دعا کی۔ پارٹی کے نائب صدر عمر عبداللہ،جنرل سکریٹری علی محمد ساگر، صوبائی صدور ناصر اسلم وانی، دیوندر سنگھ رانا، سینئر لیڈران تنویر صادق، مشتاق احمد گورو، غلام قادر پردیسی، ایڈوکیٹ شوکت احمد میر، عمران نبی ڈار، جگدیش سنگھ آزاد اور دیگر لیڈران نے بھی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ 
 
 
 

زرعی یونیورسٹی کشمیر میںڈیٹا سائنس اور مشین لرننگ پر تربیت شروع

سرینگر// شیر کشمیر زرعی یونیورسٹی کشمیر نے ’ڈیٹا سائنس اور مشین لرننگ‘ پر چار ہفتوں کی قومی آن لائن تربیت شروع کی۔اس پروگرام کا انعقاد ورلڈ بینک،آئی سی اے آر کے زیر اہتمام نیشنل زرعی اعلیٰ تعلیمی پروجیکٹ (این اے ایچ ای پی) کے تحت نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف الیکٹرانکس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی (نیلیٹ) ، چندی گڑھ کے تعاون سے کیا گیا ہے۔وائس چانسلر سکاسٹ (کے) پروفیسر جے پی شرما کی رہنمائی میں منعقد ہونے والی اس ٹریننگ میں ملک کے مختلف اداروں کے طلباء ، اسکالروں اور فیکلٹی ممبران حصہ لے رہے ہیں۔سکاسٹ کے ڈائریکٹر پلاننگ اینڈ مانیٹرنگ اور PI NAHEP پروفیسر نذیر احمد گنائی نے کہا کہ اس طرح کے تربیتی پروگرام چوتھے صنعتی انقلاب کی راہ ہموار کریں گے ، جو مصنوعی ذہانت ، مشین لرننگ ، IoT ، روبوٹکس اور ڈرون سے چلتا ہے۔انہوں نے کہا کہ سکاسٹ (کے )سرفہرست قومی ، بین الاقوامی اداروں اور ٹیک کمپنیوں کے ساتھ کام کر رہا ہے تاکہ طلباء میں جدید اور ٹیکنالوجی سے چلنے والے اسٹارٹ اپ کلچر کو فروغ دیا جا سکے۔ انہوں نے اگلی نسل کے انسانی سرمایہ کی تخلیق پر زور دیا جو علم پر مبنی اور ٹیکنالوجی پر مبنی زرعی معیشت کو چلانے کے قابل ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس مقصد کو حاصل کرنے کے لیے یونیورسٹی کو ہم مرتبہ اداروں اور صنعت کے شراکت داروں کے ساتھ قریبی ہم آہنگی سے کام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ انسانی سرمایہ کو تخلیقی صلاحیتوں ، اختراعات اور کاروباری صلاحیتوں کے ساتھ چوتھے صنعتی انقلاب کے لیے تیار کیا جا سکے۔گرجیت سنگھ سائنسدان ایف اورایچ او ڈی NIELIT چندی گڑھ نے NIELIT چندی گڑھ کی جانب سے کی جانے والی سرگرمیوں کا خاکہ پیش کیا۔ انہوں نے مختلف اداروں کے ساتھ کام کرنے اور ان کے تعاون کے بارے میں بھی بات کی اور طلباء  نے اپنے مختلف تربیتی پروگراموں کے ذریعے کس طرح فائدہ اٹھایا۔ انہوں نے اس وقت اس طرح کے تربیتی پروگراموں کے ذریعے اسکاسٹ کشمیر کے ساتھ اس طرح کے مزید موثر تعاون کی خواہش کا اظہار کیا۔کورس کے ماہر انیتا بڈھیراجا ، جوائنٹ ڈائریکٹر نیلیٹ اور ڈاکٹر سروان سنگھ ، ڈپٹی ڈائریکٹر نیلیٹ چندی گڑھ نے تربیتی پروگرام کا تفصیلی جائزہ پیش کیا۔ انہوں نے نیکسٹ جین ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے پیداواری فیصلے اور پیش گوئیاں کرنے میں مشین لرننگ اور مصنوعی ذہانت کی اہمیت کی وضاحت کی۔
 
 
 

ترال میں ڈارئیوروں کی من مانیاں

مسافروں سے اضافی کرایہ وصول کرنے کا الزام

سید اعجاز 
ترال// ترال کے کئی علاقوں میں مسافروں سے اضافی کرایہ وصول کرنے کی شکایات آئے روز موصول ہورہی ہیں۔ پنگلش ،لری بل اورشکار گاہ سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے بتایاکہ لاک ڈائون ختم ہونے کے باوجودان سے اضافی کرایہ وصول کیا جاتا ہے۔ لوگوں نے بتایا کہ وہ گزشتہ سال10روپئے اوربعد میں کرایہ میں اضافے کے بعد 15روپے اداکرتے تھے لیکن اب ڈارئیورکووڈ کے دوران مقررہ کردہ کرایہ20روپئے اور10سواریاں اٹھاتے ہیں ۔ ادھر اوری گنڈ کے لوگوں نے بتایا کہ انہیں7کلو میٹر کے عوض50روپے کرایہ دینے پڑتے ہیں ۔ لوگوں نے بتایا کہ چند ماہ پہلے پولیس اور سیول انتظامیہ نے اس حوالے سے ٹرانسپوٹروں کو ہدایت دی تھی کہ وہ 15روپئے کے حساب سے کرایہ وصول کریں جس کو نظر انداز کیا جاتا ہے ۔لوگوں نے اس حوالے سے ایس ایس پی اونتی پورہ، اے ڈی سی ترال اور اے آر ٹی اوپلوامہ سے مداخلت کی اپیل کی ہے ۔ 
 
 
 

سنٹرل یونیورسٹی میں سیاحت کا عالمی دن منانے کیلئے سمینار

مقامی فن تعمیرکے مطابق سیاحتی مقامات پربنیادی ڈھانچہ کھڑا کیا جائے:وائس چانسلر

سرینگر // سنٹرل یونیورسٹی کشمیر کے شعبہ سیاحت کی جانب سے پیر کو گرین کیمپس گاندربل میں عالمی سیاحت کا دن منانے کیلئے’’سیاحت برائے مکمل ترقی‘‘ کے موضوع پر ایک روزہ سمینار کا اہتمام کیا گیا۔وائس چانسلر پروفیسر معراج الدین میر ، ہوٹل اینڈ ٹورازم مینجمنٹ ، ڈائریکٹر سینٹر برائے لائف سکلز اینڈ سافٹ سکلز ، رجسٹرار پروفیسر ایم افضل زرگر ، ڈین سکول آف بزنس سٹیڈیز پروفیسر فاروق اے شاہ ، ونٹیج جنرل منیجر جہانگیر خان ، کوآرڈی نیٹر ڈی ٹی ایس فیضان اشرف میر ، فیکلٹی ممبران ، اسکالروں اور طلباء نے سمینار میں شرکت کی۔اپنے صدارتی خطاب میں وائس چانسلر پروفیسر معراج الدین میر نے کہا کہ پہلگام ، گلمرگ ، سونہ مرگ اور دیگر مشہور سیاحتی مقامات میں کنکریٹ جنگل وادی کے سیاحتی شعبے کیلئے باعث پریشانی ہیں۔ پروفیسر میر نے کہا’’وقت کی ضرورت سیاحتی مقامات پر ایسی عمارتیں بنانا ہے ، جو اس مخصوص جگہ کے نازک ماحولیات اور ماحول کو نقصان نہ پہنچائیں اور یہ مقامی فن تعمیر اور ذائقہ کے مطابق ہوں‘‘۔انہوں نے  طلباء سے کہا کہ وہ اس کے معمار بنیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کئی ناکامیوں کے باوجود سیاحت کی صنعت ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھ رہی ہے اور کشمیر میں ہزاروں لوگوں کو روزی فراہم کر رہی ہے۔اپنے کلیدی خطاب میں پروفیسر آشیش نے کہا کہ سیاحت کی صنعت دنیا بھر اور ہندوستان میں روزگار کا سب سے بڑا ذریعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ سیاحت کے شعبے میں جامع ترقی اسٹیک ہولڈروں کیلئے مساوی مواقع ، مقامی معیشت سے زیادہ سے زیادہ معاشی روابط حاصل کئے جا سکتے ہیں۔رجسٹرار پروفیسر ایم افضل زرگر نے کہا کہ دنیا بھر میں کووڈ 19 وبائی امراض کی وجہ سے سیاحت کی صنعت منفی طور پر متاثر ہوئی ہے اور وقت کی ضرورت ہے کہ اسے دوبارہ زندہ کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں صنعت کو بڑھانے کے لیے ہمیں مقامی سیاحوں کو فروغ دینا ہوگا تاکہ علاقائی سیاحت کو فروغ ملے۔کوآرڈی نیٹر ڈی ٹی ایس فیضان اشرف میر نے اپنے استقبالیہ خطاب میں یہ دن منانے کے پیچھے کی تاریخ کے بارے میںتفصیل دی۔ انہوں نے کہا کہ یہ دن ہر سال سیاحت کی صنعت کو مدد دینے اور معاشرے کی مجموعی نشوونما اور ترقی میں سیاحت کے کردار کے بارے میں عوام میں شعور پیدا کرنے کے لیے منایا جاتا ہے۔