عوام کو اتحاد کی جیت کا بے صبری سے انتظار: اکھلیش

بلرامپور// سماجوادی پارٹی(ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے کہا کہ دہائیوں سے عوام کو سبز باغ دکھانے والی کانگریس اور بی جے پی سے پریشان افراد نئے وزیر اعظم اور نئی حکومت کا بے صبری سے انتظار کرہے ہیں۔اور اس کے لئے انہیں اتحاد کی بڑی جیت کا شدت سے اتنظارہے ۔گونڈہ پارلیمانی سیٹ سے ایس پی امیدوار ونود کمار سنگھ عرف پنڈت سنگھ کے حمایت میں سنیچر کو ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر یادو نے کہا کہ ذات ، مذہب کے نام پر سماج کو تقسیم کرنے والی بی جے پی، ایس پی۔ بی ایس پی اتحاد سے خائف ہے ۔ گذشتہ چار مرحلوں کی ووٹنگ میں بی جے پی کے لیڈروں کو اپنی ہار سامنے دکھائی دینے لگی ہے اور اس لئے وہ بوکھلاہٹ میں جو منھ میں آرہا ہے بول رہے ہیں۔ایس پی سربراہ نے بی جے پی پر طنز کستے ہوئے کہا کہ جولوگ عوام کی مویشیوں سے حفاظت نہیں کرسکتے وہ دہشت گردوں سے تحفظ کا دعوی کررہے ہیں۔ اترپردیش کے لوگ ان آوارہ مویشیوں کے دہشت سے پریشان نہیں اور یوگی حکومت ان حادثوں میں جان گنوانے والوں کے تئیں ہمدردی جتانے کے بجائے بے خبر بنی ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سڑکوں پر گھوم رہے آوارہ مویشی کسی کو مار کر زخمی کردیتے ہیں تو مقدمہ یوگی آدتیہ انتھ پر در ج ہونا چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ عوام بی جے پی کے جملوں کے جال میں نہیں پھسنے والے اور اسے سبق سکھانے کے لئے تیار ہیں۔مودی حکومت نے نوٹ بندی اور جی ایس ٹی لاکر سرمایہ کاروں کو فائدہ پہنچانے کے ساتھ ساتھ غریب، دلت، پچھڑے ، کسان و مزدور کو نقصان پہنچایا ہے ۔ جملے بازی، جھوٹے وعدوں سے عوام کو چھلنے والی بی جے پی اس بار انتخابات میں اوندھے منھ گرے گی۔مسٹر یاد ونے کہا کہ نیا ملک اسی وقت بنے گا جب نیا وزیر اعظم ہو۔ کانگریس اور بی جے پی ایک ہی سکے کے دوپہلو ہیں دونوں پارٹیوں نے مل کر عوام کو بے وقوف بنایا ہے ۔ایس پی سربراہ نے کہا کہ مودی پہلے جوانوں کو سہولت فراہم کریں پھر دہشت گردی ختم کرنے کی بات کریں، نفرت پھیلا رہی بی جے پی کو بھائی چارے سے منھ توڑ جواب دینے لئے ایس پی۔ بی ایس پی نے اتحاد کیا ہے ۔ عوام بے دار ہیں اور اس بار وہ یقینی طور پر عظیم تبدیلی کے لئے ووٹ کریں گے ۔