عبوری اسپیکر کی تقرری پر تنازعہ برقرار | لوک سبھا اجلاس آج سے نئے منتخب اراکین سے حلف لیا جائیگا، 27جون کو صدر کا خطاب

عظمیٰ نیوز ڈیسک

نئی دہلی// آج یعنی پیر سے شروع ہونے والے 18ویں لوک سبھا کے پہلے اجلاس میں نومنتخب اراکین کی حلف برداری کے بعد 26 جون کو لوک سبھا کے اسپیکر کا انتخاب اور 27جون کو دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس سے صدر دروپدی مرمو کا خطاب ہوگا۔ بی جے پی لیڈر اور سات مدت کے رکن بھرتوہری مہتاب کی بطور عبوری سپیکر تقرری پر تنازعہ سیشن پر سایہ ڈالنے کا امکان ہے۔ اس اقدام پر اپوزیشن کی طرف سے تنقید ہوئی ہے، جس نے الزام لگایا ہے کہ اس عہدے پر کانگریس کے رکن کے سریش کے دعوے کو حکومت نے نظر انداز کیا ہے۔پارلیمانی امور کے وزیر کرن رجیجو نے زور دے کر کہا کہ مہتاب نے لوک سبھا کے رکن کی حیثیت سے سات بلاتعطل میعادیں گزاری ہیں، جس سے وہ اس عہدے کے لیے اہل ہوئے، جب کہ سریش 1998 اور 2004 میں انتخابات ہار گئے جس سے ایوان زیریں میں ان کی موجودہ میعاد چوتھی بار ہے۔ اس سے قبل وہ 1989، 1991، 1996 اور 1999 میں لوک سبھا کے لیے منتخب ہوئے تھے۔پیر کو صدر دروپدی مرمو راشٹرپتی بھون میں مہتاب کو لوک سبھا کے پروٹرم اسپیکر کے طور پر حلف دلائیں گے۔اس کے بعد مہتاب پارلیمنٹ ہائوس پہنچیں گے اور 11 بجے لوک سبھا کو آرڈر دینے کے لیے کال کریں گے۔18ویں لوک سبھا کی پہلی نشست کے موقع پر ارکان کی خاموشی کے ساتھ کارروائی شروع ہوگی۔ اس کے بعد لوک سبھا کے سکریٹری جنرل اتپل کمار سنگھ ایوان کی میز پر ایوان زیریں کے لیے منتخب ہونے والے اراکین کی فہرست رکھیں گے۔اس کے بعد مہتاب وزیر اعظم نریندر مودی، لوک سبھا کے لیڈر، سے ایوان کے رکن کی حیثیت سے حلف لینے کے لیے بلائیں گے۔اس کے بعد پروٹیم سپیکر 26 جون کو سپیکر کے انتخاب تک ایوان کی کارروائی چلانے میں صدر کی طرف سے مقرر کردہ چیئرپرسن کے پینل سے حلف لیں گے۔صدر نے کوڈی کنل سریش (کانگریس)، ٹی آر بالو(ڈی ایم کے)، رادھا موہن سنگھ اور فگن سنگھ کلستے (دونوں بی جے پی) اور سدیپ بندیوپادھیائے(ٹی ایم سی)کو لوک سبھا کے نو منتخب اراکین کو حلف دلانے میں مہتاب کی مدد کرنے کے لیے مقرر کیا ہے۔پینل آف چیئرپرسن کے بعد، پروٹیم اسپیکر وزرا کی کونسل میں لوک سبھا کے ارکان کی حیثیت سے حلف / توثیق کریں گے۔ ریاستوں کے ارکان، حروف تہجی کی ترتیب میں، اگلے دو دنوں میں حلف لیں گے یا اثبات کریں گے۔لوک سبھا اسپیکر کے عہدے کا انتخاب بدھ کو ہوگا اور وزیر اعظم جلد ہی ایوان میں اپنی وزرا کونسل کا تعارف کرائیں گے۔صدر مملکت 27 جون کو پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کریں گے۔ صدر کے خطاب پر شکریہ کی تحریک پر بحث 28 جون کو شروع ہو گی۔ توقع ہے کہ وزیراعظم 2 یا 3 جولائی کو بحث کا جواب دیں گے۔ توقع ہے کہ دونوں ایوان مختصر وقفے تک ملتوی ہو جائیں گے اور 22 جولائی کو مرکزی بجٹ کی پیشکشی کے لیے دوبارہ جمع ہوں گے۔