شاہ پور کنڈی ڈیم پروجیکٹ پر 72 فیصد کام مکمل

نیوزڈیسک
کٹھوعہ// آبپاشی اور فلڈ کنٹرول (آئی اینڈ ایف سی) کے پرنسپل سکریٹری اشوک کمار پرمار نے شاہ پور کنڈی ڈیم پروجیکٹ کا دورہ کیا تاکہ وہاں جاری کاموں کا جائزہ لیا جا سکے۔انہوں نے پنجاب اور کٹھوعہ انتظامیہ کے اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ تفصیلی بات چیت کی۔پرنسپل سیکرٹری نے شاہ پور کنڈی پراجیکٹ کی تعمیراتی سائٹ کا معائنہ کیا جہاں انہیں پنجاب حکومت کے انجینئرز نے اب تک ہونے والی پیش رفت کے بارے میں بریفنگ دی۔ انہوں نے جموں و کشمیر کی طرف دریائے راوی کے مجوزہ چینلائزیشن کی نمائش کرنے والا سائٹ پلان بھی دکھایا۔بعد ازاں پرنسپل سکریٹری نے ضلع ترقیاتی کمیشن کے چیئرپرسن کٹھوعہ مہان سنگھ ڈپٹی کمشنر کٹھوعہ راہول یادو، ایم ڈی فاریسٹ ڈیولپمنٹ کارپوریشن، چیف انجینئر I&FC/RTIC، چیف انجینئر PWD (R&B)، SE RTIC، SE کٹھوعہ کے ساتھ میٹنگ طلب کی۔میٹنگ میں جموں و کشمیر UT سے متعلق متعدد امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا جن میں ہائیڈل چینل کے ہیڈ ریگولیٹر کے کریسٹ لیول کو بڑھانا اور راوی کینال کے لیے ہیڈ ریگولیٹرز کی تعمیر کے علاوہ راوی کینال کے توازن والے حصے کی تعمیر اور سنگم پوائنٹ پر گرنا، سکھل پر ایکویڈکٹ کی تعمیر، کھڈ، کشمیر کینال کے لیے سائفن کی تعمیر بشمول لکھن پور-بشولی روڈ کی الائنمنٹ کی شفٹنگ شامل ہیں۔پرنسپل سکریٹری کو جنرل منیجر DAMS WR ڈپارٹمنٹ، شاہ پور کنڈی ٹاؤن شپ نے بتایا کہ پروجیکٹ پر 72 فیصد کام مکمل ہو چکا ہے اور کہا گیا کہ یہ پروجیکٹ جولائی 2023 تک مکمل ہونے کی امید ہے۔پرنسپل سکریٹری نے ڈی سی کٹھوعہ کو ہدایت دی کہ وہ زمین کے حصول اور زمین کے مالکان کی باز آبادکاری کے مسائل کو جلد از جلد حل کریں تاکہ پروجیکٹ کی تکمیل میں تیزی لائی جا سکے۔ انہوں نے ایم ڈی فاریسٹ ڈویلپمنٹ کارپوریشن سے راوی کے کیچمنٹ ایریا میں درختوں کی کٹائی کے بارے میں بھی پوچھا جہاں مجوزہ نہر تعمیر کی جارہی ہے۔پرمار نے منیجنگ ڈائریکٹر ایف ڈی سی جموں کو درختوں کی کٹائی کا کام شروع کرنے کی ہدایت دی تاکہ راوی کینال کی تعمیر کا کام جلد سے جلد شروع کیا جا سکے۔ اس نے چی  انجینئر PWD سے کہا کہ وہ نورا پل پر تعمیراتی کام کو تیز کرے جو کہ لکھن پور-بسوہلی لی روڈ پر پڑتا ہے اور اس کی جولائی 2023 سے پہلے تکمیل کو یقینی بنائے۔ انہوں نے عمل درآمد کرنے والی ایجنسیوں پر زور دیا کہ وہ قومی اہمیت کے حامل منصوبے کی آسانی سے تکمیل میں رکاوٹیں، اگر کوئی ہیں، کو دور کریں۔ بعد ازاں پرنسپل سکریٹری نے کٹھوعہ نہر کے واٹر ری چارجنگ کا معائنہ کرنے کے علاوہ پروجیکٹ کے عمل آوری کی حقیقت کا جائزہ لینے کے لیے پراجیکٹ سائٹ کا دورہ کیا۔