سب ضلع ہسپتال بانہال میں جدید الٹرا سائونڈ یونٹ کا افتتاح درجنوں علاقوں کے ہزاروں مریضوں کو سہولیات ملنے کا امکان

محمد تسکین

بانہال //سب ڈویژنل مجسٹریٹ بانہال رضوان اصغر قریشی نے سب ڈسٹرکٹ ہسپتال بانہال میں کلر ڈوپلر والی جدید الٹراساؤنڈ یونٹ کا رسم افتتاح کرکے اُسے لوگوں کے نام وقف کیا۔ اس موقع پر بی ایم او بانہال ڈاکٹر سید محمد اسماعیل اور عملے کے سنئیر ارکان بھی موجود تھے۔جموں سرینگر قومی شاہراہ کے حادثاتی سیکٹر میں واقع سب ضلع ہسپتال بانہال سب ڈویژن بانہال اور سب ڈویژن رامسو کے ہزاروں مریضوں اور شاہراہ پر ہونے والے سڑک حادثات کے زخمیوں کیلئے اہمیت کا حامل ہے اور رکھڑی ، سمبڑ اور سنگلدان تک ریل سروس کے جڑ جانے کے بعد بانہال ہسپتال میں مریضوں کے رش میں اضافہ ہوا ہے اور جی ایم سی اننت ناگ کے ساتھ ساتھ سب ضلع ہسپتال بانہال مریضوں کی منزل بنا ہوا ہے۔ ہسپتال انتظامیہ بانہال اور ایس ڈی ایم بانہال نے لوگوں کو مشورہ دیاہے کہ وہ پرائیویٹ مراکز کے بجائے ہسپتال میں اس جدید طرز کی الٹرا سونو گرافی مشین سے فائدہ اٹھائیں۔ انہوں نے کہا کہ ضرورتمند امرناتھ یاتری بھی اس سے مستفید ہوسکتے ہیں۔کلر ڈوپلر والی الٹراساؤنڈ کی اس جدید مشین کی مدد سے عْضلاتی اور اِستَخوانی نَظام ، پیولیوس اور ایبڈومین کے سکین میں تین لاکھ سے زائد کی آبادی کے مریضوں کو براہ راست فائدہ پہنچے گا۔سمبڑ ، بانہال ، رامسو اور چملواس سے ائے کئی مریضوں اور تیمارداروں نے بتایا کہ وہ اس جدید سہولیت کے میسر ہونے سے بہت خوش اور شادمان ہیں اور انہوں نے ریاستی انتظامیہ ، ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز جموں ڈاکٹر راکیش منگوترا اور بانہال ہسپتال انتظامیہ کی کاوشوں کا شکریہ ادا کیا ہے۔ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز جموں راکیش منگوترا نے حالیہ دنوں بانہال ہسپتال کے دورے کے دوران پرانی الٹراساؤنڈ مشین کی وجہ سے مریضوں کو درپیش مشکلات کا جائزہ لینے کے چند روز میں ہی USG کی اس جدید مشین کو سب ضلع ہسپتال بانہال میں نصب کرایا ہے۔اس سے پہلے بانہال ، کھڑی ، رامسو ، پوگل پرستان اور ریل سے جْڑے سمبڑ اور گوک سنگلدان کے ضرورت مند مریضوں خاص کر حاملہ خواتین کو الٹراساؤنڈ کرانے کیلئے اننت ناگ اور بانہال کے پرائیویٹ مراکز کا رخ کرنا پڑتا تھا لیکن اب بانہال ہسپتال میں تعینات ایک ماہر ریڈیالوجسٹ اور گولڈ میڈلسٹ ڈاکٹر آصف کی سربراہی میں لوگوں کو اعلی کوالٹی کی الٹرا ساؤنڈ سہولیات دستیاب ہوگئی ہے۔اس موقع پر ایس ڈی ایم بانہال رضوان اصغر قریشی نے کلر ڈوپلر، لیول ٹو سکین والے USG کے یونٹ کے قیام کیلئے سب ڈویژن بانہال کے لوگوں مبارکباد پیش کی ہے اور محکمہ صحت کے ڈائریکٹر جموں کو فوری طور پر یہ جدید مشینری لگوانے کیلئے ان کا شکریہ ادا کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ شری امرناتھ یاترا کے تناظر میں بھی یہ جدید مشینری اہمیّت کی حامل ہے۔ انہوں نے کہا جموں سرینگر قومی شاہراہ کے رام بن بانہال سیکٹر میں سڑک حادثات ہوتے رہتے ہیں اور سن کا بھاری رش بانہال ہسپتال پر ہی ہوتا ہے اور اس ہسپتال کو بی ایم بانہال ڈاکٹر سید محمد اسماعیل سے ملکر ہر لحاظ سے بہتر کرنے کی کوشش ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ یہاں سی ٹی سکین ، ڈیجیٹل ایکسرے کے علاؤہ لیبارٹری میں عملہ کی مزید تعیناتی کے معاملات بھی ہیں اور ان تمام عوامی معاملات کو خط وکتابت کے ذریعے محکمہ صحت اور ضلع انتظامیہ کی نوٹس میں لایا جائیگا اور اس کے حصول جی ہرممکن کوشش کی جائے گی۔ اس موقع پر ڈاکٹر سید اسماعیل محمد اسماعیل نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ ریل خدمات سے جڑنے کے بعد بانہال سب ڈویژن اور رامسو سب ڈویژن کے علاؤہ سمبڑ ، ورنال ، بجنستہ ، میگدار ، گول ، سنگلدان اور اندھ کے مریض بھی یہاں پہنچ رہے ہیں اور ان علاقوں کے مریض وادی کشمیر کے ہسپتال کے ساتھ ساتھ بھاری تعداد میں سب ضلع ہسپتال بانہال بھی پہنچ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس سال او ہی ڈی میں بانہال ہسپتال کی تعداد ٹاپ پر رہی اور ایک لاکھ اسی ہزار مریض بانہال او پی ڈی پہنچے اور ریل سے مزید علاقے جڑنے کے بعد او پی ڈی میں اضافے کا امکان ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز جموں ڈاکٹر راکیش منگوترا نے حال ہی نیں بانہال ہسپتال کا دورہ کیا اور یہاں پرانی الٹر ساونڈ مشین دیکھی جو پرانی ہونے کی وجہ سے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ نہ تھی اور مریضوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ چند روز کے اندر اندر ڈائریکٹر نے جدید الٹراساؤنڈ مشین کو یہاں لگوا بھی دیا جس سے عام لوگوں اور ہسپتال انتظامیہ کو بہت راحت میسر ہو گئی ہے۔ انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ پرائیویٹ کلینکوں اور لیبارٹریز میں جانے کے بجائے ہسپتال میں سرکار کیطرف سے میسر رکھی گئی سہولیات سے فائدہ اٹھائیں۔