روس مخالف تعصب سے دنیا کو ‘سرد جنگ’ کا خطرہ: روس

سڈنی// آسٹریلیا میں روس کے سفیر گریگوري لاگیونووف نے آج کہا کہ اگر مغربی ممالک جاسوسی اسکنڈل میں روس کے تئیں متعصب رویہ اپناتے رہے تو دنیا 'سرد جنگ' کی سنگین صورتحال میں پھنس جائے گی۔گریگوري لاگیونووف نے یہاں صحافیوں کو کہا، "مغربی ممالک کو یہ سمجھنا چاہئے کہ روس مخالف پروپیگنڈہ کا کوئی مستقبل نہیں ہے ۔ اگر یہ جاری رہا تو ہم 'سرد جنگ' کی سنگین صورتحال میں پھنس جائیں گے ''۔روس نے چار مارچ کو انگلینڈ میں روس کے سرگئی اسکرپل اور ان کی بیٹی کے قتل کی کوشش میں کسی بھی طرح کے کردار سے انکار کیا ہے لیکن جوابی کارروائی کے طور پر امریکہ اور یوروپی ممالک ان کے سفارتکاروں کو نکال رہے ہیں۔ آسٹریلیا نے کل کو کہا تھا کہ وہ اپنے ملک سے روس کے دو سفارتکاروں کو نکالے گا۔اس پورے واقعہ کے بعد مسٹرگریگوري لاگیونووف نے آج صبح میڈیا سے بات چیت کی۔ انہوں نے جاسوسی اسکنڈل کے پیچھے روس کا ہاتھ ہونے کے تمام دعوؤں کو مسترد کرتے ہوئے کہاکہ روس نے ابھی تک برطانیہ کے ساتھیوں کی طرف سے روسی سفارت کاروں کو نکا لے جانے پر اپنی جوابی کارروائی پر کوئی فیصلہ نہیں لیا ہے ۔رائٹر