تھپڑ معاملہ کے لئے مودی استعفی دیں:کیجریوال

 نئی دہلی//دہلی کے وزیراعلی اروند کیجریوال نے انتخابی مہم کے دوران سنیچر کو ایک نوجوان کی جانب سے خود کو تھپڑ ماے جانے کی واقعہ کے پس پردہ وزیراعظم نریندر مودی کا ہاتھ ہونے کا الزام لگاتے ہوئے اتوار کو کہا ہے کہ انہیں (مودی) کو فورا استعفی دینا چاہئے۔ کیجری وال نے یہاں نامہ نگاروں کی کانفرنس کے دوران اس حادثے کے سلسلے میں دہلی کے لوگوں پر حملہ قرار دیتے ہوئے  مودی سے استعفی کا مطالبہ کیا۔ انہوںنے کہا کہ مودی نے تھپڑ مارنے کی سازش رچی ہے ۔انہوںنے کہا کہ وہ اس طرح کے واقعات سے نہیں گھبرائیں گے اور اپنی آخری سانس تک اپنے ملک کے لئے لڑتے رہیں گے ۔عام آدمی پارٹی کے قومی کنوینر نے کہا کہ ‘‘اگر کسی دیگر وزیراعلی پر ایسا حملہ ہوتا ہے تو کیا پولس کمشنراپنی نوکری بچالیتے ؟ خود وزیراعظم کو اس طرح کے واقعہ کے بعد استعفی دے دینا چاہئے ۔ اس حملے کے لئے پولس ذمہ دار نہیں ہے ، بھارتیہ جنتا پارٹی اور وزیراعظم ذمہ دار ہیں۔‘‘انہوںنے کہا کہ حملہ آور کی بیوی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کا شوہر ‘مودی بھکت’ ہے ۔یو این آئی