تل ابیب عالمی عدالت کے حکم پر عمل کرے | رفح کی صورتحال انسانی آفت: آسٹریلوی وزیر

یواین آئی

کینبرا// آسٹریلیا کی حکومت کے ایک سینئر وزیر نے اسرائیل پر زور دیا ہے کہ وہ جنوبی غزہ میں اپنی فوجی کارروائی کو روکنے کے لیے بین الاقوامی عدالت انصاف (آئی سی جے) کے حکم کی تعمیل کرے۔اقوام متحدہ کی اعلیٰ ترین عدالت آئی سی جے نے جمعے کے روز اسرائیل کو حکم دیا ہے کہ وہ غزہ کے جنوبی شہر رفح پر اپنا فوجی حملہ فوری طور پر روک دے اور مصر اور غزہ کے درمیان رفح کراسنگ کھولے تاکہ علاقے تک امداد پہنچ سکے۔دریں اثنا، آسٹریلیا کے موسمیاتی تبدیلی اور توانائی کے وزیر اور وزیر اعظم انتھونی البانی کی کابینہ کے رکن کرس بوون نے کہا کہ وفاقی حکومت اس فیصلے کی حمایت کرتی ہے۔ انہوں نے رفح کی صورتحال کو ایک انسانی آفت قرار دیا جس کے مزید خراب ہونے کا خدشہ ہے۔ بوون نے آج ایک پریس کانفرنس میں کہا: “ہم بہت مضبوط ہیں کہ رفح پر کوئی حملہ نہیں ہونا چاہیے اور بین الاقوامی قانون کی پاسداری کی جانی چاہیے۔ اسرائیل کو اب رفح پر حملے بند کرنے چاہییں۔” آئی سی جے کے حکم کو 15 بین الاقوامی ججوں کے پینل نے 13-2 ووٹوں سے قبول کیا جبکہ اسرائیل اور یوگنڈا کے ججوں نے اس کی مخالفت کی۔