ترال واقعہ| ہم پر لگائے گئے الزامات بے بنیاد : فوج

سری نگر//  فوج نے کہا ہے کہ پلوامہ ضلع کے سیر جاگیر ترال میں ایک خاندان کی جانب سے فوج پر لگائے گئے الزامات بے بنیاد ہیں۔ایک بیان میں فوج نے کہاہے کہ 27ستمبر 2021 کی شام کو فوج کی ایک پارٹی سیر نامی گائوں میں شبانہ گشت کے لئے گئی۔ آری پل نالہ، جو اس گائوں سے گزرتا ہے ، کے قریب پہنچنے پر ان کی نظر وہاں بیٹھے دو افراد پر پڑی۔اس میں کہا گیاکہ جب ان افراد کو پوچھ تاچھ کے لئے بلایا گیا تو نالہ کے قریب رہنے والے علی محمد چوپان اور ان کے افراد خانہ اپنے گھر سے باہر نکل آئے ۔ اس دوران علی محمد کی بیٹی عشرت جان نے بے ہوش ہونے کا ناٹک کیا جس کے بعد افراد خانہ نے شور مچانا شروع کر دیا۔فوج کے بیان میں کہا گیا کہ علی محمد چوپان کے اہل خانہ نے بعد ازاں اس گائوں میں رہنے والے دوسرے لوگوں کو بلایا اور فوج پر مکان کی توڑ پھوڑ اور لڑکی کو پیٹنے کا الزام لگایا۔فوج کے بیان میں علی محمد چوپان اور ان کے افراد خانہ پر کئی الزامات لگائے گئے ہیں ۔بیان میں کہا گیا ہے کہ امن و امان کو خراب کرنے اور لوگوں کو فوج کے خلاف اکسانے کی غرض سے افواہیں اور غلط چیزیں پھیلانے والوں کے خلاف جموں و کشمیر پولیس میں شکایات درج کی جا رہی ہیں۔