تبدیل شدہ جموں و کشمیر شیاما پرساد مکھر جی کو بہترین خراج عقیدت ۔370منسوخی سےجموں و کشمیر میں اتحاد، انضمام اور ترقی کے نئے دور کا آغاز :رانا

عظمیٰ نیوز سروس

جموں//بی جے پی کے سینئر لیڈر دیویندر سنگھ رانا نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں جموں و کشمیر میں آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد مجموعی تبدیلی، ہمہ گیر ترقی اور امن کا حصول ڈاکٹر شیاما پرساد مکھرجی کو بہترین خراج عقیدت ہے۔ جنہوں نے ’ایک ودھان، ایک نشان، ایک پردھان‘کیلئے انتہائی سرگرم پیشکش کی۔1953 میں آج کے دن ڈاکٹر مکھرجی کی عظیم قربانی پورے ملک کے لوگوں کے لئے بالعموم اور خاص طور پر لاکھوں بی جے پی کارکنان کیلئے جذباتی طور پر جموں و کشمیر کو ملک کے دیگر حصوں کے ساتھ مکمل طور پر مربوط کرنے کے لئے ایک تحریک بنی، جو کہ ایک ہی دن میں ہوا تھا۔تریکوٹہ یاتری نواس میںموصوف نے کہاکہ ہندوستانی آئین سے آرٹیکل 370 کی تنسیخ نے نہ صرف ملک کی سیاسی شکل بدلی بلکہ جموں و کشمیر میں اتحاد، انضمام اور ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ جرات مندانہ اقدامات نے پسماندہ اور کمزور طبقات جیسے درج فہرست ذات، درج فہرست قبائل، والمیکی، پناہ گزینوں، خواتین اور دیگر طبقات کے لئے ایک نئی امید پیدا کی۔انہوں نے کہاکہ حالیہ برسوں میں مرکزی زیر انتظام علاقے کو تبدیل کرنے پر زور دینے کے ساتھ اٹھائے گئے راہ توڑاقدامات کا حوالہ دیں جو بدقسمتی سے ماضی میں آنے والی حکومتوں کی طرف سے نظرانداز اور محرومی کا شکار رہے ہیں۔رانا نے کہا کہ ملک کے اس حصے کے لوگ پہلی بار مختلف اسکیموں کے مرکزی مرحلے میں ہونے کا احساس ہوا جس کا مقصد ان کے کام کو بہتر بنانا ہے۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ تقریباً پانچ سالوں میں دونوں خطوں کے ساتھ ترقی اور خوشحالی اور ترقی کی راہوں کی دستیابی کے حوالے سے منصفانہ ڈیل دیکھنے میں آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ امن کی بحالی نے معاشی اور ترقیاتی محاذوں پر بے مثال اقدامات کی راہ ہموار کی ہے، جس کے نتائج بہت زیادہ دکھائی دے رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ لوگ اب امن کے ثمرات حاصل کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی ہر محاذ پر خطوں اور ذیلی خطوں کے درمیان تفاوت کو دور کرنے اور سب کو پھلنے پھولنے کے مواقع فراہم کرنے کے لئے پرعزم ہے۔اکھنڈ بھارت کے قدآور ووٹروں میں سے ایک کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے رانا نے کہا کہ پاکستان کے زیر قبضہ جموں کشمیر پر 1994 کی متفقہ پارلیمنٹ کی قرارداد کی تکمیل ہم وطنوں کے عزم کی تکمیل ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر مکھرجی کی زندگی اور قربانی نسلوں کو ترغیب دیتی رہے گی اور انہیں ایک مضبوط ہندوستان کی تعمیر کے لئے کام کرنے کی ترغیب دیتی رہے گی۔اس موقع پر بلڈ ڈونیشن کیمپ کا بھی انعقاد کیا گیا۔ رانا نے عطیہ دہندگان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ زندگیاں بچانے کے لئے اس طرح کی رضاکارانہ کوشش قابل تعریف ہے۔