بدھ کھناری تا شکر مرگ سڑک چراگاہوںو مال مویشیوں کیلئے نقصان دہ

تھنہ منڈی // سنی تحریک کونسل کے سرپرست اور نوجون سیاسی رہنما محمد عرفان بھٹی نے کہا کہ بدھ کھناری تا شکر مرگ اور اس کے آس پاس موجود جھیلوں تک بذریعہ سڑک سیاحت کو فروغ دینے والا منصوبہ مال مویشیوں کیلئے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ بدھ کھناری سے شکر مرگ اور وہاں سے مزید آگے جھیلوں کی طرف سڑک لے جانے کا منصوبہ بنایا جا رہا ہے جبکہ سڑک اور سیاحت کو فروغ ملنا ترقی اور خوشحالی کی علامت ہے جس کیلئے سرکار کو کام کرنا بھی چاہیے لیکن اس علاقے میں موجود قدرتی جھیلوں کی طرف سڑک کا لیجانا اور سیاحت کو فروغ دینا ان علاقوں میں رہنے والوںکیلئے اذیت کا باعث بن سکتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ شکر مرگ اور اس کے آس پاس کے علاقے کئی لوگوں کی چراگاہیں ہیں جہاں پر یہ لوگ ہر سال پانچ چھ ماہ گزارتے ہیں جس سے انکے مویشیوں کا گزارا ہو جاتا ہے۔انہوں نے کہاکہ مذکورہ پروجیکٹ کے بعد پسیوں کی وجہ سے چراگاہوں کی کٹائی ہو سکتی ہے جو کہ عام لوگوں کیلئے ایک بڑا نقصان ہو سکتا ہے ۔انہوں نے کہاکہ اگرچہ ان علاقوں میں موجود جھیلیں اپنے آپ میں ایک الگ خوبصورتی رکھتی ہیں لیکن جغرافیائی ،گہرائی اور اپنے پھیلاؤ کے اعتبار سے کشمیر کی جھیلوں کی طرح وسیع و عریض نہیں ہیں جو اپنے دامن میں کوڑا کرکٹ سمیٹنے کی صلاحیت رکھتی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ انتظامیہ کو چاہئے کہ وہ مذکورہ پروجیکٹ کیلئے نظر ثانی کرکے معقول حل نکالے ۔