این سی اور پی ڈی پی نے امت شاہ کے دورے میں سہولت فراہم کی: بخاری

 عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر// اپنی پارٹی صدر سید الطاف بخاری نے ہفتہ کو دعویٰ کیا کہ این سی اور پی ڈی پی نے وزیر داخلہ امت شاہ کے دورہ کشمیر میں سہولت فراہم کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ دونوں سیاسی جماعتیں پی اے جی ڈی کو ٹکڑے ٹکڑے کرنے کی ذمہ دار ہیں۔اننت ناگ میں عوامی اجتماع کے موقع پر بخاری نے دعویٰ کیا کہ وزیر داخلہ امیت شاہ کے حالیہ دورے کو این سی اور پی ڈی پی نے سہولت فراہم کی تھی جو عوام میں بری طرح بے نقاب ہو چکے ہیں۔بخاری نے کہا، “این سی اور پی ڈی پی جب اقتدار سے باہر رہتے ہیں تو جموں و کشمیر کے وقار کی بات کرتے ہیں، لیکن جب دونوں پارٹیاں کرسی پر فائز ہوتی ہیں تو سب کچھ ٹھیک رہتا ہے۔ لیکن میں ان سے کہنا چاہتا ہوں کہ آپ کو کرسی فوری طور پر نہیں ملے گی، بلکہ صرف نوجوانوں کا وقار اور احترام بحال کیا جائے گا”۔انہوں نے کہا کہ این سی اور پی ڈی پی کی طرح روایتی سیاسی جماعتیں عوام میں بری طرح بے نقاب کیا گیا ہے۔ “اگر وہ سمجھتے ہیں کہ لوگ دودھ اور ٹافی کے ریمارکس اور بی جے پی کو جموں و کشمیر میں لانے میں ان کے کردار کو بھول گئے ہیں تو وہ بے وقوف ہیں۔ یہ بی جے پی کی اصل اے اور بی ٹیمیں ہیں۔ اب ان کا وقت ختم ہو گیا ہے”۔انہوں نے کہا کہ وزیر داخلہ امت شاہ نے نیشنل کانفرنس اور پی ڈی پی کی دعوت پر کشمیر کا دورہ کیا۔ پی اے جی ڈی کو توڑنے کا ٹاسک ان دونوں سیاسی جماعتوں کو دیا گیا تھا۔ اگر وہ ذمہ دار نہیں ہیں تو انہیں انکار کرنے دیں، میں ثبوت پیش کروں گا جہاں پی اے جی ڈی کے مقصد کو ختم کرنے کے لیے میٹنگیں ہوئیں”۔