ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی کا دفتری اوقات میں تبدیلی کا مطالبہ

 جموں // جے اینڈ کے جوائنٹ ایکشن کمیٹی (R)کی جانب سے جمعہ کے روز یہاں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں جموں خطہ میں موسم گرما کے دوران دفاتر میں موجودہ اوقات کار صبح 10:00 بجے سے بعد دوپہر 04:30 بجے تک کو بدل کر اسے صُبح 08:00 بجے سے 02:00بجے تک کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کمیٹی کے ریاستی صدر بابو حسین ملک نے سرکار سے جموں خطہ میں موسم گرما کے دوران دفاتر ی اوقات صُبح 08:00 بجے سے 02:00بجے تک کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ یا تو 5روزہ ہفتہ کا اعلان کرکے تمام دفاتر میں سنیچر وار کو چھٹی کرنے کا مطالبہ کیا۔پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کلرکل کیڈر کے تنخواہ تفاوت کے لئے جاری ایس آر او نمبر333- میں ترمیم کرکے اسکا اطلاق مورخہ جنوری 1996 سے جبکہ مالی فوائد مورخہ 02/2003 سے ہائی کورٹ کے احکامات کے تحت جاری کرنے ، سیکرٹریٹ اسسٹنٹ تربیتی کورس پاس کرنے کے بعد دو اضافی انکریمنٹ بحال کرنے ،جسے ایس آر او۔333 میں غلطی سے بند کیا گیا ہے،کا مطالبہ کیا ہے۔ملک نے میڈیکل الاﺅنس میں اضافہ کرکے اسے ایک ہزار روپے کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔انہوںنے ڈیلی وئیجروں /کنسالڈیٹد /کنٹریکچول اور آنگن واڑی ورکروں کو باقاعدہ بنانے کا بھی مطالبہ کیا ۔پریس کانفرنس میں گورنر ستیہ پال ملک سے ملازموںکے جائز مطالبات حل کرنے کی اپیل کی گئی بصورت دیگر وہ سڑکوں پر احتجاج کرنے کو مجبور ہو جائیںگے۔پریس کانفرنس میں تمام ملازموں سے 28-05-2019کو پریس کلب جموں کے سامنے اکٹھا ہونے کی اپیل کی گئی ،تاکہ سرکار کی ملازم کُش پالسیوںکے خلاف احتجاج کیا جا سکے۔ پریس کانفرنس میں کلونت سنگھ سمبیال ،امر ناتھ ٹھاکور، ستیش دتہ، یشپال شرما ، سیوا رام راٹھور، انیل سنگھ سلاتھیہ،نریش کمار، وکاس چندر، وجے شرما ، منیش شرما ،آشیش شرما ،اشوک سنگھ ، انو سویا گپتا، اودھے سنگھ پٹھانیہ، انیل گپتا، ارون شرما ، فریدہ بانو ،رنکو گل، بشیر ملک، پرم جیت سنگھ ، محمد صادق، اوتم چند، پون کمار، روہت جارج ،سوشیل شرما ، راکیش دتہ، و دیگران بھی شامل تھے۔