اگلے سال کے آخر تک وادی کو باقی ملک سے جوڑاجائیگا

سرینگر//منیجر شمالی ریلوے ( این آر ) آشوتوش گنگل نے آج چیف سیکرٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا سے ملاقات کی اور انہیں اودھمپور ۔ سرینگر ۔ بارہمولہ ریلوے رابطے( یو ایس بی آر ایل ) پر جاری کاموں کی صورتحال سے آگاہ کیا ۔ سی اے او کنسٹرکشن اودھمپور ۔ سرینگر ۔ بارہمولہ ریلوے لنک اے کے کھنڈیلوال ، پی سی ایس سی  این آر   اے این مشرا ، ڈی آر ایم فیروز پور سیما شرما بھی جی ایم  این آر کے ہمراہ تھیں ۔ شمالی ریلوے  کے جی ایم نے چیف سیکرٹری کو ان کاموں کے بارے میں آگاہ کیا جو مکمل ہو چکے ہیں یا تکمیل کے قریب ہیں ، کام جاری ہیں اور اس منصوبے کو جلد از جلد لوگوں کے نام وقف کرنے کیلئے مقررہ وقت کی پابندی کے بارے میں بتایا ۔ چیف سیکرٹری کو بتایا گیا کہ امید ہے کہ 2023 کے دوران وادی کشمیر جموں اور ملک کے باقی حصوں سے منسلک ہو جائے گی جس سے وادی کشمیر کو ملک کے دیگر حصوں کے ساتھ ریل کے ذریعے موثر رابطہ فراہم کیا جائے گا ۔ ہمہ موسمی اور لاگت سے موثر رابطہ جموں و کشمیر کی معیشت کیلئے ایک اعزاز ثابت ہو گا ۔ چیف سیکرٹری کو کٹڑا ۔ بانہال سیکشن کے درمیانی 111 کلو میٹر پر کام کے بارے میں بتایا گیا جو مشکل اور ناگوار خطوں کے باوجود زوروں پر چل رہا ہے ۔ جموں و کشمیر کے خطے کو باقی ہندوستان سے جوڑنے کے سلسلے میں ریلوے کے کام کی تعریف کرتے ہوئے ڈاکٹر مہتا نے کہا کہ ریلوے لائین خطے کی مجموعی ترقی اور خوشحالی کیلئے ایک سنگِ میل ہے جو تیزی سے صنعت کاری ، خام مال کی نقل و حرکت ، تجارت اور سیاحت کو فروغ دینے کے علاوہ روزگار کے مواقع فراہم کرنے میں اہم کردار نبھائے گی ۔ ڈاکٹر مہتا نے دی گئی ٹائم لائین کے اندر پروجیکٹ کو مکمل کرنے کیلئے یو ٹی انتظامیہ سے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔ جنرل منیجر این آر نے بھی چیف سیکرٹری کا یو ٹی انتظامیہ کے تعاون کیلئے شکریہ ادا کیا ۔