آسٹریلیا: متعدد ممالک کے سفارت خانوں کو مشکوک پارسل موصول

سڈنی // آسٹریلیا کے شہر کنبیرا اور میلبرن میں واقع پاکستان سمیت متعدد غیر ملکی سفارت خانوں کو مشکوک پارسل موصول ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق آسٹریلوی پولیس کی جانب سے میلبرن اور کنیبرا میں واقع پاکستان اور برطانیہ سمیت متعدد غیر ملکی سفارت خانوں میں مشکوک پارسل برآمد ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ برآمد ہونے والی مشکوک اشیاء کی تحقیقات جاری ہیں۔ میلبرن میٹروپولیٹن فائر بریگیڈ کے ترجمان کی جانب سے بھی میلبرن میں متعدد حادثات رونما ہونے کی تصدیق کی گئی ہے، جس سے متعدد سفارت خانوں کے متاثر ہوئے ہیں۔ میٹرپولیٹن فائر بریگیڈ سروس کے ترجمان کا کہنا تھا کہ فائر بریگیڈ عملہ مشکوک پارسل کی تفتیش میں وفاقی پولیس کی معاونت کررہا ہے، مشکوک پارسل کا معائنہ ایمرجنسی سروس کا عملہ کررہا ہے۔ مقامی خبر رساں اداروں کا کہنا ہے کہ ہنگامی خدمات انجام دینے والے عملے کو فرانس، اٹلی، نیوزی لینڈ، یونان، بھارت اور جنوبی کوریا کے سفارت میں تحقیقات کررہا ہے جبکہ دیگر ملکوں کے سفارت خانوں میں بھی تحقیق جاری ہے۔ میلبرن پولیس کو یقین ہے کہ مذکورہ حادثات ’ٹارگٹڈ ہیں لیکن عام کمیونٹی کو متاثر نہیں کررہے‘۔ غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ آسٹریلوی پولیس حالات و واقعات کی تحقیقات جاری ہیں، برطانوی ہائی کمیشن کے ترجمان نے کہا ہے کہ ’ہم آسٹریلیا کے وفاقی اور مقامی حکام کے ساتھ ملکر کام کررہی ہے۔ برطانوی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ تاحال تمام سفارت خانوں کا عملہ محفوظ ہے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ پیرو کے روز سڈنی میں واقع ارجنٹینا کے سفارت خانے میں سفید رنگ کا مشکوک محلول بھیجا گیا تھا، بعدازاں تحقیق سے پتہ چلا کہ محلول زہریلا نہیں تھا۔