کشمیر میں آگ کی دو الگ الگ وار داتوں میں زائد از ایک درجن دکانوں کو نقصان

File Photo

سرینگر// وادی کشمیر میں دوران شب آگ کی دو الگ الگ وار داتوں میں زائد از ایک درجن دکانوں کو نقصان پہنچا ہے۔ گرمائی دارلحکومت سری نگر کے بٹہ مالو علاقے میں آگ کی ایک شبانہ وار دات میں کم سے کم 6 دکانوں کو نقصان پہنچا۔
محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ سری نگر کے بٹہ مالو علاقے میں جمعہ اور ہفتے کی درمیانی شب قریب ڈھائی بجے لگنے والی آگ کی ایک واردات میں 6 دکانوں کو نقصان پہنچا۔انہوں نے کہا: ‘یہ بیس پر مشتمل دکانوں کی لائن ہے جس میں سے 6 دکانوں کو آگ سے نقصان پہنچا’۔ان کا کہنا تھا کہ اطلاع موصول ہوتے ہی ہماری چار گاڑیاں جائے واردات پر پہنچی اور آگ کو مزید پھیلنے سے روک دیا۔
تاہم آگ کی اس وار دات میں کسی قسم کے کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے نیز آگ لگنے کی وجہ معلوم کی جا رہی ہے۔ادھر وسطی ضلع گاندربل کے قصبہ کنگن کے مین مارکیٹ میں دوران شب آگ کی ایک واردات میں ایک شاپنگ کمپلیکس کے کم سے کم 7 دکان خاکستر ہوگئے۔
متعلقہ حکام نے بتایا کہ کنگن کے مین مارکیٹ میں جمعہ اور ہفتے کی درمیانی شب ایک شاپنگ کمپلیکس میں آگ لگ گئی جس کے نتیجے میں اس کے 7 دکانوں کو شدید نقصان پہنچا۔انہوں نے کہا کہ اطلاع موصول ہوتے ہی ہماری گاڑیاں اور عملہ جائے وار دات پر پہنچ گئے اور آگ کو قابو میں کر لیا۔ان کا کہنا تھا کہ آگ کی اس واردات میں کپڑوں کے دو دکانوں کو زیادہ نقصان پہنچا ہے۔تاہم اس وار دات میں کسی قسم کے جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔
بتادیں کہ وادی کشمیر میں حالیہ دنوں میں آگ لگنے کی وار داتوں میں اضافہ درج ہو رہا ہے جو لوگوں کے لئے فکر مندی کا باعث بن گیا ہے۔محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کشمیر کے مطابق وادی کشمیر میں موسم سرما کے دوران آگ کی وارداتوں میں اضافہ درج ہونے کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ لوگ اس دوران گرمی کے لئے الیکٹرک یا گیس پر چلنے والے آلات کا بکثرت استعمال کرتے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ محکمے کی طرف سے جاری ایڈوائزری پرعمل پیرا ہونے سے آگ کی وار داتوں میں کمی کی جاسکتی ہے۔