تازہ ترین

تاریخی پتھر مسجد کی خستہ حالی پر لوگ برہم | محکمہ آثار قدیمہ پر لاپرواہی برتنے کا الزام

سری نگر//پائین شہر کے زینہ کدل علاقے میں دریائے جہلم کے کناروں پر واقع تاریخی اور اپنی منفرد طرز تعمیر کے باعث وادی بھر میں مشہور پتھر مسجد کی خستہ حالت سے مقامی لوگوں میں ناراضگی بھی پائی جا رہی ہے اور وہ محکمہ آثار قدیمہ کے خلاف سراپا احتجاج بھی ہیں۔تاریخی خانقاہ معلیٰ اور مجاہد منزل، جو وادی کی سب سے پرانی سیاسی جماعت نیشنل کانفرنس کا کئی دہائیوں تک ہیڈ کوارٹر رہا ہے، کے روبرو واقع قریب چھ سو سال قدیم پتھر مسجد محکمہ آثار قدیمہ کے تاریخی یادگاروں میں شامل ہے۔مسجد کی شان اور تاریخی و دلکش طرز تعمیر کی بحالی کے لئے مقامی لوگوں نے محکمہ آثار قدیمہ کے خلاف احتجاج درج کیا۔احتجاجی 'بچاؤ بچاؤ پتھر مسجد بچاؤ' کے نعرے بلند کر رہے تھے۔مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ اس تاریخی مسجد کو محکمہ آثار قدیمہ نے خدا کے ہی رحم و کرم پر چھوڑ دیا ہے اورگذشتہ8برسوں سے اس کی مرمت و بحالی کی طرف سے

ہارٹیکلچر گریجویٹوں کا پریس کالونی میں احتجاج | نوکریوں کی فراہمی کا مطالبہ ،ایل جی سے مداخلت کی اپیل

سرینگر// جموں و کشمیر ہارٹیکلچر گریجویٹس نے ہفتے کو یہاں پریس کالونی میں اپنے مطالبات خاص کر نوکریوں کی فراہمی کے لئے احتجاج درج کیا۔احتجاجی 'ہمیں انصاف چاہئے' کے نعرے لگا رہے تھے۔ انہوں نے پلے کارڈس بھی اٹھا رکھے تھے جن پر بھی انصاف کی فراہمی کے لئے نعرے درج تھے۔اس موقع پر ایک احتجاجی ہارٹیکلچر گریجویٹ نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ ہماری آج تک کبھی کوئی ریکروٹمنٹ نہیں ہوئی ہے۔انہوں نے کہاکہ 'حکومت نے سال 2007 میں یہ ڈگریاں شروع کی ہیں ہم نے ہارٹیکلچر میں پی ایچ ڈی کیا ہے لیکن آج تک ہماری کبھی بھی ریکروٹمنٹ نہیں ہوئی ہے'۔موصوف نے کہا کہ حد یہ ہے کہ ارباب اقتدار ہم سے کہتے ہیں کہ ڈگریاں کیوں کیں۔انہوں نے کہاکہ ہم جب افسروں کے پاس جاتے ہیں تو وہ ہمیں تجارت کرنے کا مشورہ دیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اب جو ریکروٹمنٹ ہو رہی ہے اس میں بھی ہارٹیکلچر کے لئے کوئی پوسٹ نہیں ہے۔احتجاجی

اردو کونسل کی طرف سے آن لائن تحریری اردو مضمون نگاری مقابلہ | شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلاب کوانعامات سے نوازا گیا

سرینگر//اردو کو جموں کشمیر کی روح قرار دیتے ہوئے ماہرین تعلیم ،صحافیوں اور ادب نوازوں نے کہا کہ مرکزی زیر انتظام والے اس علاقے میں80فیصد آبادی اردو زبان بولتی ہے،جو کہ مختلف خطوں کے لوگوں کے درمیان پل کی حیثیت کام کرتی ہے۔سرینگر میں جموں کشمیر اردو کونسل کی طرف سے آن لائن تحریری اردو مضمون نگاری ’’ اردو زبان ہماری ضرورت‘‘مقابلے میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلاب کو انعامات اور اعزازات سے نوازا گیا۔تقریب پر پرنسپل سیکریٹری اسکول ایجوکیشن و سِکل ڈیولپمنٹ ڈاکٹر اصغر حسن سامون مہمانِ خصوصی تھے جبکہ دیگر مہمانوں میں روزنامہ سرینگر ٹائمز کے ایڈیٹر اور معروف کارٹونسٹ بشیر احمد بشیر، پروفیسر نذیر احمد ملک، وحشی سید، جی این وار اورجوائنٹ ڈائریکڑ ایجوکیشن عابد حسین شامل تھے۔ اردوکونسل کے صدر ڈاکٹر جاوید اقبال نے صداری خطبے کے دوران اردو زبان کے ماضی ،حال اور م

پائین شہرکے کئی علاقوں میں پانی کی قلت | محکمہ جل شکتی کے خلاف لوگوں میں غم و غصہ

سرینگر// پائین شہر کے کئی علاقوں میں پانی کی شدیدت قلت نے لوگوں کو سخت پریشان کردیا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ پانی صبح و شام چند گھنٹوں تک رہتا ہے تاہم دن بھر پانی کی سپلائی بند رکھی جاتی ہے جس کے باعث لوگوں کو شدید پریشانی لاحق ہوتی ہے ۔ پائین شہر کے علاقے خانیار، نائو پورہ، رعناواری ، نوہٹہ ، رنگر سٹاپ، حول ، بہوری کدل، عالی کدل اور صراف کدل علاقوںمیں پینے کے پانی کی شدید قلت سے لوگوں کو شدید دشواریاں پیش آرہی ہے ۔ لوگوںنے کہا کہ محکمہ جل شکتی کی جانب سے صبح اور شام کو چند گھنٹوں تک پانی رہتا ہے اور پھر پانی کی سپلائی کو دن بھر کیلئے منقطع رکھا جاتا ہے جس کے باعث لوگ پریشان ہوجاتے ہیں ۔ لوگوں نے کہا کہ پانی کی کمی کا مسئلہ امسال بڑ ھ گیا ہے جبکہ گزشتہ برسوں پانی کی اس قدر قلت نہیں پائی جاتی تھی ۔ لوگوں نے کہا کہ محکمہ کے متعلقہ ذمہ داروں سے اگرچہ اس بارے میں کئی بار بات کی گئی تاہم پا

شمالی کشمیر سے سرینگر آنے والے مسافر پریشان | بٹہ ما لو بس اڈے کو دوبار بحال کر نے کا مطا لبہ

سرینگر//شمالی کشمیر کے لاکھوں عوام بشمول ٹرانسپورٹروں نے ایک مر تبہ پھر تاریخی اورقدیم ترین بٹہ مالوبس اڈے کو دوبار بحال کر نے کا مطا لبہ کیا ہے ۔3سا ل قبل پی ڈی پی بھا جپا حکومت کی طرف سے بٹہ مالو کے جنرل بس سٹینڈ کو پارم پورہ منتقل کرنے کے منصو بہ کے خلاف شمالی کشمیر کے کپواڑہ، ہندواڑہ ، لولاب، اوڑی ، بارہمولہ سوپور اور دیگر قصبہ جات کے علاوہ وسطی ضلع بڈ گام اور گا ندربل کے لوگوں نے مخالفت کرتے ہوئے کہا تھاکہ اس اقدام سے لوگوں کو مشکلات کا ہی سامنا کرنا پڑے گا اور مسافروں پر سخت بوجھ پڑے گا ۔ ٹرانسپورٹروں کے ساتھ ساتھ شمالی کشمیرسے تعلق رکھنے والے اْن لاکھوں مسافسروں بشمول ملازمین ،تاجروں ،طلاب اورمریضوں وغیرہ میں سخت ناراضگی پائی جاتی ہے جوکم کرایہ ہونے کی وجہ سے عمومی طوربسوں اورمیٹاڈاروںمیں ہی سفرکیاکرتے تھے۔سرکاری دفاترمیں تعینات ایسے ملازموں،پرائیویٹ نوکری کرنے والوں،طلبائوطالبا

غیر قانونی تعمیرات کے خلاف لائوڈا کی مہم | حبک ،سعدہ کدل،نشاط اور رعناواری متعدد ڈھانچے منہدم

سرینگر// جھیل ڈل اور اسکے گرد و نواح میں ناجائز تعمیرات کے خلاف مہم کو جاری رکھتے ہوئے لیکس اینڈ واٹر ویز ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے کل حبک ،سعدہ کدل،نشاط اور رعناواری علاقوں میں متعدد ڈھانچوں کو منہدم کیا ۔لائوڈا نے غیر قانونی طور تعمیر کرنے والے افراد کے خلاف کیس درج کرائے ۔لائوڈا کے بیان کے مطابق کچھ خود غرض عناصر نے کورونا بحران اور لاک ڈائون کا ناجائز فایداٹھا کر غیر قانونی طور تعمیرات کھڑے کئے ہیں ۔بیان کے مطابق غیر قانونی طور ڈھانچے تعمیر کرنے والوں کے خلاف سختی سے نمٹا جائے گا اور انہدامی کارروائی جاری رہے گی ۔لاوڈا نے ٹپرمالکان اور تعمیراتی میٹریل لے جانے والی گاڑیوں کے مالکان کو متنبہ کیا ہے کہ وہڈل اور نگین جھیلوں اور اس کے مضافاتی علاقوں میں بغیر اجازت تعمیراتی میٹریل لے جانے سے باز آجائیں ۔         

آئی ٹی آئی باغ دلاور خان میں جاب میلہ منعقد | ڈاکٹر سامون کا نئے کورسز متعارف کرنے پر زور

سرینگر//گورنمنٹ انڈسٹریل ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ (آئی ٹی آئی) باغِ دلاور خان میں کل جاب فیئر کا انعقاد کیا گیا جس میں 12 کمپنیوں اور انسٹی ٹیوٹ سے کورس مکمل کرنے والے 325امیدواروں نے  حصہ لیا۔تقریب پر مہمان خصوصی پرنسپل سکریٹری سکول ایجوکیشن اینڈ سکل ڈیولپمنٹ ڈاکٹر اصغرحسن سامون نے ڈائریکٹرسکل ڈیولپمنٹ سجاد حسین گنائی کی موجودگی میں جاب میلے کا افتتاح کیا۔ڈاکٹر سامون نے اپنے خطاب میں کہا کہ سری نگر کے آئی ٹی آئی سے شروع ہونے والے اس جاب میلے کو دوسرے تمام اضلاع تک بڑھایا جائے گا۔ انہوں نے آئی او ٹی ٹیکنیشن (سمارٹ سٹی) ، آئی او ٹی ٹیکنیشین (سمارٹ فون) ، آئی او ٹی ٹیکنیشن (سمارٹ زراعت) آئی او ٹی ٹیکنیشن (سمارٹ ہیلتھ کیئر) ٹیکنیشن میکاٹروکس ، روبوٹکس وغیرہ جیسے کورسز متعارف کرانے پر زور دیا۔انہوں نے مارکیٹ کی طلب کے مطابق ہنر مند افرادی قوت تیار کرنے کے لئے آئی ٹی آئی کے نصاب اور

۔21طیاروں میں 2954 مسافر سرینگر وارد

سرینگر//جموں وکشمیر یونین ٹریٹری میں گھریلو پروازو ں کے دوبارہ چالو ہونے کے 125 ویں دِن 2954مسافروں کو لے کر21 پروازیں کل سرینگر کے ہوائی اَڈے پر اتریں۔ واضح رہے کہ25؍ مئی سے اب تک سرینگر ائیر پورٹ پر 1,779 گھریلو پروازیں اُتریں ہیں جن میں 2,44,212 مسافروں نے سفر کیا ہے۔ نیز جموں وکشمیر حکومت نے عالمی وَبا کے پیش نظر اَب تک متعدد ممالک سے تقریباً 3,806 مسافروں کو خصوصی اِنخلأ پروازوں کے ذریعے جموںوکشمیر یوٹی میں واپس لایا ہے۔ ہوائی اَڈے پر اُترتے ہی تمام مسافروں کا کووِڈ۔19 ٹیسٹ کیا گیا اور اَپنے منازل کی طرف تما م اَحتیاطی تدابیر پر عمل پیر ا رہ کر روانہ کئے گئے۔حکومت نے ہوائی پروازوں کے ذریعے یوٹی میں وارِد ہونے والے تمام مسافروں کی آمد سکریننگ نمونے لینے اور قرنطین مراکز کی طرف لے جانے کے لئے معقول ٹرانسپورٹ اِنتظامات کئے ہیں اور اِس دوران مرکزی شہری ہوا بازی اور صحت و خاندانی بہب

تازہ ترین