۔16ویں ہفتے بھی نماز جمعہ کے اجتماعات منعقدنہ ہو سکے

سرینگر // پا ر کیں، باغا ت اور بازار کھولنے کے باوجود جمعہ کو آثارشریف درگا ہ حضر ت بل اورجامع مسجد سر ینگر سمیت خانقاہوں ، زیا ر ت گاہوں و دیگر بڑ ی مساجد میں16ویں ہفتے بھی نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں ہو سکے۔کووڈ19 کے مثبت کیسوں میں بڑھتے اضافے ور اموات سے جہاں لوگ دہشت زدہ ہیں وہیں23مارچ سے ملک گیر لاک ڈائون کے بعد وادی بھر کی مساجد میں باجماعت نمازوں پر روک لگادی گئی ہے،اور اس ضمن میں وادی کے علماء نے اتفاق رائے سے جموں کشمیر انتظامیہ کے اس فیصلے کی توثیق کی، جس میں کورونا وائرس کی زنجیر توڑنے کیلئے ایسا کرنا لازمی ہے اگر چہ دیہی علاقوں میں لوگ مساجد کا رخ کرر ہے ہیںتاہم سرینگر میں کل بھی بیشتر مساجد میں نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہ ہوسکے۔ جمعہ کو16ویں ہفتے بھی درگا ہ شریف حضر ت بل,جامع مسجد سر ینگر اورخانقاہوں ، امام باڑوں اور دیگر مساجد میں نماز جمعہ کے اجتماعات منعقد نہیں

سرینگر سرکیولر روڈ پروجیکٹ

سرینگر//صوبائی کمشنر کشمیر پی کے پولے نے کل سرینگر سرکیولر روڈ پروجیکٹ کی1 25ویں اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے پروجیکٹ کے منصوبے ،اراضی کے حصول کا جائزہ لیا ۔میٹنگ میں اس پروجیکٹ کی زد میں آنے والے رہائشی مکانوں اور تجارتی عمارتوں کے مالکان کی باز آباد کاری اور انہیں معاوضہ فراہم کرنے پر تبادلہ خیال ہوا ۔صوبائی کمشنر نے  باز آبادکاری عمل میں سرعت لانے اور التوامیں پڑے معاملات کو فوری طور نمٹانے کے لئے متعلقہ آفیسران پر زوردیا ۔میٹنگ میں بتایا گیا کہ نقاش پورہ ،خانیار ،شاہ محلہ نواب بازار اور سیمپورہ میں منصوبے پر آرہی رکاوٹیں کودور کرنے کیلئے متعلقین کو اعتماد میں لیکر ایک جامع پروگرام بنایا جائے۔اس موقعہ پر انہوں نے سرکیولر روڈ پروجیکٹ کے ایس ای کو ہدایت دی کہ متعلقین کے ساتھ معاملات کو آپس میں نمٹایا جائے ۔انہوں نے یہ ہدایت بھی دی کہ جہاں منصوبے میں رکاوٹیں پیدا ہورہ

مشیربصیر خان کانشاط باغ کا دورہ ،رہنما خطوط پر سختی عمل کی ہدایت

سرینگر//لفٹینٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے کل پبلک پارکوں میں کووڈ 19 رہنما خطوط کی سختی سے عمل آوری یقینی بنانے کی ہدایت دی ۔ انہوں نے اس کا اظہار نشاط باغ کے معائینے کے دوران کیا ۔ اُن کے ہمراہ محکمہ باغبانی کے کمشنر سیکرٹری اور دیگر متعلقہ افسران تھے ۔ جموں کشمیر انتظامیہ نے بُدھوار کو پارکیں اور باغات عام لوگوں کیلئے کھول دی تھیں ۔ نشاط باغ کے دورے کے دوران مشیر خان نے لوگوں کو ان مقامات کے اندر اور باہر تمام کووڈ 19 پروٹوکول پر عمل پیرا رہ کر ماسک پہننے ، ہاتھوں پر سینی ٹائیزر استعمال کرنے اور سماجی دوری بنائے رکھنے کیلئے کہا ۔ انہوں نے کہا کہ احتیاط اہم ہے اور احتیاطی اقدامات کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف حکام قانونی کاروائی عمل میں لائیں گے ۔ انہوں نے افسروں کو باغات میں صحت سے متعلق رہنما خطوط پر سختی سے عمل پیرا رہنے کی ہدایت دی ۔  

ہیلتھ ایڈوائزری نظر انداز

سرینگر//شہر سرینگر اوروادی کے دیگر علاقوں میں پبلک ٹرانسپورٹ کی سرگرمیوں کو اگرچہ بحال کردیا گیا تاہم ٹرانسپورٹروں کی جانب سے ہیلتھ ایڈوائزری کو بالائے طاق رکھا جارہا ہے جس کے نتیجے میں کوروناوائرس تیزی کے ساتھ پھیل جانے کا امکان بڑھ گیا ہے ۔ وادی کشمیر میں ایک طرف جہاں کووڈ19نے اپنا جال پوری طرح بچھادیا ہے اور کورونامعاملات میں تیزی کے ساتھ اضافہ کے ساتھ ساتھ اموات بھی بڑھ رہی ہے ۔ اس بیچ سرکار کی جانب سے پبلک ٹرانسپورٹ کی سرگرمیوں کو بھی کئی شراط پر بحال کیا گیا ہے جن میں مسافر گاڑیوں، سومو اور دیگر گاڑیوں میں سماجی دوری برقرارکھنے کے ساتھ ساتھ مسافروں کیلئے ماسک کا استعمال بھی لازمی بنایا گیا ہے تاہم ٹرانسپورٹروں کی جانب سے محکمہ ہیلتھ کی ایڈوائزری کو بالائے طاق رکھا جارہا ہے۔ شہر میں کئی روٹوں پر اگرچہ سومو سروس جزوی طور بحال ہوئی ہے تاہم گاڑیوں میں مسافروں کو پرانے طریقے سے ہی سوا

کرسو راجباغ بنڈ پرآوارہ کتوں سے آبادی خوفزدہ

سرینگر//کرسو راجباغ بنڈ اور اس کے گرد و نواح کے علاقوں میں آوارہ کتوں کی ہڑبونگ سے لوگ پریشان ہیں ۔مقامی آبادی کا کہنا ہے کہ کرسو راجباغ بنڈ اور اس کے گرد و نواح میں آوارہ کتوں نے لوگوں کا جینا دوبھر کردیا ہے جس کی وجہ سے نہ صرف راہ گیروں  کا قافیہ حیات تنگ ہوا ہے بلکہ آوراہ کتوں کے حملوں کا ڈر ہونے کی وجہ سے بچے گھروں سے باہر نہیں نکل پاتے ہیں ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ ایس ایم سی لوگوں کو کتوں سے نجات دلانے میںناکام رہا ہے۔انہوںنے بتایا کہ علاقہ میں آوارہ کتے جھنڈ کی صورت میں موجود رہتے ہیں جس کی وجہ سے کرسو بنڈ پر کوئی بھی شخص اکیلے چلنے کی جرات ہی نہیں کرسکتا۔انہوں نے کہا کہ بچے گھروں سے باہر نکلتے ہی انتہائی خوف زدہ ہوجاتے ہیںکیونکہ ہر بار انہیںکتوں کے حملوں کا خطرہ رہتا ہے۔لوگوںنے مطالبہ کیا ہے کہ انسانوں کو کتوں سے نجات دلانے کیلئے ٹھوس بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ ع

۔1898میں قائم سری پرتاپ لائبریری

 سرینگر// لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے جمعہ کوایس پی ایس لائبریری سرینگر کا دورہ کیا تاکہ قارئین کو دستیاب سہولیات کے بارے میں آگاہی حاصل کی جا سکے ۔مشیرنے لائبریری احاطے میں ریڈنگ روم ، سینئر سٹیزنز سیکشن کے علاوہ بچوں کی گیلری کا مشاہدہ کیا۔انہوں نے متعلقہ حکام پر زور دیا کہ کہ وہ طلباء اور قارئین کیلئے درکار کتابوں اور دیگرمواد کی دستیابی کو یقینی بنائیں۔لائبریری کے اپنے دورے کے دوران مشیر کا کہنا تھا کہ یہ اسکالروں اور محققین کے لئے ایک بہت بڑا اثاثہ اور انکیوبیشن سینٹر ہے۔انہوں نے زور دے کر کہا کہ اس کے مناسب کام اور دیکھ بھال کے لئے ہر ممکن کوشش کی جانی چاہئے۔انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ لائبریری کے مناسب کام کے لئے انجینئرنگ کا کوئی بھی کام جلد سے جلد مکمل کیا جائے۔ایس پی ایس لائبریری ، جو سن 1898 میں قائم ہوئی ، انگریزی ، اردو ، عربی ، فارسی ، سنسکرت ، ک

تازہ ترین