تازہ ترین

بیروزگاری کابحران اورنوجوان نسل

  جموںوکشمیر میں بے روزگاری کابحران سنگین ترہوتا جارہاہے ۔بیروزگاروںکی فوج میں مسلسل اضافہ ہورہاہے۔جبکہ دوسری جانب ستم ظریفی یہ ہے کہ ہمارانوجوان سرکاری سیکٹرکے علاوہ دائیںبائیںکہیںدیکھنے کو تیارہی نہیں ہے ۔معاشی سرگرمیوں کا کوئی ایک شعبہ اتنا بڑا نہیں ہو سکتا جوہمارے تمام نوجوانوں کو ایڈجسٹ کر سکے۔ سب سے بڑا روزگار فراہم کرنے والی حکومت ہوتی ہے تاہم وہ بھی ایک حد سے زیادہ لوگوں کو روزگار نہیں دے سکتی ہے۔اب حالات بدل رہے ہیں۔ حکومت کے محکموں میں بھی روزگارکے مواقع بتدریج سکڑتے چلے جارہے ہیں۔ کاروبار کی معمول کی شکلوں میںبھی مقابلہ زیادہ سے زیادہ سخت ہوتا جا رہا ہے۔نئے آنے والوں کیلئے پیسے اور مارکیٹ کے مسائل کا سامنا کرنا آسان نہیں ہے۔ اس سب کا خالص اثر یہ ہے کہ اچھی زندگی گزارنے کے مواقع کم سے کم ہوتے جا رہے ہیںاور یہ ایک بہت بڑا چیلنج ہے جس کا ہم سامنا کر رہے ہیں۔ روزگار کے من