کچھ دور تو نا لے جائیں گے

ڈپلومہ ا نجینئرنگ طلباء کا مستقبل مخدوش کیوں؟  جموں وکشمیر میں حکومت کی جانب سے 1958 میں گورنمنٹ پولی ٹیکنیکل کالج سرینگر کا قیام عمل میں لایاجس کے بعد 2012 تعلیمی سیشن میں سبھی اضلاع میں گورنمنٹ پولی ٹیکنیکل کالجوں کا قیام عمل میں لایا گیااور ہر سال ان اداروں سے ہزاروں طلباء فارغ تحصیل ہو رہے ہیں لیکن آگے کی تعلیم حاصل کرنے کیلئے ان کے پاس کوئی راستہ موجود نہ ہونے کے سبب ایسے طلبہ سخت ذہنی پریشانیوں میں مبتلا ہوئے ہیں کیونکہ حکومت کی جانب سے ریاست بھر کے جامعات میں لیٹرل انٹری انجینئرنگ پروگرام کی نشستوں میں کوئی خاطر خواہ اضافہ نہیں کیا گیا۔ اگرچہ یہ معاملہ حکومتی اداروں میں بہت بار اٹھایا تو گیا لیکن حکومت نے اس حساس مسلے کو نظرانداز کیا۔ ادھر آل انڈیا کونسل برائے تکنیکی تعلیم نئی دہلی کے عہدیداران کا کہناہے کہ لیٹرل انٹری انجینئرنگ سکیم کے لئے پہلے ہی کچھ اصول واضح کر رک

تازہ ترین