تازہ ترین

عوام کو درپیش مسائل سے آگاہی حاصل کی

جموں//لیفٹنٹ گورنر گریش چندر مرمو نے بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ پنچائتی راج اداروں کے نمائندوں اور درجہ فہرست ذاتوں قبائل اور پسماندہ طبقوں سے تعلق رکھنے والے وفود کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے انہیں درپیش مسائل سے آگاہی حاصل کی ۔ صوبہ کشمیر کے بی ڈی سی چئیرپرسنز اور سرپنچوں کے ایک وفد نے غلام حسن پنجو کی سربراہی میں لفٹینٹ گورنر کو اُن کے حقوق و اختیارات، سرکاری محکموں کے ساتھ تال میل، اُن کیلئے حفاظتی انتظامات ، سرکاری رہایش ، آبپاشی نہروں کی صفائی ، مستحقین کو پی ایم اے وائی کے دائرے میں لانے ، سرحدی بنکروں کی تعمیر وغیرہ سے متعلق مسائل سے آگاہ کیا ۔ وفد نے یو ٹی انتظامیہ کی جانب سے کووڈ 19 کے سبب پیدا شدہ صورتحال سے بہتر طور نمٹنے کو سراہا ۔ لفٹینٹ گورنر نے پنچائتی راج اداروں کے نمائندگان کو اُن کے حقوق اور اختیارات کے تحفظ کیلئے حکومت کی جانب سے بھر پور مدد کا یقین دلایا اور انہیں

عدالت عظمیٰ میں پی ایس اے چلنج

جموں//نیشنل پینتھرز پارٹی کے سرپرست اعلیٰ و سینئر وکیل پروفیسر بھیم سنگھ نے سپریم کورٹ سے لاک ڈاون کے پیش نظر کام بند ہونے کی وجہ سے مارچ 2020سے عدا لت عظمیٰ میں دائر جموں وکشمیر میں پبلک سیفٹی ایکٹ کو چیلنج کرنے والی عرضی پر جلد سماعت کی درخواست کی ہے۔سپریم کورٹ کے سینئر وکیل پروفیسر بھیم سنگھ کی طرف سے دائر عرضی میں جموں وکشمیر میں پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) کو چیلنج کرتے اسے غیرآئینی، نامناسب اور ہندستانی آئین میں دیئے گئے بنیادی حقوق کے خلا ف بتایا ہے۔ انہوں نے عرضی میں کہا کہ بغیر کسی وجہ، ترک یا آئینی مینڈیٹ کے جموں وکشمیر کا ریاست کا ختم کرکے صدر جمہوریہ کے ماتحت لیفٹننٹ گورنر کی سربراہی والی جموں وکشمیر انتظامیہ پی ایس اے کا استعمال کررہی ہے۔ جموں وکشمیر نیشنل پنتھرس پارٹی کے سرپرست اعلی کے علاوہ تین مرتبہ جموں وکشمیر میں ایم ایل اے رہ چکے پروفیسر بھیم سنگھ نے جموں وکشمیر میں

جموں کے ملازمین کا دربار کی منتقلی کیخلاف احتجاج

جموں //جموں سے تعلق رکھنے والے سول سیکریٹریٹ ملازمین نے دربار کی سرینگر منتقلی کے خلاف احتجاج کیا اور حکومت سے اپیل کی کہ کورونا وائرس کے خطرات کو دیکھتے ہوئے انہیں یہیں سے کام کرنے دیاجائے ۔آئندہ کچھ روز میں جموں سے سرینگر دربار منتقلی کے امکانات کے پیش نظر مختلف محکمہ جات کے جموں نشین ملازمین جمع ہوئے اور انہوں نے احتجاج کیا۔ان کاکہناتھاکہ انہوں نے پہلے ہی اس سلسلے میں لیفٹنٹ گورنر سے اپیل کی ہے کہ انہیں کورونا کی وجہ سے یہیں پر رہنے کی اجازت دی جائے اورحکومت کو ان کو’جو جہا ں ہے وہیں سے‘کی بنیاد پر کام کرنے دیناچاہئے جب تک کہ صورتحال میں بہتری نہ ہوجائے ۔سیول سیکریٹریٹ نان گزیٹیڈ ایمپلائز یونین کے نائب صدر سنجیو شرما نے بتایاکہ انہوں نے تحریری طور پر لیفٹنٹ گورنر سے جموں کے ملازمین کو فی الحال سرینگر نہ منتقل کرنے کی گزارش کی ہے ۔انہوںنے کہاکہ وہ دربار کے خلاف نہیں لیکن

۔327 کروڑ روپے کے پروجیکٹوں پر دوبارہ کام شروع

 جموں //اقتصادی و ترقیاتی عمل میں سرعت لانے کیلئے( جس میںکووڈ وباء کے سبب رکاوٹ پیش آئی تھیں)اکنامک رکنسٹرکشن ایجنسی اور جہلم توی ریکوری پروجیکٹ نے جموں کشمیر میں کروڑوں روپے کے پروجیکٹوں پر دوبارہ کام شروع کیا ہے۔ ترقیاتی سرگرمیاں 7 اہم سڑک پروجیکٹوں کی تعمیر و تجدید کے کام سے دوبارہ شروع کی گئی ہیںجس کے تحت 86 کلو میٹر سڑک مسافت ، جموں صوبے میں تین نئے پلوں کی تعمیر اور صوبہ کشمیر میں 107 کروڑ روپے کے پروجیکٹوں پر کام شروع کیا گیا ہے ۔ واضح رہے جہلم توی فلڈ ریکوری پروجیکٹ کیلئے عالمی بنک مالی معاونت فراہم کر رہا ہے ۔ ای آر اے جے پی ایف آر پی کے سی ای او ڈاکٹر سید عابد رشید شاہ کے مطابق یو ٹی میں ترقیاتی اور اقتصادی سرگرمیوں کو دوبارہ شروع کرنے کا مقصد کووڈ صورتحال کے پیش نظر مقامی لوگوں کیلئے روز گار کے ذرایع فراہم کرنا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جے ٹی ایف آر پی یو ٹی میں ترقیاتی