تازہ ترین

بھارتی فضائیہ کی کرگل کوریئر سروس ،81 مسافر گھر پہنچے

جموں //بھارتی فضائیہ (آئی اے ایف) نے سوموار کوجموں وکشمیر اور لداخ کے درمیان درماندہ 81مسافروں کو اپنے اپنے مقامات تک پہنچایا۔گذشتہ ایک ہفتے کے دوران 286مسافروں کو اپنی اپنی منزلوں تک پہنچایا گیا ۔کرگل کورئیر سروس کے چیف کوآرڈینیٹر عامر علی نے بتایا کہ 53 مسافروں کو گرگل سے جموں جبکہ 28 افراد کو جموں سے کرگل لے جایا گیا‘‘۔انہوں نے کہا کہ 12جنوری سے برف باری کے نتیجے میں درماندہ ہوئے 286مسافروں کو جموں وکشمیر اور لداخ کے مابین ہندوستانی فضائیہ کے ہوائی جہازوں کے ذریعہ سروس فراہم کی گئی ۔معلوم رہے کہ اس وقت سرینگر اور کرگل کے درمیان زمینی رابطہ منقطع ہے ۔انہوں نے بتایا کہ خراب موسم کی وجہ سے اس کی خدمت کو اس سال کے اوائل میں منسوخ کرنا پڑا تھا بعد میں لداخ انتظامیہ نے وزارت دفاع سے سی -17 ، سی -130 اور اے این 32 طیاروں کو شروع کرنے کی درخواست کی تھی۔  

ڈی ڈی سی انتخابات کے بعد ڈوڈہ میں بی جے پی کی پہلی ریلی | اگلی حکومت بھاجپا کی ہوگی

ڈوڈہ //ضلع ترقیاتی کونسل انتخابات میں بھاری اکثریت حاصل کرنے کے بعد بھاجپا نے پہلی بار ڈوڈہ میں عوامی جلسہ کا انعقاد کیا گیا جس میں پارٹی کے صدر رویندر رینہ، جنرل سیکرٹری اشوک کول سابق وزیر شکتی راج پریہار، سابق ایم ایل اے دلیپ سنگھ پریہار سمیت نومنتخب ڈی ڈی سی ممبران و بھاری تعداد میں پارٹی کارکنوں نے شرکت کی۔اس دوران بھاجپا یوتھ ونگ کی جانب سے ایک موٹر سائیکل ریلی نکالی جو عسر سے شروع ہوئی اور ڈوڈہ میں اختتام پذیر ہوئی۔ اس موقع پر بولتے ہوئے بھاجپا صدر رویندر رینہ نے نومنتخب ڈی ڈی سی ممبران کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے عوام کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ لوگوں نے ایک بار پھر سے بی جے پی پر اعتماد کرکے بھاری اکثریت میں اپنے ووٹ کا استعمال کیا۔انہوں نے کہا کہ عنقریب بی جے پی ضلع چیئرمین کا اعلان کرے گی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کانگریس و نیشنل کانفرنس نے دہائیوں تک خطہ چناب کی

عالمی تحریک اردو نے رونق جمال کو مینار اْردو خطاب دیا

جموں//ہندوستان میں ادبِ اطفال کے ایک بڑے ادیب اور بچکانچہ صنف کے امام رونق جمال نے کہا ہے کہ نا مساعد حالات سے کشمیر کے بچوں پر اثرات کے حوالے سے وہ کتاب مرتب کرنے کے بارے میں سوچ رہے ہیں۔ انھوں نے کہا ہے کہ بچوں کے ادبی پروگراموں میں اکثر بچوں کو نظر انداز کیا جاتا ہے جس سے بچوں پر برے اثرات پڑتے ہیں۔ عالمی تحریک اردو کے ہفت وار لایو فیس بک پروگرام میں کشمیر کی ایک بچی انوشکا شوکت کے سوال کے اس سوال کے جواب میں کہ موجودہ نامساعد حالات سے کشمیر کے بچوں پر پڑے اثرات کے حوالے سے اردو ادب میں تخلیقی کام کیوں نہیں ہورہا ہے اور کیا آپ اس پر کوشش کریں گے،رونق جمال نے بتایا کہ  وہ کشمیر کے بچوں پر نا مساعد حالات کے اثرات کے حوالے سے آنے والے وقت میں ایک کتاب ضرور مرتب کریں گے۔  اس کے علاوہ بھلیس ڈوڈہ کے ایک بچے زیان ملک کی طرف سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں رونق جمال نے بتایا کہ اک