تازہ ترین

برفباری کے 50فیصد سے کم امکانات | شبانہ درجہ حرارت میں معمولی بہتری،سردی برقرار

 سرینگر // وادی میں مطلع ابر آلود رہنے سے سردی کی شدت میں ایک بار پھر قدرے کمی واقع ہوئی ہے ۔محکمہ موسمیات کے مطابق 4 اور 5 دسمبر کو درمیانہ درجے کی برفباری اور بارشیں ہو سکتی ہیں، جس کے 50فیصد سے بھی کم امکانات ہیں۔محکمہ کے ترجمان نے کہا کہ موسمیاتی سسٹم اس بات کی نشاندہی کررہا ہے کہ 4دسمبر کی سہ پہر سے موسم تبدیل ہونا شروع ہوجائیگا اور5دسمبر کو مطلع مکمل طور پر ابر آلود رہے گا جس کے نتیجے میں درجہ حرارت صفر پر آسکتا ہے اور پہاڑی علاقوں میں درمیانہ یا ہلکی برفباری ہونے کے امکانات ہیں جبکہ میدانی علاقوں میں بارشیں ہونگی۔ ترجمان نے کہا کہ بھاری برفباری کے امکانات بہت کم ہیں لیکن چار روز بعد حتمی طور پر موسم کے بارے میں پیشگوئی کی جائیگی۔ادھر ترجمان کا کہنا تھا کہ وادی میں اتوار کو مطلع ابر آلود رہنے سے سردی کی شدت میں قدرے کمی واقع ہوئی اور آنے والے دنوں میں اس میں مزید اضافہ

پلوامہ ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن: روہت کنسل | عوامی خدمات کو یقینی بنانے کیلئے افسران کوہدایت

پلوامہ// بجلی اور اطلاعات محکموں کے پرنسپل سکریٹری روہت کنسل نے اتوار کو پلوامہ ضلع میں مجموعی ترقیاتی منظر نامے کا جائزہ لیا ۔ انہوں نے مختلف محکموں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے علاوہ ضلع انتظامیہ کی طرف سے موسم سرما کی تیاریوں کا جائزہ لیا۔ کنسل سیکریٹری انچارج ضلع پلوامہ بھی ہیں۔انہوںنے واضح کیا کہ حکومت مشکلات کو دور کرنے اور سماجی تحفظ اور فلاحی اسکیموں کو تمام اہل شہریوں تک آسانی سے قابلِ رسائی بنانے کیلئے مسلسل کوششیں کر رہی ہے۔ انہوں نے عہدیداروں پر زور دیا کہ وہ تمام اسکیموں کی صد فیصد سیچوریشن کو یقینی بنانے اور عوامی شکایات کے فوری ازالے کیلئے باقاعدہ عوامی رسائی کی سرگرمیاں شروع کریں۔ڈسٹرکٹ کیپیکس پلان اور ضلع میں دیگر اہم بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں کا جائزہ لیتے ہوئے پرنسپل سکریٹری نے نوٹ کیا کہ جن ترقیاتی کاموں کے لیے بجٹ رکھا گیا تھا ان کا ٹینڈر کیا گیا تھا اور ان میں سے

چاڈورہ میں بجلی کی آنکھ مچولی سے لوگ پریشان

 سرینگر// چاڈورہ میں بجلی کی آنکھ مچولی کے نتیجے میں لوگوں کو سخت دقتوں کا سامنا ہے ۔لوگوں نے متعلقہ محکمہ کے خلاف سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں بجلی کے آنے اور جانے کا کوئی پتہ نہیں چل رہا ہے۔مقامی لوگوں نے الزام عائد کیا کہ کٹوتی شیڈول پر بھی کوئی عملدرآمد نہیں ہورہا ہے جس کے نتیجے میں علاقے میں شام ہوتے ہی اندھیرا چھاجاتا ہے۔لوگوں نے متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ حکام سے اس سلسلے میں مداخلت کی اپیل کی ہے۔  

محکمہ جنگلات کی کارروائیاں | اننت ناگ اور بارہمولہ میں182فٹ عمارتی لکڑی اور دو گاڑیاں ضبط

بارہمولہ+اننت ناگ//شمالی ضلع بارہمولہ کے شیری ناروا وعلاقے میں محکمہ جنگلات اور پولیس نے عمارتی لکڑی اسمگل کرنے کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے133فٹ لکڑی اور دو گاڑیاں ضبط کر لیں ۔ ناروا وبلاک ہیون کے کمپارٹمنٹ نمبر 77ایک دیودار کو ٹرک میں اسمگل کرنے کی کوشش کی جا رہی تھی تاہم ڈی ایف او بارہمولہ پرویز احمد وانی کی قیادت میں رینج افسر سمیت محکمہ کے دیگر ملازمین اور پولیس کی ایک ٹیم نے خصوصی کارروائی عمل میںلاتے ہوئے مین مارکیٹ ہیون میں ٹرک زیر نمبر JK02U-3985اور ایک گاڑی زیر نمبر JK05H-1768سے تلاشی لی ۔تلاشی کارروائی کے دوران 18شہتیربر آمد ہوئے ۔ جنگلات کی ٹیم نے دونوں گاڑیوں کو موقع پر ہی ضبط کرکے لکڑی بھی اپنی تحویل میںلی تاہم اسی دوران ملزمان فرار ہونے میںکامیاب ہو گئے ۔ ڈی ایف او بارہمولہ نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ٹرک سے 133فٹ لکڑی ضبط کر لی گئی ۔انہوں نے کہا کہ شیری تھانہ م

خاتون ہیلتھ ورکر کی شاندار کارکردگی | 8مہنیو ںمیں 27834کورونا مخالف ٹیکہ لگائے

کپوارہ//بلاک میڈیکل لنگیٹ میں تعینات ایک خاتون ہیلتھ ورکر نے 8مہینو ں کے دوران کورنا وائرس کے خلاف 27834ٹیکہ لگا کر ایک شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ اشپورہ قاضی آباد سے تعلق رکھنے والی فہمیدہ احسن جو محکمہ صحت میں 12سال قبل بحیثیت ہیلتھ ورکر تعینات ہوئی اور اس وقت بٹہ گنڈ لنگیٹ کے سب سنٹر میں اپنے فرائض انجام دے رہی ہے ۔فہمیدہ احسن نے گذشتہ دو برسوں کے دوران   کورونا وائرس مخالف ٹیکہ لگانے میں انتھک محنت کی ۔محکمہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق فہمیدہ نے رواں سال دیگر ملازمین کے مقابلہ میں سب سے زیادہ ٹیکہ کاری عمل میں لائی ۔انہوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ کوروناوائرس مخالف ٹیکہ کاری کا عمل جب شروع کیا گیا تو لنگیٹ  میں لوگو ں نے ان کی ٹیم پر حملہ کیا اور انجکشن لگانے سے انکار کیا ۔انہوں نے کہا ’’اس صورتحال کے باوجود ہم نے اپنا کام جاری رکھا اور لنگیٹ علا

غیر قانونی کان کنی | چاڈورہ میں چار افراد گرفتار، 3ٹپراور جے سی بی ضبط

بڈگام//چاڈورہ بڈگام میں غیر قانونی کان کنی کے الزام میں پولیس نے4افراد کی گرفتاری عمل میں لائی اور ایک جے سی بی اور تین ٹپر ضبط کئے۔گوہر پورہ چاڈورہ میں سرکاری اراضی سے مٹی کی غیرقانونی طریقے سے خرید و فروخت کرنے کے الزام میں4افراد کی گرفتاری عمل میں لائی اور3ٹپر اور ایک جے سی بی کو ضبط کرلیا۔گرفتار شدہ افراد کی شناخت محمد اسحاق بٹ ساکن کزویرہ، محمد شفیع راتھر ساکن ڈونیواری ، معراج دین ڈار اور اشفاق احمد گورو ساکن ملورہ خواجہ بازار سرینگرکے طور پر ہوئی ہے۔چاروں افراد کے خلاف چاڈورہ تھانہ میں کیس زیر ایف آئی آرنمبر 198/2021درج کرکے مزید تحقیقات شروع کردی گئی۔  

کنگن میں ٹپر پاروکنال میں لڑھک گیا،ڈرائیورہلاک

کنگن//کنگن میں ایک ٹپر کے پاور کنال میں گرنے سے ڈرائیور کی موت واقع ہوئی۔سمبل بالا گنڈ کنگن میں اس وقت کہرام مچ گیا جب ایک ٹپر زیر نمبر   JK01AF-5585.   سمبل پاور کنال کے نزدیک زیر تعمیر پی ایم جی ایس وائی سڑک سے لڑھک کر پاور کنال میں جاگرا، جس کے نتیجے میں ٹپر ڈرائیور 35 سال کا جاوید احمد بابا ولد محمد مقبول بابا ساکن فرا ہاکنار موقع پر ہلاک ہوگیا۔ اطلاع ملتے ہی مقامی لوگ اور گنڈ پولیس جائے حادثے پر پہنچ گئے اور ڈرائیور کی لاش کو پاور کنال سے نکالا ۔ جب مذکورہ ڈرائیور کی لاش کو اس کے آبائی گائوں پہنچایا گیا ،تو وہاں کہرام مچ گیا۔ گنڈ پولیس نے حادثے سے متعلق کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی۔  

کشن گنگا پن بجلی گھر کاماخذ گریز ہی بجلی سے محروم | شام کو ڈیزل جنریٹر چلاکر4گھنٹے برقی رومہیا کرناباعث حیرت

گریز //کشن گنگاپن بجلی گھر کے ماخذگریزکوڈیزل جنریٹر سے روزانہ شام چار گھنٹے بجلی فراہم کی جاتی ہے جو ارباب اقتدار کیلئے باعث شرم ہوناچاہیے۔چالیس ہزار نفوس پر مشتمل سب ڈویژن گریز سرحدی علاقہ ہونے کے ساتھ ساتھ خوبصورتی اورقدرتی وسائل سے مالا مال ہے لیکن آج کے جدید دور میں یہاں بکتور،بڈون،دودھگئی،کامری،فیلیلہ باہ،استوراور دیگر علاقوں کوڈیزل جنریٹر سے شام کے اوقات بجلی فراہم کی جاتی ہے۔  بڈون صرف سات کلو میٹر کشن گنگا پاور ہاس سے دور ہونے کے باوجود بجلی سپلائی سے محروم ہے۔گریز کے ہر علاقے میں ڈیزل جنریٹر نصب کئے گئے ہیں جن کو شام چھ بجے شروع کیا جاتا ہے اور دس بجے بند کردیا جاتا ہے ۔24 گھنٹوں کے دوران صرف چار گھنٹوں کی بجلی سپلائی فراہم کی جاتی ہے.جبکہ وافر مقدار میں پانی میسر ہونے کے باوجود بھی آج تک منی ہائیڈل الیکٹرک پروجیکٹ نہیں بنایا گیا جبکہ اچھورہ میں موجود منی ہائیڈل پروجیکٹ

بہنی پورہ راجوار کاہائراسکینڈری اسکول سرکار کی نظروں سے اوجھل | جگہ اور مدرسین کی کمی سے طلاب کومشکلات،کئی برس سے پرنسپل کی کرسی خالی

راجواڑ (ہندوارہ )// بہنی پورہ راجوارہندوارہ کا ہائر سکینڈری سکول سرکار کی نظرو ں سے اوجھل ہے اور سکول میں جگہ کی عدم دستیابی کی وجہ سے زیر تعلیم طلبہ کو سخت مشکلات کا سامنا ہے ۔سب ضلع ہندوارہ سے 15کلو میٹر دور بہنی پورہ میں قائم ہائی سکول کا درجہ 2008میں بڑھا کر اسے ہائر سکینڈری سکول کابنایا گیا جو علاقہ کے لوگو ں کی دیرینہ مانگ تھی ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ 11سال قبل جب مذکورہ سکول کا درجہ بڑھایا گیا تو لوگو ں نے مسرت کا اظہار کیا ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ 11سال گزر جانے کے  باجود بھی سکول کے لئے مکمل عمارت تعمیر نہیں کی گئی بلکہ 3کمرو ں پر مشتمل اس سکول میں 5سو طلبہ زیر تعلیم ہیں جس کی وجہ سے طلبہ کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ سکول گزشتہ کئی برسو ںسے بغیر پرنسپل کے کام کررہا ہے ۔سکول ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ہائر سکینڈری سکول بہنی پورہ میں ن

مزید خبریں

درخشاں اَندرابی کی لیفٹیننٹ گورنر سے ملاقات | عوامی اہمیت کے مسائل پر تبادلہ خیال جموں//چیئر پرسن مرکزی وزارت ِاقلیتی امور کی وقف ترقیاتی کمیٹی اور بی جے پی کے قومی ایگزیکٹیو ممبر ڈاکٹر درخشان اَندرابی نے راج بھون میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا سے ملاقات کی۔ڈاکٹر اَندرابی نے نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع پید اکرنے ، امن واَمان کی صورتحال اور دیگر ترقیاتی اَمور سے متعلقہ عوامی اہمیت کے مختلف مسائل پر تبادلہ خیال کیا۔اُنہوں نے قبائلی آبادی تک پہنچنے کے لئے لیفٹیننٹ گورنر کی زیر قیادت اِنتظامیہ کا شکریہ اَدا کیا اور جموںوکشمیرکی پہاڑی کمیونٹی کو شیڈول ٹرائب قرار دینے کے معاملے کو مرکزی حکومت کے ساتھ اُٹھانے کی درخواست کی۔اُنہوں نے لیفٹیننٹ گورنر کو تاریخی شاردا پیٹھ کے قریب ایل او سی کے قریب ٹیٹوال میں آئندہ شاردا تیرتھ بیس کیمپ کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے ڈاکٹر اند

تازہ ترین