تازہ ترین

آج دوپہرسے موسم تبدیل ہوگا | میدانی علاقوں میں بارشیں، بالائی علاقوں میں ہلکی برفباری

سرینگر // محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے عین مطابق سنیچر اور اتوار کی درمیانی شب وادی میں ہلکی بارشوں کا سلسلہ شروع ہوا جو دن بھر وقفت وقفے سے متعدد علاقوں میں جاری رہا۔جبکہ سونہ مرگ، گلمرگ، پیر کی گلی اور کرناہ کی پہاڑیوں پر ہلکی برفباری بھی ہوئی۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ آج دوپہر سے موسم میں تبدلی آئے گی اور 22اکتوبر تک موسم خشک رہنے کا امکان ہے ۔ وادی میں سنیچر اور اتوار کی درمیانی رات سے ہی موسم خراب ہوا اور میدانی علاقوں میں بارشیں جبکہ پہاڑی علاقوں میں ہلکی برف باری شروع ہوئی ۔ پہاڑی علاقوں پہلگام،سونہ مرگ، گلمرگ ، کپوارہ، ستھن ٹاپ، پیر کی گلی ،پنجترنی ،سادھنا ٹاپ ، شمس بھری پہاڑوں ، زیڈ گلی ، راگنی کے ساتھ ساتھ دیگر اونیچے پہاڑوں پر ہلکی برف باری ہوئی اور ان علاقوں میں 3سے5انچ تک برف جمع ہوئی تھی ۔ پہاڑی علاقوں میں ہونے والی تازہ برف باری سے درجہ حرارت میں گراواٹ دیکھنے کو ملی

ہیڈر میدان گوٹلی باغ میں فلٹریشن پلانٹ6سال سے بے کار | ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی پانی کی عدم دستیابی سے پریشان

گاندربل//گوٹلی باغ میں 2015میں تعمیر شدہ ہیڈر میدان فلٹریشن پلانٹ 6برسوں سے غیر فعال ہونے کے سبب ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے شدید مشکلات کا سامنا کررہے ہیںجس پر مقامی آبادی سراپا احتجاج ہے۔ گوٹلی باغ کے بیچوں بیچ گاندربل پاور ہاس کے لئے پانی کی کنال گزرتی ہے جس پر بیشتر علاقوں کو پانی فراہمی کیلئے متعدد فلٹریشن پلانٹ تعمیر کے گئے ہیں۔ ہیڈر میدان کے مقام پر 2015میں فلٹریشن پلانٹ تعمیر کیا گیا تھا جس کا پانی وائل وڈر ،سیہ پورہ، ہیڈر میدان،چپر گنڈ سمیت دیگر علاقوں کو فراہم کیا جاتا تاہم زرِکثیر خرچ کرکے فلٹریشن پلانٹ تعمیر کیا گیا لیکن اب تک محکمہ جل شکتی نے نہ ہی اسے چلانے کے لئے آپریٹر تعینات کیا گیا اور نہ ہی کسی ملازم کو ہی تعینات کیا گیا جس کے نتیجے میںبرسوں گزرنے کے بعد فلٹریشن پلانٹ میں موجود واٹر پمپ اور مشینری زنگ آلودہ ہوچکی ہے۔6سال گزرن

نا روائو بارہمولہ کے بیشتر دیہات | بجلی کی آنکھ مچولی سے عوام اور تاجر پریشان

بارہمولہ //ضلع بارہمولہ کے علاقے نارواو میں برقی رو کی عدم دستیابی کے خلاف لوگ سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں۔ موسم سرماں سے قبل ہی علاقے کے بیشتر دیہات میں بجلی کی آنکھ مچولی کا سلسلہ شروع ہوا ہے جس کے نتیجے میں مقامی آبادی کے علاوہ تاجروں کوبھی سخت مشکلات کا سامنا کرناپڑرہاہے ۔نارواو کے شیری ،شالٹنگ ، زنڈفرن ،فتح گڈھ ،بدمولہ، زوگیارکے لوگوں کاکہنا ہے کہ اگرچہ محکمہ پی ڈی ڈی نے میٹروالے علاقوں کیلئے 21گھنٹوں کا شیڈول مرتب کیا ہے تاہم مذکورہ دیہات میں شیڈول کے مطابق بجلی فراہم نہیں کی جارہی ہے ۔ ایک مقامی شہری مشتاق احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یاکہ محکمہ نے صارفین کو یقین دلایا تھا کہ جن علاقوںمیں پی ڈی ڈی نے میٹر نصب کئے ہیں ان میں برقی رو منقطع نہیں کی جائے گی تاہم ان علاقوں کے رہنے والے صارفین نے شکایت کی ہے کہ انہیں بھی بجلی کی آنکھ کی مچولی ، کٹوتی اور بغیر کسی شیڈول کے برقی رو منقطع

مژھل کے متعدد علاقوں میںبنیادی خدمات کا فقدان | 7پنچائتی حلقے ہنوز برقی رو سے محروم

کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ کے حد متارکہ پر واقع مژھل میں متعدد علاقوں میں بنیادی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے لوگو ں کو مختلف مسائل کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔مژھل کے ڈپل علاقہ کے لوگ اس بات کو لیکر سراپا احتجاج ہیں کہ علاقہ میں بنیادی سہولیات کا سخت فقدان پایا جارہا ہے جس کی وجہ سے رہائش پذیرعوام کو سخت مشکلات درپیش ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ سرکار نے مژھل میں ایک سال قبل قائم رسیونگ اسٹیشن سے بجلی سپلائی بحال کی اور یہ دعویٰ کیا گیا کہ مژھل کو بجلی سپلائی فراہم کی گئی لیکن صورتحال کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ مژھل گائو ں اور دودھی کے بغیر باقی 7پنچائتی حلقہ ابھی بھی بجلی سپلائی سے محروم ہیں اور شام ہوتے ہی یہ علاقے گھپ اندھیرے میں ڈوب جاتے ہیں ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ دو سال قبل مژھل کے کئی دیہات میں بجلی کے کھمبے اور ترسیلی لائنو ں کو بچھایا گیا لیکن تا حال بھی یہ علاقے ب

داراکنجن اوڑی میںعوام پانی سے محروم

 بارہمولہ // سرحدی قصبہ اوڑی کا داراکنجن پسیرن علاقہ پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں جس کے نتیجے میں مقامی آبادی سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ مقامی لوگوں کاکہنا ہے کہ علاقے میں گزشتہ سال کے تیز بارشوں کے دوران پسیاں گر آنے سے پانی سپلائی کی پائیپیں ٹوٹ گئیں تھیں جس کے نتیجے میں علاقہ پینے کے صاف پانی سے محروم ہوگیا تھا لیکن آج تک نئی پائپیں نہیں بچھائی گئیں جس کے نتیجے میں مقامی آبادی کو سخت مشکلات درپیش ہیں ۔ عرفان احمد چک نامی ایک سماجی کارکن نے کشمیر عظمیٰ کوبتایاکہ متعلقہ محکمہ علاقے کو پینے کا صاف پانی دستیاب رکھنے میں ناکام دکھائی دے رہا ہے اور لوگ صاف پانی کی ایک ایک بوند کیلئے ترس رہے ہیں ۔ انہو ں نے کہا کہ اس کے علاوہ اگر چہ لوگوں نے کئی مرتبہ اس معاملے میں متعلقہ محکمہ کی نوٹس میں لایا تاہم کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔ لوگوں نے گورنر انتظامیہ اورمتعلقہ محکمہ کے ا

مزید خبریں

جموں کشمیرکومحفوظ بنانے میں ناکام ہونے کی حقیقت تسلیم کرنامشکل |کپل سبل نے آر ایس ایس رہنما موہن بھاگوت کو آڑے ہاتھوں لیا  سری نگر//کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے کہا ہے کہ مرکزی حکومت جموںوکشمیر کو محفوظ بنانے میں ناکام ہوگئی ہے۔ انہوںنے کہاکہ جموں کشمیر میں عسکریت پسندی میں اضافہ ہوگیا ہے۔ کے این ایس کے مطابق اتوار کو کپل سبل نے آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھاگوت کوتنقید کانشانہ بناتے ہوئے سرسنگھ چالک سے پوچھا کہ جموںوکشمیر میں کون سی تعمیر و ترقی ہوئی ہے اور مرکزی حکومت جموں کشمیر کو محفوظ بنانے میں ناکام ہوئی ہے۔ کپل سبل نے کشمیر میں جنگجویانہ سرگرمیوں کے بارے کہا، ’’ہم اُن 9لوگوں کو سلام کرتے ہیں جنہوںنے اپنی زندگیاں ہمارے لئے قربان کیں، ہم نے اپنے بیٹوں کوجنگجوئوں کے ہاتھوں کھویاہے، موہن بھاگوت جی کس ترقی کی بات کرتے ہیں؟، عسکریت پسندی اپنا سر نکال رہی ہے

تازہ ترین