اننت ناگ میں ہولناک آگ م 6رہائشی مکانات خاکستر

اننت ناگ//اننت ناگ قصبہ میں آگ کی ایک ہولناک واردات میں6رہائشی مکانات خاکستر ہوگئے۔پوش محلہ اننت ناگ میں پیر کی صبح ایک رہائشی مکان سے آگ نمودار ہوئی جس نے بعداذاں نزدیکی 5 رہائشی مکانوں کو اپنی لپیٹ میں لیا۔اس بیچ آگ بجھانے والے عملہ ،مقامی لوگ ،پولیس جائے موقعہ پر پہنچ گئے اور آگ بجھانے کے لئے کاروائی شروع کی ۔کئی گھنٹوں کی کوشش کے بعد آگ کو مزید پھیلنے سے روک دیا گیاتاہم اس واردات میں غلام احمد پالہ ،شوکت احمد خان ،محمد اقبال بٹ ،منظور احمد بٹ اور فیاض احمد بٹ کے 6رہائشی مکانات خاکستر ہوئے ۔محکمہ فائر سروس کے ایک آفیسر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ آگ بجھانے کی کارروائی میں محکمہ کے 7فائر ٹینڈر شامل ہوئے اور3گھنٹوں کی مشقت کے بعد آگ پر قابو پالیا گیا ۔پولیس نے معاملے کی نسبت کیس درج کرلیا ہے۔  

پینے کے صاف پانی کا ناجائز استعمال

گاندربل//صفاپورہ میں جل شکتی محکمہ اور پولیس کی مشترکہ کارروائی کے دوران درجنوں پانی کے پمپ ضبط کئے گئے۔کئی علاقوں میں پینے کے صاف پانی کی قلت واقع ہونے کے بعد متعلقہ محکمہ نے اپنی کارروائیاں تیز کردی ہیں۔ محکمہ کے ذمہ داروں کا کہنا ہے کہ اس کی سب سے بڑی وجہ یہ ہے کہ خودغرض افراد پینے کے صاف پانی کا ناجائز استعمال کرتے ہیں جس کے نتیجے میں باقی آبادی کومشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔محکمہ جل شکتی اور پولیس کی مشترکہ کارروائی کے دوران صفاپورہ کے شیخ محلہ اور وانی محلہ سے درجنوں پانی کے موٹر اور پائپوں کو ضبط کیا گیا۔اس سلسلے میں محکمہ کے اہلکاروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ پینے کا صاف پانی کھیت کھلیان،کچن گارڈناور گاڑیاں دھونے کے لئے استعمال کرنا سراسر غیر قانونی اور ناجائز ہے ۔انہوں نے کہا کہ دو روز میں 40 سے زائد پانی کے موٹر اور دیگر سامان ضبط کیا گیا اور یہ کارروائی آگے بھی جاری رے گ

ڈورو شاہ آباد میں چوکیدار ایسوسی ایشن کا احتجاج

اننت ناگ//اننت ناگ ضلع کے ڈورو شاہ آباد میں ایس ڈی ایم آفس کے سامنے جموں و کشمیر چوکیدار ایسوسی ایشن نے احتجاج کرتے ہوئے مشاہرہ بڑھانے کا مطالبہ کیا۔ ایسوسی ایشن کے صدر بشیر احمد شیخ نے کہا کہ وہ بہت کم مشاہرے کے عوض اپنا کام انجام دیتے ہیں ،اس کے علاوہ کورونا وائرس کے باعث ان پر مزید ذمہ داریاں عائد ہوئی ہیں جن کو وہ خوش اسلوبی سے انجام دے رہے ہیں ،تاہم مہنگائی کے اس دور میں قلیل مشاہرے پر گھر کے اخراجات کو پورا کرنا دشوار ہورہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ملک کی دیگر ریاستوں اور زیرانتظام علاقوںمیں چوکیداروں کو مشاہرے کے طور پر اچھی رقم دی جاتی ہے ،تاہم جموں کشمیر میں ماہانہ1500روپئے دئے جاتے ہیں  جو انتہائی قلیل ہے ۔اُنہوں نے لیفٹنٹ گورنر جی سی مرمو انتظامیہ سے مداخلت کی اپیل کی۔  

۔1994سے لیکر2015تک تعینات عارضی ملازمین | ملازمتوں کو مستقل کیا جائے،ایجیک (جی) کا مطالبہ

سرینگر// عارضی ملازمین کو مستقل کرنے کے حق میں ملازمین انجمنوں اور پلیٹ فارموں کی جانب سے مسلسل مطالبہ کیا جا رہا ہے کہ عرصہ دراز سے سرکاری محکموں میں کام کر رہے ڈیلی ویجروں اور کیجول ورکروں کو باقاعدہ بنایا جائے۔ سرینگر کے ایوان صحافت میں ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے ایک اور دھڑے نے سبکدوش اور عارضی ملازمین کے مسائل کا ازالہ کرنے کا مطالبہ کیا۔ ایجیک(جی) کے جنرل سیکریٹری  سید غلام رسول گیلانی نے سرکار پر زور دیا کہ1994سے لیکر2015تک کے تمام عارضی ملازمین کو مستقل کیا جائے اور ایس آر ائو520کو کالعدم قرار دیا جائے۔انہوں نے کہا کہ ان عارضی ملازمین میں ڈیلی ویجر،کیجول لیبر،مشروط ادائیگی و معاہدوں پر کام کرنے والے ملازمین کے علاوہ مختلف مرکزی و مقامی اسکیموں  کے تحت کام کرنے والے ملازمین کے علاوہ وہ لوگ بھی شامل ہیں،جنہوں نے سرکاری پروجیکٹوں کیلئے اپنی اراضی وقف کی ہے۔ غلام رسو

کپوارہ میں آندھی سے 6مکانوں کی چھتیں اُڑگئیں

کپوارہ// کپوارہ میں اتوار کی شام دیر گئے تیز آندھی اور طو فانی ہوائو ں نے تباہی مچا دی ۔معلوم ہو اہے کہ ضلع کے راجواڑ ،آہگام ،قلم آ باد ،ماور بالا ،لنگیٹ اور کھنہ بل علااقوں میں 6رہائشی مکانوں کے چھتو ں کو نقصان پہنچا جبکہ کھیت کھلیانو ں میں کھڑی فصلوں کے علاوہ میوہ با غات کو بھی شدید نقصان پہنچا ۔ضلع کے متعدد علاقوں میں بجلی کی سپلائی بھی رات بھر متا ثر ہوئی ۔ان علاقوں کے لوگو ں کا کہنا ہے کہ امسال اپریل کے اوئل سے ہی ضلع میں کئی بار شدید ژالہ باری ہوئی جس کے نتیجے میں ان کے میو ہ باغات کو پہلے ہی نقصان پہنچ چکا ہے جبکہ رہی سہی کسر اتوار کی تیز آندھی اور طو فانی ہوائوں نے پوری کر دی ۔لوگو ں کا کہنا ہے تیزی آندھی نے اس قدر تباہی مچا دی ہے کہ میو ہ درختوں سے پھل گر کر تباہ ہو گیا جبکہ اخروٹ کی فصل کو بھی تیزی آ ندھی اور طوفانی ہوائو ں سے نقصان پہنچا ۔  

کولگام میں دوشیزہ کیساتھ مبینہ زیادتی کیخلاف احتجاج

اننت ناگ //کولگام میں دوشیزہ کے ساتھ مبینہ جنسی زیادتی کے خلاف لوگوں نے زبردست احتجاج کیااور اس جرم میں ملوث افراد کوکڑی سزادینے کا مطالبہ کیا۔اس دوران محکمہ تعلیم نے تین اساتذہ کوتحقیقات مکمل ہونے تک معطل کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق کولگام میں دوشیزہ نے اُستاد پر جنسی ہراسانی کا الزام عائد کیا ہے ،جس کے بعد محکمہ تعلیم نے3اساتذہ کو تحقیقات مکمل ہونے تک معطل کیا ہے ۔چچی مولہ دمہال ہانجی پورہ کولگام کی رہنی والی20سالہ دوشیزہ(نام مخفی)نے پولیس اسٹیشن دمہال ہانجی پورہ میں تحریری شکایت درج کی کہ اُسے ہلال احمد ڈار جو کہ اُستاد ہے، نے اپنے دو دیگر ساتھیوں کی مدد سے اُس وقت اپنی ہوس کا شکار بنایا ،جب وہ کھیت میں کام کر رہی تھی ۔لڑکی کے مطابق ملزم نے بہیوش کر کے اُس کے ساتھ جنسی زیادتی کی ۔اس بیچ پولیس نے تعزیرات ہند کے دفعات366/376کے تحت کیس زیر نمبر109/2020 درج کیاہے۔ پولیس نے گھنائونی حرکت میں

مزید خبرں

نئی میڈیا پالیسی کو منسوخ کرنے کاسیاسی جماعتوں کا مطالبہ  سرینگر// اپنی پارٹی ،کمیونسٹ پارٹی آف انڈیااورپیپلزڈیموکریٹک فرنٹ نے حکومت کی نئی میڈیا پالیسی کی نکتہ چینی کرتے ہوئے صحافیوں کے ساتھ یکجہتی کااظہار کیا ہے اور اس پالیسی کو فوری طور واپس لینے کا مطالبہ کیا۔کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا(مارکسسٹ)کے رہنما یوسف تاریگامی نے نئی میڈیا پالیسی کوآزادی رائے اوراظہار کاگلاگھونٹنے سے تعبیر کیا ہے ۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ نئی میڈیا پالیسی نے صحافیوں میں بے چینی پیداکی ہے کیوں کہ اس کا مقصدجموں کشمیرمیں صحافیوں کی آوازکودبانا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت اور اس پالیسی کو تیار کرنے والوں کو سمجھنا چاہیے کہ ذرائع ابلاغ جمہوریت کاچوتھا ستون ہے اوردیگرستونوں کے ہم پلہ ہے.۔انہوں نے کہا کہ اس پالیسی کے تیار کرنے والوں نے واضح کیا ہے کہ وہ صحافیوں کو قارئین اور ایڈیٹرس کے سامنے جوابدہ بنانا

ترال کے کئی علاقوں میں پینے کے پانی کی قلت

ترال//ترال کے متعدد علاقوں میں پینے کے پانی کی شدید قلت پائی جا رہی ہے جس کے نتیجے میں لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ تانترے محلہ آری پل گزشتہ پندرہ دنوں سے پینے کے صاف پانی سے محروم ہے جس کے نتیجے میں لوگوں کو مشکلات کاسامنا کرنا پڑ رہا ہے۔اسی طرح گلشن پورہ کے پرے محلہ،پیر محلہ اور سکھ محلوں میں بھی پانی کی عدم دستیابی کے سبب لوگ پریشان ہیں ۔ادھر پنیر جاگیر ترال میں لوگ اسی طرح کی شکایت کر رہے ہیںجہاں لوگوں نے گور نر کی شکایت سیل کے ساتھ بھی رابطہ قائم کیا تاہم تاحال کوئی راحت نصیب نہیں ہوئی۔تمام لوگوں نے محکمہ کے اعلیٰ حکام سے مداخلت کی اپیل کی ہے ۔  

پلوامہ اور پانپورمیں آوارہ کتوں کی ہڑ بھونگ

سرینگر//ضلع پلوامہ کے بیشتر علاقوں میں آوارہ کتوں کی تعداد میں تشویشناک حد تک اضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے لوگ خاص طور پر چھوٹے بچے گھروں سے باہر نکلنے میں ڈر محسوس کر رہے ہیں۔ ادھر زعفران قصبہ پانپور، کا کا پورہ، مارول، نہامہ، مرن، پلوامہ میں بھی آوارہ کتوں کی تعداد میں بہت حد تک اضافہ ہوا ہے۔پلوامہ قصبہ کے ملک پورہ، پرچھو، ڈلی پورہ، چاٹہ پورہ، ڈانگر، وشہ بگ اور نیوکالونی علاقوں میں آوارہ کتوں کی موجودگی سے راہگیروں کو آمدورفت میں دشواریوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ ادھر چند روز قبل پلوامہ کے پرچھو علاقے میں آوارہ کتوں نے کئی افراد کو زخمی بھی کیا ۔ اُدھر پانپور میں بھی آوارہ کتوں نے ہڑبونگ مچائی ہے جس کی وجہ سے عوام خوفزدہ ہے اور شام کے وقت یہ آوارہ کتے گلی کوچوں میں گھومتے رہتے ہیں۔ کا کا پورہ، مارول، کھدرموہ کے علاوہ دیگر علاقوں سے بھی ایسی ہی شکایات موصول ہو رہی ہیں۔  

ناربل سے ٹنگمرگ تک سٹریٹ لائٹس بیکار

 ٹنگمرگ// نار بل سے ٹنگمرگ تک نصب اسڑیٹ لائٹس گزشتہ کئی سالوں سے بے کار پڑی ہیں جس کی وجہ سے رات کے اوقات میں پیدل چلنے والے لوگوں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ماگام کے ایک بزرگ سماجی کارکن حاجی محمد یوسف رنگریز نے اسٹریٹ لایٹوں کی خرابی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگرچہ انہوںنے کئی بار انتظامیہ کی توجہ اس جانب مبذول کرائی تاہم انتظامیہ کی یقین دہانی کے باوجود بھی اسٹریٹ لائٹس ٹھیک کرنے میں لیت ولعل ہو رہا ہے ۔لوگوں نے اتنظامیہ سے اپیل کی کہ نارہ بل سے ٹنگمرگ تک نصب سٹریٹ لائٹس فوری طور ٹھیک کی جائیں۔  

عارضی ملازمین کی مستقلی میں تاخیرکیخلاف آج ہونے والا احتجاج مؤخر | 14جولائی کو احتجاج کیا جائیگا: ایجیک

سرینگر//ملازمین اتحاد ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے عارضی ملازمین کی مستقلی میں تاخیر کے خلاف6جولائی کو سرینگر میں سیکریٹریٹ کھلنے کے موقعہ پر احتجاجی کال کو موخر کرنے کا اعلان کرتے ہوئے14جولائی کو احتجاج کی کال دی ہے۔سرینگر کی پریس کالونی میں اتوار کو بعد از دوپہر ایجیک لیڈرشپ فیاض شبنم کی قیادت میں نمودار ہوئی اور نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے پیر کو سیکریٹریٹ کے سامنے احتجاج کی کال کو موخر کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ نے اُن کے مطالبات کو حل کرنے کیلئے کچھ وقت کی مہلت طلب کی ہے۔ایجیک صدر فیاض شبنم نے کہا کہ حکام کے ساتھ ملاقاتوں کے کئی رائونڈئوں کے بعد ایجیک کی میٹنگ میں6جولائی کے احتجاج کو موخر کرنے کا فیصلہ لیا گیا اور اب احتجاج14جولائی کو ہوگا۔فیاض شبنم نے کہا کہ روزانہ اُجرت پر کام کرنے والے ملازمین، آئی ٹی آئی ورکرس ، این ایچ ایم ملازمین ، سیزنل اور مختلف قسم کے عا

پلوامہ اور شوپیان میں محاصرے

شوپیان // فورسز نے شوپیان اور پلوامہ کے کئی دیہات کا اتوار کو بھی  دو دن کے وقفے کے بعد محاصرہ کیا۔44آر آر، سی آر پی ایف اور پولیس ٹاسک فورس نے اتوار کی شام آری ہل پلوامہ کا محاصرہ کیا۔ پولیس نے محاصرہ کرنے کے فوراً بعد روشنیوں کا انتظام کیا، کیونکہ انہیں اطلاعات ملی کہ گائوں میں جنگجو موجود ہیں۔رات دیر گئے تک تلاشی کارروائی جاری تھی۔ادھر 34آر آر، 178بٹالین سی آر پی ایف اور پولیس نے ننگہ چک امام صاحب گائوں کا محاصرہ کیا اور تلاشی کارروائی کی۔ادھرغلام نبی رینہ کے مطابق گجر پتی تھیون کنگن میں اتوار کو  24آر آر اور ایس او جی کنگن نے گھر گھر تلاشی  لی تاہم تلاشی کاروائی کے دوران کسی کی بھی گرفتاری عمل میں نہی لائی گئی۔  

وادی میں تیزآندھی سے مکانوں کی چھتیں اُڑ گئیں

سرینگر // وادی میںاتوار کی شام کو موسم نے کروٹ لی اور متعدد علاقوں میںتیز ہوائوں کے نتیجے میں مکانوں اور دکانوں کی چھتوں کو نقصان پہنچا جبکہ پھلدار درخت بھی جڑوں سے اکھڑ گئے۔ اس دوران ژالہ باری سے کھڑی فصلوں کو نقصان  ہونے کی بھی اطلاع ہے ۔شہر سرینگر میں بھی کچھ وقت کیلئے تیز ہوائیں چلیں جس سے کئی علاقوں میں بجلی سپلائی متاثر ہوئی، تاہم ہوائوں کے چلنے سے گرمی میں کسی حد تک کمی واقعہ ہوئی۔ اُدھرسوپور سے نمائندے غلام محمد کے مطابق سوپور اور اس سے ملحقہ علاقوں میں تیزآندھی سے مکانوں اور دکانوں کی چھتوں کو نقصان پہنچا ۔قصبہ میں ساڑھے 7بجے پہلے آسمان پر کالے بادل چھا گئے، اس کے بعد دیکھتے ہی دیکھتے تیز ہوائیں چلنے لگیں ۔تیز ہوائیں اس قدر شدید تھیں کہ راہگیر محفوظ جگہوں کی تلاش کرتے رہے اور بجلی بھی گل ہو گئی جبکہ قصبہ کے بائی پاس ، سنگرامہ ، فروٹ منڈی روڑ پر زبردست ژالہ باری بھی ہوئی

حکومت کیلم کولگام کے سیلاب متاثرین کو گھر فراہم کرنے میں ناکامؔ| 6برسوں سے عارضی شیڈوں میں مقیم24کنبوں کومشکلات

اننت ناگ// سال  2014 کے تباہ کن سیلاب میں کولگام ضلع کے ٹینکی پورہ کیلم کے چوبیس کنبے چھ برس گزر جانے کے باجود بھی ابھی ٹین کے عارضی شیڈوں می رہائش پزیر ہیں اور سرکار ان کے لئے رہائشی بندوبست کرانے میں مکمل ناکام ہوگئی ہے۔ کولگام ضلع کے ٹینکی پورہ کیلم میں 2014کے تباہ کن سیلاب نے قریباََ2درجن مکانوں کو بہا لیا تھا جس کے سبب ان مکانوں میں رہائش پزیر کنبے کھلے آسمان تلے آگئے تھے ۔ حکومت نے متاثرہ کنبوں کو غلام مصطفی میموریل اسپتال کیلم اور اس کے بغل میں قائم سرکاری ٹین شیڈوں میں منتقل کیا تھااور اعلان کیا تھا کہ حکومت اُنہیں جلد سرکاری زمین فراہم کرے گی تاکہ یہ لوگ پھر سے اپنے مکانات تعمیر کر سکیں ،تاہم 6سال کے طویل عرصہ  گزرنے کے بعد بھی نئے گھروں کی تعمیر کااُن کا خواب شرمندہ تعبیر نہ ہوسکا۔محمودہ نامی ایک خاتون نے نم آنکھوں سے کشمیر عظمٰی کو بتایا کہ وہ لوگ سخت مشکلات سے

دریائے جہلم میں ریت کی غیرقانونی برآمدگی | بارہمولہ میں18گرفتار،4ٹریکٹراورٹپرضبط:پولیس

 بارہمولہ//  بارہمولہ پولیس نے ضلع میں غیر قانونی طور پردریائے جہلم سے ریت نکالنے کی پاداش میں 18 افراد کو گرفتار کیا ہے۔ پولیس  کے مطابق خوجہ باغ مقام پر دریائے جہلم سے غیر قانونی طور پر ریت نکالنے کی اطلاع  ملنے پر کارروائی کرتے ہوئے پولیس نے اتوار کو ایک کاروائی کے دوران موقعہ پر ہی 18 افراد کو گرفتار کرکے چار ٹریکٹر اور ایک ٹپر کو بھی ضبط کیا جب وہ غیر قانونی طور پر گاڑیوں میں ریت لوڈ کرتے ہوئے پائے گئے ۔ اس سلسلے میں بارہمولہ پولیس تھانہ میں ایک  ایف آئی آر زیر نمبر  /2020 106 تحت دفعہ 188/379/447/427 تعزیرات ہند درج کرکے تحقیقات کا آغاز کیا گیا ۔ پولیس نے کہا ہے کہ جو بھی ریت کی غیرقانونی کان کنی میں ملوث پایا جاے گا، اس کے خلاف سخت سے سخت کاروائی کی جائے گا ۔  

۔1لاکھ عارضی ملازمین کی خدمات سرکاری دفاتر کیلئے ریڑھ کی ہڈی

سرینگر// سرکاری محکموں میں کام کر رہے عارضی ملازمین کی مستقلی کا مطالبہ کرتے ہوئے مختلف ملازمین انجمن کے اتحاد ایمپلائز کارڈی نیشن کمیٹی نے روزانہ اجرتوں پر کام کر رہے ملازمین کی تنخواہوں کو واگزار کرنے کا مطالبہ کیاہے۔سرینگر کے ایوان صحافت میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایمپلائز کارڈی نیشن کمیٹی کے صدر شاہ فیاض نے کہا کہ سرکاری محکموں میں عرصہ دراز سے کیجول ملازمین اور ڈیلی ویجر کام کر رہے ہیںجنہیںآج تک مستقل نہیں کیا گیا،جس کے نتیجے میں وہ ذہنی کوفت میں مبتلا ہے۔انہوں نے کہا کہ انتظامیہ بھی اس بات سے با خبر ہے کہ قریب ایک لاکھ عارضی ملازمین نے ہی اصل امورات اور عوامی خدمات کے لازمی شعبے چلاتے ہیں تاہم اس کے باوجود اس حقیقت کو انتظامیہ نظر انداز کر رہی ہے۔ شاہ فیاض نے کہاکہ سیکریٹریٹ اور اعلیٰ دفاتروں میں انتظامی امورات سے متعلق جو منصوبہ بندی اور پالیساں مرتب کی جاتی ہے،ان کو بھ

محکمہ جل شکتی کے آئی ٹی آئی کیجول ملازمین بھی برہم

 سرینگر//محکمہ جل شکتی میں تعینات آئی ٹی آئی تربیت یافتہ کیجول ملازمین نے مطالبات کو منوانے کیلئے 6 جولائی کو ہڑتال کی کال کا اعلان کیا ہے۔ان ملازمین کا کہنا ہے کہ انہوں نے سال 2006 میں محکمہ پی ایچ ای میں بحثیت آئی ٹی آئی تربیت یافتہ کیجول ملازمین کے تحت تقرری عمل میں لائی ہے۔ملازمین کا کہنا تھا کہ سال 15سے لیکر محکمہ کے چیف انجینئر کشمیر اور جموں نے انکے حق میں مستقلی کو لیکر متعدد احکامات صادر فرمائے تاہم وہ ابھی تک بار آور ثابت نہیں ہوئے ہیں۔ملازمین کے مطابق انہوں نے موجودہ انتظامیہ کی توجہ اپنے مسائل کی جانب مبذول کرانے کیلئے ایسوسی ایشن کی جانب سے دی گئی ہڑتال کال کی مکمل تائید کا اعلان کیا ہے جوکہ ایمپلائز جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے سربراہ فیاض احمد شبنم نے دی ہے۔ملازمین نے جموں و کشمیر کے گورنر سے جائز مطالبات کو منوانے میں اپنا کردار ادا کرنے کی بھی اپیل کی ہے۔  

زبان و ادب کا فروغ معاشرے کی نشو نما کیلئے اہمیت کا حامل

 سرینگر//محکمہ تعلیم کے پرنسپل سیکریٹری ڈاکٹر اصغر حسین سامون نے کہا ہے کہ زبان و ادب کا فروغ ایک احسن معاشرے کی نشو نما کے لئے کلیدی اہمیت کا حامل ہے اورنئی نسل میں تخلیقی صلاحیتوں کو فروغ دینا اور انہیں اپنے ادبی اور ثقافتی ورثے سے جوڑے رکھنا بے حد لازمی ہے۔موصوف سول سیکریٹریٹ سرینگر میں ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے ۔تقریب میں ریاست کے نامور قلمکار پرویز مانوس کے پہاڑی شعری مجموعہ (درد گلاباں نے )کی رسمِ اجراء انجام دی گئی۔اس موقع پر ناظم تعلیمات محمد یونس ملک نے بھی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے شرکت کی جبکہ تقریب میں نامور ادیب نور شاہ،ڈائریکٹر نیوز آل انڈیا ریڈیو سرینگر مشتاق احمد تانترے ،سابق ڈی ڈی جی دور درشن کیندر سرینگر سلا م الدین بجاڑ ،معروف فلم میکر مشتاق علی احمد خان ،معروف ادیب شبنم تلگامی اور زبیر قریشی شامل تھے۔ڈاکٹر سامون نے مقامی زبانوں کو فروغ دینے پر زور دیتے ہوئے ک

سوپور میں6دہائی قبل تعمیر کیاگیا پُل ڈھہ گیا

سوپور// چھانہ کھن سوپو رمیں 60برس قبل تعمیر کیاگیا پُل ڈھہ گیا۔ دریائے جہلم پر 1955میںسابق وزیر اعظم بخشی غلام محمد کے دور میںتعمیر کیاگیا 250فٹ لمبا پُل بدھوار کی شام ڈھہ گیا البتہ کوئی جانی نقصان نہیںہوا۔ پُل میں دراڑیں پڑنے اور بوسیدہ ہونے کی وجہ سے 1999 میں اسے ٹریفک کی آمدورفت کیلئے بند کیاگیا تھااور2019میں پیدل چلنے پر بھی پابندی عائد کی گئی تھی۔ جامع مسجد پُل کے بعد بخشی پُل دوسرا بڑا پُل تھا جو سوپور کو سرینگر اور بارہمولہ علاقوں سے ملاتا تھا۔ اکنامک الائنس سوپور کے چیئرمین محمد اشرف گنائی کاکہنا ہے کہ پُل محکمہ آر اینڈ بی کی غفلت شعاری اور عدم توجہی کا شکار رہا اورنتیجہ یہ ہے کہ پُل کو گزشتہ 20 برسوں سے آمدو رفت کے لئے بند رکھا اور تب سے آج تک وہ اس پل کو منہدم نہیں کر پائے۔ انہوںنے کہاکہ چونکہ پل میں کافی تعداد میں  لکڑی اور لوہا موجود ہے جو قصبہ کے کسی اور ترقیاتی ک

شوپیان اور پلوامہ میں محاصرے

شوپیان // پولیس و فورسز نے شوپیان اور پلوامہ میں کئی دیہات کا محاصرہ کیا اور تلاشیاں لیں۔ جمعرات کی صبح حاجی چیک حرمین کا 44آر آر ،14بٹالین سی آر پی ایف اور پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ،گنڈ درویش ناگہ بل کا44آر آر ، 178 سی آر پی ایف اور پولیس اورآونیورہ کافسٹ آر آر، 178 سی آر پی ایف اور پولیس نے محاصرہ کرکے وہاں تلاشی کارروائی شروع کی۔ فوج نے ان علاقوں کی ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو گھروں میں محصور کردیا جب کہ گھر گھر تلاشی کارروائی کے دوران مکانوں کی تلاشی کے علاوہ نوجوانوں کے شناختی کارڈ چک کرکے ان سے پوچھ تاچھ کی گئی۔تاہم کسی بھی جگہ جنگجوئوں اور فورسز کا آمنا سامنا نہیں ہوا اور نہ ہی کوئی بھی قابل اعتراض شئے بر آمد ہوئی۔ادھر پتھن پلوامہ میں جنگجو مخالف آپریشن کے دوران مکانوں کی تلاشی لی گئی۔ معلوم ہوا ہے کہ فوج کو اس علاقے میں جنگجو ئوںکے چھپے بیٹھنے کی اطلاع ملی تھی

تازہ ترین