تازہ ترین

۔ 3 برسوں میں 1000سے زیادہ حملے|177سیکورٹی فورسز اہلکار ہلاک

نئی دہلی // مرکزی سرکار نے پیر کو پارلیمنٹ میں بتایا کہ جموں و کشمیر میں 2019 سے لے کر گزشتہ 3 برسوں میں فوج اور سنٹرل آرمڈ پولیس فورسز پر ایک ہزار سے زیادہ عسکریت پسندوں کے حملے کئے گئے اور 177 اہلکار مارے گئے ہیں۔راجیہ سبھا میں ممبر پارلیمنٹ آنند شرما کے جواب میں، وزیر مملکت دفاع اجے بھٹ نے کہا کہ 2019 میں 594، 2020 میں 244 اور نومبر 2021 کے وسط تک 195 عسکریت پسند حملے ریکارڈ کیے گئے۔انہوں نے کہا کہ 2019 میں سی آر پی ایف سمیت 80سیکورٹی فورسز کے اہلکار، 2020 میں 62 اور 15 نومبر 2021 تک 35  فورسز اہلکارہلاک ہوئے۔ اجے بھٹ نے یہ بھی بتایا کہ کووڈ-19 کی وجہ سے 137 فوجی، 49 فضائیہ اور چار بحریہ کے اہلکار جان سے ہاتھ دھو بیٹھے۔دفاعی عملے، ان کے اہل خانہ اور سویلین عملے کی کل تعداد کی تفصیلات کے بارے میں رکن پارلیمنٹ ڈاکٹر سنتانو سین کے الگ الگ سوال کا جواب دیتے ہوئے وزیر نے کہا کہ کوو

دریائے سندھ کے ماخذ میں 8چھوٹے پن بجلی پروجیکٹوں کو منظوری

نئی دہلی// مرکز نے دریائے سندھ بیسِن میں 8 چھوٹے ہائیڈرو پروجیکٹوں کو منظوری دی ہے ۔ان میں سے سات مرکز کے زیر انتظام علاقہ لداخ میں اور ایک مرکز کے زیر انتظام علاقہ جموں و کشمیر میں ہے ۔ راجیہ سبھا میں ایک تحریری سوال کے جواب میں یہ اطلاعات دیتے ہوئے ، جل شکتی کی وزارت میں وزیر مملکت بشویشور ٹوڈو نے کہا کہ لداخ میں سات پروجیکٹ صرف پن بجلی پیدا کرنے کے لیے ہیں۔ ان میں آبپاشی کی سہولت کا کوئی پہلو نہیں ہے ۔جموں و کشمیر کے خطہ میں قائم کیے جانے والے 10.50 میگاواٹ رتن ناگ پروجیکٹ میں آبپاشی کی سہولتیں پیدا کرنے کا بھی انتظام ہوگا۔ اس سے ضلع کشتواڑ میں آبپاشی کی سہولت کو وسعت ملے گی۔لداخ کے علاقے میں منظور شدہ ڈربکشیو ہائیڈرو الیکٹرک پروجیکٹ کی صلاحیت 19.00 میگاواٹ ہوگی۔ اس پر 272.03 کروڑ روپے لاگت آئے گی اور اسے 30 ماہ میں مکمل کیا جانا ہے ۔ اسی طرح سانکو پروجیکٹ کی صلاحیت 18.50 میگاواٹ ہے

کپوارہ میں سرسبزدرختوں کی کٹائی

کپوارہ//شمالی ضلع کپوارہ میں محکمہ جنگلات کے اعلیٰ حکام نے اپنی ڈیوٹی میں کوتاہی برتنے پر رینج آفیسر سمیت 4ملازمین کو معطل کیا جبکہ کنزر ویٹر نارتھ سرکل نے کہا کہ قومی سرمایہ کا نقصان ہر گز برداشت نہیں کیا جائے گا اور اگر کوئی بھی ملازم ایسے واقعات میں ملوث پائے جائیں گے تو ان کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔معلوم ہوا ہے کہ ہایہامہ کے منی گاہ علاقہ میں گزشتہ کئی روز سے سر سبز درختو ں کی کٹائی عروج پر تھی جس کے بعد مقامی لوگو ں میں تشویش کی لہر دو ڈ گئی ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ منی گاہ ہایہامہ کے کمپارٹمنٹ NH 80,82میں بڑے پیمانے پر سر سبز درختو ں کی کٹائی جاری ہے جس کے بعد شکایت محکمہ جنگلات کے کنزر ویٹر نارتھ سرکل کے دفتر پہنچ گئی جس نے شکایت کا ازالہ کرنے کے لئے تحقیقات شروع کی ۔دوران تحقیقات یہ بات سامنے آئی کہ مذکور ہ کمپارٹمنٹوں میں دیودار کے چھ سر سبز درخت کاٹے گئے

بغیر کسی بحث کے 3 زرعی قوانین کی منسوخی

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے بغیر کسی بحث کے 3زرعی قوانین کی منسوخی کو نئے ہندوستان کیلئے جمہوریت کا نیا ماڈل قرار دیاہے۔ لوک سبھا نے پارلیمنٹ کے شروع ہونے والے25 روزہ سرمائی اجلاس کے پہلے دن بغیر کسی بحث کے 3زرعی قوانین کو منسوخ کرنے کے بل کو منظور کر لیا۔ بل کوبعدازاں راجیہ سبھا میںبھی منظورکیاگیااور یوں لگ بھگ دس ماہ قبل پارلیمنٹ میں منظورکئے 3زرعی قوانین منسوخ ہوگئے اوراب پارلیمان کے فیصلے پر صدر جمہوریہ دستخط کریں گے ۔ جے کے این ایس کے مطابق عمر عبداللہ نے پارلیمنٹ کے جاری اجلاس کے دوران بغیر کسی بحث کے لوک سبھا میں ’ بغیر کسی بحث کے 3 زرعی قوانین کی منسوخی‘‘ کو نئے ہندوستان کیلئے جمہوریت کا نیا ماڈل قرار دیاہے۔عمر عبداللہ نے ٹویٹر پر لکھا کہ ’’بغیر کسی بحث کے پاس کیا گیا اور بغیر بحث کے منسوخ کر

پشمینہ ’کانی ‘شال کے کاریگروں کی حالت زار

 سرینگر//جموں کشمیرپردیش کانگریس کمیٹی کے صدرغلام احمدمیر نے کانی شال بافوں کی حالت زار پر افسوس کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے انہیں نظراندازکیا ہے۔میرنے کہا کہ وزیراعظم شانے پر پشمینہ شال ڈالنے سے خوشی محسوس کرتے ہیں لیکن لگتاہے کہ انہیں اس فن کے بارے میں فکر نہیں ہے اور نہ ہی اس ہنر کے کاریگروں کی حالت زار کااندازہ ہے۔پردیش کانگریس صدر نے پشمینہ کانی شال کے کاریگروں کی حالت پر تشویش کااظہار کیا کیوں کہ کانی شال کی برآمد میں نمایاں کمی آنے سے اس ہنر کے کاریگر دوسرا کوئی متبادل تلاش کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دس گھنٹے کام کرنے کے باوجود بھی اس کاریگر کو صرف250روپے کی کمائی ہوتی ہے جس کی وجہ سے اس کام کے ماہر اس کوخیرآباد کہہ کر دیگر متبادل کام کی تلاش کرکے اپنا روزگار کمارہے ہیں۔میر نے کہا کہ حکومت کی عدم دلچسپی کی وجہ سے یہ ہنر اب اپنی موت آپ مررہا ہے۔انہوں نے کہا کہ کانہا

تحریرکی ذرائع ابلاغ میں مرکزی حیثیت:اعجازالحق

گاندربل//ارشاداحمد//تیسرے سیمسٹر کے طلبا کی سمعی و بصری صلاحیتوں کو بڑھانے کے لئے شعبہ کنورجنٹ جرنلزم کے زیر اہتمام سینٹرل یونیورسٹی کشمیر میں5 روزہ ورکشاپ اور تربیتی پروگرام کا انعقاد ایجوکیشنل ملٹی میڈیا ریسرچ سینٹر کشمیر یونیورسٹی میں کیا گیا۔افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایجوکیشنل ملٹی میڈیا ریسرچ سینٹر کے ڈائریکٹر شفقت حبیب نے ٹی وی پروڈکشن سے متعلق طلبا ء کی مہارت میں اضافے کے لیے اس طرح کی تربیتی پروگرام منعقد کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔انہوں نے کہا کہ طلباء کی صلاحیتوں کو نکھارنے کے مقصد کے ساتھ، ورکشاپ کا مقصد انہیں ٹیلی ویژن کی تیاری کے لیے درکار عملی نمائش سے آشنا کرنے اور مقررہ تاریخ کے تحت کام کرنے کے لیے ماحول فراہم کرنے کے لیے بنایا گیا ہے۔پروڈیوسر اعجاز الحق نے ٹیلی ویژن کے لیے اسکرپٹ رائٹنگ کے ایک سیشن کے دوران ٹیلی ویژن پروڈکشن کے لیے تحریر کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے ک

کوکرناگ اور بونیار میں8دکانیں خاکستر

اننت ناگ+اوڑی//کوکرناگ میں آگ کی ایک ہولناک واردات میں 3دکانیں خاکستر ہوگئیں ۔لارنو بٹہ پورہ کوکر ناگ میں اتوار کی شام ایک  دکان (ریڈی میڈ)سے آگ نمودار ہوئی۔علاقے میں خبر پھیلتے ہی مقامی لوگوں نے آگ بجھانے کی کاروائی شروع کی تاہم جب تک آگ پر قابو پایا جا تا تب تک تین دکانیں راکھ کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئیں تھیں۔آتشزدگی کے اس واقع میں منظور احمد، جاوید احمد اور محمد حسین نامی افراد کی تین دوکانوں میں موجود لاکھوں روپئے کا سازوسامان تباہ ہوگیا۔مقامی لوگوں نے فائر سروس عملہ پر دیر سے پہنچنے کا الزام عائد کرتے ہوئے برہمی کا اظہار کیا ہے ۔پولیس نے معاملہ کی نسبت کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی ہے۔ادھراوڑی کے بونیار بازار میں پیر کی شام آگ نمودار ہوئی اور آناً فاناً کئی دکانیں اس کی لپیٹ میں آگئیں۔ آگ پر قابو پانے کے لیے مقامی لوگوں کے ساتھ فائر اینڈ ایمرجنسی محکمہ نے قابو پانے کے لئے بچا

سنطور ہوٹل میں’ایٹ رائٹ میلہ‘

سرینگر//’آزادی کا امرت مہا اتسو‘ کے ایک حصے کے طور پر ڈرگ اینڈ فوڈ کنٹرول آرگنائزیشن کی فوڈ سیفٹی ونگ نے فوڈ سیفٹی اینڈ اسٹینڈرڈز اتھارٹی آف انڈیا کے تعاون سے پیر کو ’ایٹ رائٹ میلہ‘ کا انعقاد کیا۔ ڈل جھیل کے کنارے ہوٹل سنطورمیںصوبائی  کمشنر کشمیر پانڈورنگ کے پولے نے کمشنر فوڈ اینڈ ڈرگس ایڈمنسٹریشن شکیل الرحمٰن کی موجودگی میں میلے کا افتتاح کیا۔ شعبہ کمیونٹی میڈیسن کے سربراہ ڈاکٹر سلیم خان، ڈین ریسرچ IUST پروفیسر ہارون رشید نائیک،ڈسٹرکٹ پروگرام افسر زینت آرا، چیف میڈیکل افسر سرینگر ڈاکٹر جمیل سمیت زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے میلے میں شرکت کی۔میلے میں مختلف محکموں جیسے زراعت، باغبانی، HPMC اور کشمیر صوبے کے سرکردہ صنعت کاروں کے فوڈ اسٹالز لگائے گئے تھے تاکہ مقامی پیداوار کو ظاہر کیا جا سکے اور صارفین میں محفوظ اور صحت بخش کھانے کی عاد

پاکستان واپسی کیلئے سفری دستاویزات فراہم کریں

 سرینگر// کشمیر میں مقیم سابق جنگجوئوں کی پاکستانی بیگمات نے پیر کو ایک مرتبہ پھر سرینگر میں مطالبہ کیا ہے کہ حکومت انہیں مکمل طور پر بھارتی شہری قبول کرے ورنہ سفری دستاویزات فراہم کئے جائیں تاکہ وہ دوبارہ اپنے ملک پاکستان لوٹ سکیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے سابق جنگجوئوں کے ساتھ انہوں نے شادی کرکے کسی جرم کا ارتکاب نہیںکیا ہے۔ ایوان صحافت کشمیر میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان خواتین نے’’ ہم حکومت سے مطالبہ کرتے  ہیںکہ ہمیں سفری دستاویزات فراہم کریں اور پاکستان بھیجا جائے، ہم 2010 میں اُس وقت کے وزیر اعلیٰ عمر عبدللہ کی باز آبادکاری پالیسی کے تحت اپنے بچوں سمیت کشمیر آئے تھے، ہم غیر قانونی طور پر یہاں نہیں رہتے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا’’نہ ہمیں بھارت کی شہریت دی جارہی ہے ، نہ پاکستان بھیجا جا رہاہے‘‘۔ انہوں نے مزید کہا ’&r

پونے میں محکمہ سیاحت کی جانب سے مصوری مقابلہ

سرینگر//محکمہ سیاحت نے پونے کی سیاحتی برادری کے ساتھ اَپنے رَسائی پروگرام کے ایک حصے کے طور پر دَکن کالج پونے میں ایک مصوری مقابلہ منعقد کیا جس میں شہر کے مختلف کالجوں کے طالب علموں نے حصہ لیا۔مقابلے میںطالب علموں نے گہری دِلچسپی کا مظاہرہ کیا ۔ انہوں نے اپنے فن کے ذڑیعے کشمیر کی خوبصورتی کے مختلف پہلوئوں کو ظاہر کیا۔ناظم سیاحت کشمیر ڈاکٹر جی این اِیتو نے مقابلے میں حصہ لینے والے طالب علموں کی حوصلہ اَفزائی کی ۔انہوںنے جیتنے والوں میں اَنعامات تقسیم کئے۔اِس موقعہ پر ناظم سیاحت نے کہا کہ محکمہ 75پرکشش لیکن غیر معروف مقامات کو بڑے پیمانے پر فروغ دینے اور پونے میں مقیم چھٹیاں منانے والوں کو جموںوکشمیر کا دورہ کرنے کی ترغیب دینے کا منصوبہ بنارہا ہے۔انہوں نے محکمہ کی جانب سے سیاحتی شعبے کی بحالی کے لئے کئے گئے کئی دیگر اِقدامات کے بارے میں بھی جانکاری دی جس کے نتیجے میں گذشتہ مہینوں کے دورا

جمعیت کی ناچلانہ بانہال میں تقریب

سرینگر// جمعیت اہلحدیث کے صدر پروفیسر غلام محمد بٹ نے ناچلانہ بانہال میں کئی حفاظ کی دستار بندی کی۔انہوں نے اس موقع پرقرآن کے پیام توحید اور درس رحمت کے اہم ترین گوشوں کو اجاگر کیا۔موصولہ بیان کے مطابق دارالتعالیم و السنتہ کی سالانہ تعلیمی کا نفرنس کے موقع پر پروفیسر بٹ نے مدرسہ کے طلباء اور اساتذہ کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ کورونا کے باوجود انہوں نے جس مربوط انداز میں تعلیم فراہم کرنے کا آن لائن انتظام کیا وہ بذات خود ایک بہت بڑا کام ہے ۔اس موقع پر امتحانات اور دیگر شعبوں میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلباء میں انعامات بھی تقسیم کئے گئے۔کئی طلبانے فن تقریر کا بہترین مظاہرہ کیا اور حساس لوگوں نے اس چھوٹی سی عمر میں اس نوع کی اٹھان پر مستقبل میں ان کے جید مبلغ و مقرر ہونے کی نوید سنادی۔کانفرنس سے جمعیت کے مفتی عام مولانا محمد یعقوب بابا المدنی اور الکلیتہ السلفیہ للبنات سری

جموں کشمیر کا ریاستی کردار بحال کرنے کی اشدضرورت:حکیم یاسین

خانصاحب //پیپلز ڈیموکریٹک فرنٹ کے سربراہ حکیم یاسین نے مرکزی حکومت پر زور دیا ہے کہ اعتماد سازی کیلئے مجوزہ اسمبلی انتخابات سے قبل ہی جموں وکشمیر کا ریاستی کردار بحال کریں ۔انہوں نے کہا کہ اعتماد سازی کے اس اقدام سے جموں وکشمیر میں موجودہ سماجی وسیاسی غیر استحکام کو کافی حد تک دور کرنے میں مدد ملے گی ۔موصولہ بیان کے مطابق خانصاحب میں سکھناگ حلقہ کے پارٹی ورکروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے حکیم یاسین نے کہا کہ جموں وکشمیر میں موجودہ غیر یقینی صورتحال میں بہتری لانے کے لئے جموں وکشمیر کا ریاستی کردار بحال کرنے کے ساتھ ساتھ فوری طور اسمبلی انتخابات منعقد کئے جانے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں وکشمیر کی ابتر صورتحال کی بنیادی وجہ سابق مرکزی و ریاستی حکومتوں کی طرف سے وقت وقت پر کئے گئے وعدوں سے انحراف ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب یہ ذمہ داری موجودہ مرکزی قیادت کی ہے کہ وہ لوگوں سے کئے گئے وعدوں کو

اپنی پارٹی میں کئی سیاسی کارکنوںکی شمولیت

سرینگر//راولپورہ سے کئی سیاسی کارکنان نے اپنی پارٹی میں شمولیت اختیار کی ہے ۔موصولہ بیان کے مطابق اس سلسلے میں پارٹی کے مرکزی دفتر چرچ لین سونہ وار میں ایک تقریب منعقد ہوئی جس میں پارٹی کے ضلع صدر سرینگر نور محمد شیخ، چیئرمین ڈی ڈی سی سرینگر ملک آفتاب، صوبائی صدر یوتھ خالد راٹھور، صوبائی صدر خواتین ونگ دلشاد شاہین، ریاستی کارڈی نیٹر یوتھ آؤٹ ریچ وصلاحیت سازی پروگرام طارق محی الدین، ضلع نائب صدر سرینگر اعجاز راتھر، ضلع آرگنائزر سرینگر پرویز احمد، صوبائی یوتھ کنوینر شعیب ڈار، یوتھ ضلع صدر سرینگر محسن ظفر شاہ، یوتھ زون کارڈی نیٹر امیرا کدل ابراہیم احمد، صوبائی سیکریٹری خواتین ونگ افروزہ خان اور خواتین ونگ کارڈی نیٹر سرینگر رفیقہ بانو وغیر ہ موجود تھیں۔ اس موقع پر آرام واڑی امیرا کدل سے سابق نیشنل کانفرنس حلقہ سیکریٹری فیاض احمد دھرما نے اپنے حمایتوں سمیت اپنی پارٹی میں شمولیت اختیار

گزشتہ 6 برسوں میں 4267نئی کمپنیاں رجسٹر،1786بند

سرینگر//کارپوریٹ امور کی وزارت نے پیر کو پارلیمنٹ کو مطلع کیا کہ جموں و کشمیر میں اپریل 2016 سے مارچ 2021 کے درمیان رجسٹرار آف کمپنیز کے ذریعہ کل 4267 نئی کمپنیاں رجسٹر کی گئی ہیں۔کارپوریٹ امور کی وزارت میں وزیر مملکت را اندرجیت سنگھ پیر کو لوک سبھا میں اٹھائے گئے سوالات کا جواب دے رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ رجسٹرار آف کمپنیز کے ذریعہ کل 4267 نئی کمپنیاں رجسٹر کی گئی ہیں جبکہ جموں و کشمیر میں ڈیمونائزیشن، جی ایس ٹی، اور کوویڈ وبائی امراض کے بعد کل 1786 کمپنیاں بند ہوگئی ہیں۔نئی کمپنیوں کے رجسٹریشن کے حوالے سے وزیر نے بتایا کہ 01.04.2016 سے 31.32021 کے درمیان 274 کمپنیاں  رجسٹر کی گئیں۔ 2016-17 میں رجسٹرڈ کمپنیاں 1545 تھیں۔ 2018 سے 2019 تک 494 نئی کمپنیاں رجسٹر ہوئیں۔ اسی طرح 2019 سے 2020 کے درمیان 820 کمپنیاں رجسٹرڈ ہوئیں جبکہ 2020 سے 2021 کے درمیان اب تک 677 نئی کمپنیاں رجسٹر کی گئی

شہریوں کی رعایتی مراعات

  سر ینگر // نیشنل پینتھرس پارٹی صدر پروفیسربھیم سنگھ نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند سے اپیل کی کہ وہ آئین کے تحت اپنے ہنگامی اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے مرکزی اور ریاستی حکومتوں کو فوری طور پر بزرگ شہریوں، طلاب، معذوروں اور دیگر تمام ہندوستانی شہریوں کی رعایتی مراعات بحال کرنے کی ہدایت دیں جنہیں آج کی حکومتوں نے واپس لے لیا ہے۔ سی این ایس کے مطابق پروفیسر بھیم سنگھ نے ہندوستان کے صدر سے درخواست کی کہ وہ ہندوستانی شہریوں کو مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں حکمرانوں کی آمریت سے بچانے کے لیے مداخلت کریں۔ جموں و کشمیر اور لداخ میں 85 فیصد سے زیادہ لوگ بھاری ٹیکسوں اور ریلوے، پبلک ٹرانسپورٹ سمیت اشیائے ضروریہ کی اونچی قیمتوں کا شکار ہیں۔انہوں نے کہاکہ مہنگائی اپنے عروج پر اور سبزی ، پھل، ٹرانسپورٹ، ریلوے، انٹرنیٹ وغیرہ شامل ہیں ، غریب آدمی کی حالت خراب ہے اور حکومت کو اس کی فکر نہیں

مزید خبریں

۔49متوفی پولیس اہلکاروں کو بچوںوظائف دلباغ سنگھ نے ترقیاب اہلکاروں کے شانوں پر تارے سجائے جموں//مارے گئے پولیس اہلکاروں کے بچوں کومالی مددفراہم کرنے کی دوڑدھوپ کوجاری رکھتے ہوئے پولیس سربراہ دلباغ سنگھ نے2 لاکھ 45 ہزار کے وظائف جاں بحق ہوئے اہلکاروں کے لواحقین کے حق میں منظور کئے۔یہ وظائف دوران ڈیوٹی49فوت ہوئے پولیس اہلکاروں کے بچوں کے حق میں منظور کئے گئے۔نوبچوں جوپرائمری کلاسزمیں زیرتعلیم ہیں، کے حق میں ہرایک کیلئے5000روپے  منظور کئے گئے جبکہ مڈل کلاسوں میں زیرتعلیم 10بچوں ،ہائراسکینڈری کلاسز کے14بچوں ،سینئرسکینڈری کے 12بچوں اور گریجویشن کررہے 4طلاب کے حق میںفی کس 5ہزارروپے منظور کئے گئے۔یہ وظائف پولیس ویلفیئرفنڈ سے منظورکئے گئے۔ ادھر دلباغ سنگھ نے یہاں دوترقی یاب اہلکاروں شانوں پر اسسٹنٹ سب انسپکٹر عہدے کے تارے سجائے۔ترقی پانے اہلکاروں میں ونے دتا اور راجندرکمار شامل ہی

پلوامہ ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن: روہت کنسل | عوامی خدمات کو یقینی بنانے کیلئے افسران کوہدایت

پلوامہ// بجلی اور اطلاعات محکموں کے پرنسپل سکریٹری روہت کنسل نے اتوار کو پلوامہ ضلع میں مجموعی ترقیاتی منظر نامے کا جائزہ لیا ۔ انہوں نے مختلف محکموں کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے علاوہ ضلع انتظامیہ کی طرف سے موسم سرما کی تیاریوں کا جائزہ لیا۔ کنسل سیکریٹری انچارج ضلع پلوامہ بھی ہیں۔انہوںنے واضح کیا کہ حکومت مشکلات کو دور کرنے اور سماجی تحفظ اور فلاحی اسکیموں کو تمام اہل شہریوں تک آسانی سے قابلِ رسائی بنانے کیلئے مسلسل کوششیں کر رہی ہے۔ انہوں نے عہدیداروں پر زور دیا کہ وہ تمام اسکیموں کی صد فیصد سیچوریشن کو یقینی بنانے اور عوامی شکایات کے فوری ازالے کیلئے باقاعدہ عوامی رسائی کی سرگرمیاں شروع کریں۔ڈسٹرکٹ کیپیکس پلان اور ضلع میں دیگر اہم بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں کا جائزہ لیتے ہوئے پرنسپل سکریٹری نے نوٹ کیا کہ جن ترقیاتی کاموں کے لیے بجٹ رکھا گیا تھا ان کا ٹینڈر کیا گیا تھا اور ان میں سے

چاڈورہ میں بجلی کی آنکھ مچولی سے لوگ پریشان

 سرینگر// چاڈورہ میں بجلی کی آنکھ مچولی کے نتیجے میں لوگوں کو سخت دقتوں کا سامنا ہے ۔لوگوں نے متعلقہ محکمہ کے خلاف سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انہیں بجلی کے آنے اور جانے کا کوئی پتہ نہیں چل رہا ہے۔مقامی لوگوں نے الزام عائد کیا کہ کٹوتی شیڈول پر بھی کوئی عملدرآمد نہیں ہورہا ہے جس کے نتیجے میں علاقے میں شام ہوتے ہی اندھیرا چھاجاتا ہے۔لوگوں نے متعلقہ محکمہ کے اعلیٰ حکام سے اس سلسلے میں مداخلت کی اپیل کی ہے۔  

محکمہ جنگلات کی کارروائیاں | اننت ناگ اور بارہمولہ میں182فٹ عمارتی لکڑی اور دو گاڑیاں ضبط

بارہمولہ+اننت ناگ//شمالی ضلع بارہمولہ کے شیری ناروا وعلاقے میں محکمہ جنگلات اور پولیس نے عمارتی لکڑی اسمگل کرنے کی کوشش کو ناکام بناتے ہوئے133فٹ لکڑی اور دو گاڑیاں ضبط کر لیں ۔ ناروا وبلاک ہیون کے کمپارٹمنٹ نمبر 77ایک دیودار کو ٹرک میں اسمگل کرنے کی کوشش کی جا رہی تھی تاہم ڈی ایف او بارہمولہ پرویز احمد وانی کی قیادت میں رینج افسر سمیت محکمہ کے دیگر ملازمین اور پولیس کی ایک ٹیم نے خصوصی کارروائی عمل میںلاتے ہوئے مین مارکیٹ ہیون میں ٹرک زیر نمبر JK02U-3985اور ایک گاڑی زیر نمبر JK05H-1768سے تلاشی لی ۔تلاشی کارروائی کے دوران 18شہتیربر آمد ہوئے ۔ جنگلات کی ٹیم نے دونوں گاڑیوں کو موقع پر ہی ضبط کرکے لکڑی بھی اپنی تحویل میںلی تاہم اسی دوران ملزمان فرار ہونے میںکامیاب ہو گئے ۔ ڈی ایف او بارہمولہ نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ ٹرک سے 133فٹ لکڑی ضبط کر لی گئی ۔انہوں نے کہا کہ شیری تھانہ م

خاتون ہیلتھ ورکر کی شاندار کارکردگی | 8مہنیو ںمیں 27834کورونا مخالف ٹیکہ لگائے

کپوارہ//بلاک میڈیکل لنگیٹ میں تعینات ایک خاتون ہیلتھ ورکر نے 8مہینو ں کے دوران کورنا وائرس کے خلاف 27834ٹیکہ لگا کر ایک شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ اشپورہ قاضی آباد سے تعلق رکھنے والی فہمیدہ احسن جو محکمہ صحت میں 12سال قبل بحیثیت ہیلتھ ورکر تعینات ہوئی اور اس وقت بٹہ گنڈ لنگیٹ کے سب سنٹر میں اپنے فرائض انجام دے رہی ہے ۔فہمیدہ احسن نے گذشتہ دو برسوں کے دوران   کورونا وائرس مخالف ٹیکہ لگانے میں انتھک محنت کی ۔محکمہ صحت کی ایک رپورٹ کے مطابق فہمیدہ نے رواں سال دیگر ملازمین کے مقابلہ میں سب سے زیادہ ٹیکہ کاری عمل میں لائی ۔انہوں نے کشمیر عظمیٰ کو بتا یا کہ کوروناوائرس مخالف ٹیکہ کاری کا عمل جب شروع کیا گیا تو لنگیٹ  میں لوگو ں نے ان کی ٹیم پر حملہ کیا اور انجکشن لگانے سے انکار کیا ۔انہوں نے کہا ’’اس صورتحال کے باوجود ہم نے اپنا کام جاری رکھا اور لنگیٹ علا

تازہ ترین