تازہ ترین

پھاک گاندربل میں متعدد ٹیوب ویل بے کار | پانی کی شدید قلت سے عوام مشکلات سے دوچار

گاندربل//پھاک گاندربل میں متعدد ٹیوب ویل ناکارہ ہونے سے ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کو پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔ پھاک میں پینے کے صاف پانی کی سپلائی متاثر ہونے سے بحران جیسی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔بجلی کوہل سے پھاک کو پانی فراہم ہوتا تھا لیکن گزشتہ برس نومبر میں ملہ شاہی باغ کے مقام پر کنال ڈھہ جانے سے علاقہ پھاک کو پینے کے صاف پانی کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے۔رواں سال پھاک کے درجنوں دیہات میں خشک سالی اور پانی کی عدم فراہمی کی وجہ سے دھان کے کھیت، سیب کے باغات،مویشوں کے لئے سبز گھاس بھی خشک ہوگئے ہیں اوریہاں تک کہ درجنوں مویشی بھی پانی کی شدید قلت کی وجہ سے مرگئے۔ 2003اور2004 میں اُس وقت کی سابقہ حکومت نے پھاک میں ہر علاقے میں ٹیوب ویل تعمیر کئے گئے تاکہ پانی کی سپلائی بحال رہے اور ہر ٹیوب ویل پر 70 ہزار سے لیکر ایک لاکھ روپے کی لاگت آئی۔مقامی لوگوں نے الزام عائد کیا کہ ایک دو سال

سب ڈسٹرکٹ ہسپتال ٹنگمرگ میں آگ | پرانا ڈسچارج ریکارڈ خاکستر

ٹنگمرگ//سب ڈسٹرکٹ اسپتال ٹنگمرگ میں آگ لگنے سے ڈسچارج ریکارڈ خاکستر ہوا۔ سنیچر کو علیٰ الصبح سب ڈسڑکٹ اسپتال ٹنگمرگ کی دوسری منزل پر آگ شعلے بلند ہوگئے جس سے وہاں بیماروں اور تیماداروں میں افراتفری مچ گئی ۔ ٹنگمرگ پولیس اور فائر اینڈ ایمرجنسی کے اہکاروں نے آگ پر قابو لیا۔ آتشزدگی میں اسپتال کی چھت پر پرانا زچہ بچہ ڈسچارج ریکارڈ خاکستر ہوا جبکہ بروقت کارروائی سے آپریشن تھیٹر اور وہاں ساتھ ہی موجود کروڑوں روپے مالیت کی مشینری کو بچالیاگیا۔ بلاک میڈیکل افسر ٹنگمرگ ڈاکٹر صبحہ وانی نے کہاکہ اسپتال کا تمام ریکارڈ محفوظ ہے البتہ اسپتال میں زچہ بچہ ڈسچارج پرانا ریکارڈ خاکستر ہوا ۔اپنی پارٹی کے لیڈر غلام حسن میر نے بھی سب ڈسڑکٹ اسپتال ٹنگمرگ کا دورہ کرکے وہاں آگ سے چھت کو ہوئے نقصان کی فوری مرمت کرانے کی ایل جی انتظامیہ سے اپیل کی ہے۔نٹگمرگ پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرلیاہے۔ 

چوگام قاضی گنڈ میں پانی کی عدم دستیابی پر عوام برہم

اننت ناگ //چوگام قاضی گنڈ میں پینے کے پانی کی قلت سے مقامی آبادی کو مشکلات کا سامنا ہے ۔مقامی لوگوں نے کشمیر عظمٰی کو بتایا کہ علاقہ کو گذشتہ کئی ہفتوں سے پینے کے پانی کے حوالے سے مشکلات درپیش ہیں ۔ لوگوں کو پانی حاصل کرنے کے لئے کافی دور جانا پڑتا ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ علاقہ کے لئے واٹر سپلائی اسکیم ناکارہ ہو چکی ہے ،پائیپیں زنگ آلودہ بن چکی ہیں جس کی وجہ سے گائوں والوں کو پانی کی ایک ایک بوند کے لئے ترسنا پڑرہا ہے ۔اُنہوں نے متعلقہ محکمہ سے اپیل کی کہ گائوں کو پانی فراہم کرنے کے لئے اقدامات کئے جائیں ۔محکمہ جل شکتی کے ایک آفیسر کا کہنا ہے کہ مسلسل گرمی کے سبب پانی کے ذخائر کافی حد تک سوکھ چکے ہیں جس کے باعث پانی کی قلت ہوگئی ہے ۔اُنہوں نے یقین دلایا کہ محکمہ لوگوں کو پانی فراہم کرنے میں وعدہ بند ہے ۔اُنہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ پانی کا مناسب طریقہ پر استعمال کریں۔  

نالہ ماور سے ریت اور بجری کا اخراج | ہندوارہ میں3ٹپر اور2جے سی بی ضبط

ہندوارہ //ہفتہ کو قلم آ باد ہندوارہ پولیس کی ایک خصوصی ٹیم نے نالہ ماور کے قریب چھاپہ مار کر 3ٹپر اور2جی سی بی مشینوں کو ضبط کیا ۔مقامی لوگو ں نے پولیس کی اس کاروائی کی سراہنا کرتے ہوئے مطالبہ کیا ریت مافیا کے خلاف کاروائی جاری رکھی جائے ۔واضح رہے کہ نالہ ماور سے ریت اور بجری نکالنے کی وجہ سے نالہ کا وجود خطرے میں پڑ گیا ہے اور اب تک متعدد مقامات پر اس نالہ کی گہرائی میںاضافہ ہوا ہے جس کی وجہ سے زرعی اراضی کو سینچائی کر نے میں مشکلات پیش آتی ہیں ۔  

آغا اشرف علی کی وفات ایک زریں عہد کا خاتمہ

سرینگر// معروف ماہر تعلیم اور مصنف ڈاکٹر آغا اشرف علی کی وفات پر سیاسی، سماجی و ادبی اور مذہبی انجمنوں نے رنج و غم کااظہار کرتے ہوئے اسے ایک ناقابل تلافی نقصان قرار دیتے ہوئے سماج کے تئیں کی گئی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا ہے۔نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ ، نائب صدر عمر عبداللہ ،جنرل سیکریٹری علی محمد ساگر اور معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال نے آغا اشرف علی کی وفات پر مرحوم کے جملہ سوگوران کیساتھ دلی تعزیت کا اظہار کیا اور مرحوم کی جنت نشینی اور بلند درجات کیلئے دعا کی۔ انہوںنے کہاکہ آغا اشرف علی ایک منجھے ہوئے ماہر تعلیم تھے اور انہوں نے شعبہ تعلیم میں اہم عہدوں پر فائز رہ کر قابل  قدر خدمات انجام دیئے۔ ادھرپیپلزڈیموکریٹک پارٹی نے  معروف ماہرتعلیم اوردوانشورپروفیسرآغااشرف علی کی وفات پراُنہیں شاندارالفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ۔ایک بیان میں پارٹی ترجمان نے ک

عوامی شکایات کا بروقت ازالہ انتظامیہ کی ترجیح: بصیر خان | تاجروں اور ٹرانسپورٹروںکیلئے عنقریب خصوصی پیکیج کااعلان ہوگا

سوپور //جموں کشمیر انتظامیہ کی جانب سے عوام تک رسائی کی پہل کو جاری رکھتے ہوئے لیفٹنٹ گورنر کے مشیر بصیر خان نے سوپور کا دورہ کر کے 13 وفود سے ملا قات کی جنہوں نے مشیر کو درپیش مسائل اور مانگوں سے آگاہ کیا ۔ ضلع ترقیاتی کمشنر بارہمولہ ، منیجنگ ڈائریکٹر کے پی ڈی سی ایل ، ڈائریکٹر دیہی ترقی کشمیر ، ایس ایس پی ، اے ڈی سی سوپور اور دیگر ضلع اور سیکٹورل افسران اس موقعہ پر موجود تھے ۔ سوپور فروٹ گروورز ایسوسی ایشن کے ایک وفد نے سوپور فروٹ منڈی میں بنیادی ڈھانچے کو توسیع دینے اور مارکیٹ انٹر وینشن سکیم جاری رکھنے کی مانگ کی ۔ انہوں نے موجودہ حالات کے پیش نظر کسان کریڈٹ کارڈ قرضہ جات معاف کرنے کی بھی مانگ کی ۔ ٹریڈرز/ٹرانسپورٹرز ایسوسی ایشن کے ایک اور وفد نے لاک ڈاؤن کے سبب ہوئے بھاری نقصانات کیلئے معاوضے کے تحت ایک خصوصی اقتصادی پیکج کی مانگ کی ۔ مشیر نے انہیں یقین دلایا کہ تاجروں اور ٹرانس

گریز اور تلیل میں بجلی سپلائی کی عدم دستیابی

بانڈی پورہ //سرحدی تحصیل گریز اور تلیل میں بجلی کی عدم دستیابی سے متعدد بستیاں گھپ اندھیرے میں ڈوبی ہوئی ہیں۔ گریز اور تلیل کے وفد نے ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ دفتر کے سامنے درپیش مسائل و مشکلات کی جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ گریز میں بجلی غائب رہتی ہے اوریہ سلسلہ پچھلے پندرہ روزہ سے جاری ہے ۔وفد نے بتایا ہے کہ کنزلون میں ڈیزل پر چلنے والا ٹرمائل ڈیزل کی قلت سے بیکار پڑا ہوا ہے یہ بجلی سپلائی کرنے کا واحد ذریعہ ہے ۔وفد نے بتایا ہے کہ گریز میں پانچ گھنٹے کی بجلی سپلائی میسر ہوتی ہے لیکن ڈیزل سپلائی کی قلت سے گریز کے علاقوں کوایک گھنٹے کیلئے بھی بجلی نہیں ملتی ہے ۔وفد نے ڈویژنل کمشنر کشمیر ،ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ سے مطالبہ کیا ہے کہ گریز کے لیے ڈیزل کی سپلائی کو یقینی بنایا جائے تاکہ شیڈول کے مطابق لوگوں کو بجلی مل سکے۔  

نجی اسکولوں کوانتباہ | اساتذہ کی تنخواہیں واگزار نہ کی گئیں تو سخت کارروائی کی جائیگی

سرینگر//حکام نے ہفتہ کو نجی سکولوں کو خبردار کیا کہ اگر انہوں نے جاری کورونا لاک ڈائون کے دوران اساتذہ کو نوکریوں سے نکالا یا اُن کی تنخواہیں واگذار نہیں کیں، تو اْن کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ڈائریکٹر سکول ایجو کیشن کشمیر نے اس ضمن میں ایک نوٹیفکیشن جاری کی جس میں وادی کے سبھی نجی تعلیمی اداروں کو بتایا گیا کہ وہ اساتذہ کو بنا کسی خلل کے تنخواہیں واگذار کریں۔نوٹفکیشن میں بتایا گیا کہ اگر کوئی سکول خلاف ورزی کا مرتکب پایا گیا تو اْس کی رجسٹریشن منسوخ کی جائے گی۔نوٹیفکیشن میں نجی تعلیمی اداروں کو یہ بھی بتایا گیا کہ وہ اپنے اساتذہ کو لاک ڈائون کے دوران نوکریوں سے نہ نکالے۔ادھر نجی تعلیمی اداروں اور والدین کے درمیان فیس ادا کرنے یا نہ کرنے میں بارے میں پہلے ہی تضاد چل رہا ہے۔جہاں ایک طرف نجی سکولوں میں زیر تعلیم بچوں کے والدین فیس ادا کرنے کے حق میں نہیں ہے،وہیں دوسری جانب

تشددکوہوادینے والوں کوجیل میں ہی رکھناچاہیے:اشوک کول

اننت ناگ//بی جے پی جموں وکشمیر یونٹ کے صدر اشوک کول نے کہا کہ اگر نظر بند لیڈران رہائی کے بعد بھی تشدد کے بارے میں بات کرنے سے باز نہیں آتے ہیں، تو بہتر ہے کہ اُنہیں جیل میں ہی رکھا جائے ۔پہلگام میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کول نے کہا کہ بے جے پی کو لگتا ہے کہ اگر کسی سیاسی لیڈر کو دفعہ370ختم کرنے میں پریشانی نہیں ہے ،تو اُس کو رہا کرنا چاہیے، ہاں اگر کوئی پرانے موقف پر ہی قائم رہتا ہے، تو بہتر ہے کہ اُس کو جیل میں رکھا جائے ۔اُنہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر بھارت کا لازمی حصہ ہے ،سیاسی جماعتوں کو ایک مسئلے پر متحد ہونا چاہیے ،اگر کسی نے دفعہ370،دوسرا ریاست،تیسرا ڈومیسائیل کو اپنا مدعا بنایا ہے، تو اس صورتحال میں ہرایک اسٹیک ہولڈر  سے بات کرنا ناممکن ہے ۔منتخب حکومت پر بات کرتے ہوئے کول نے کہا جب ایک بار حد بندی کا عمل ختم ہوجاتا ہے تو قانون ساز اسمبلی کے انتخابات ہوں گے ۔اُنہوں نے

آرہامہ گاندربل میں کھیتوں کو پانی دینے پرتنازعہ،3شدیدزخمی

گاندربل//گاندربل کے مضافات میں کھیت میں پانی دینے کی وجہ سے دو ہمسایوں میں زوردار لڑائی ہوئی جس دوران مبینہ طور پر کلہاڑیوں اور ڈنڈوں کے استعمال کی وجہ سے باپ اور اس کے دو لڑکے شدید زخمی ہوگئے۔پولیس ذرائع کے مطابق گال کولہ آرہامہ میں مقامی شہری عبدالرشید پٹھان ولد رحمت گل ساکنہ گال کولہ ارہامہ اپنے سوکھے مکئی کے کھیت میں پانی دے رہا تھا جس دوران کچھ پانی مشتاق احمد چوہان کے کھیت میں گیا، جس کی وجہ سے مشتاق احمد چوہان آگ بگولہ ہوا اور اپنے رشتہ داروں کے ہمراہ عبدالرشید پٹھان اور اس کے دو بیٹوں منظور احمد اور بلال احمد کے ساتھ جھگڑ ا شروع کیا، جس دوران نوبت ہاتھاپائی پر آگئی۔اس دوران مبینہ طور کلہاڑی اور ڈنڈوں کا استعمال کیا گیا جس کے نتیجے میں عبدالرشید پٹھان اور اس کے دونوں بیٹے منظور احمد اور بلال احمد شدید زخمی ہوگئے جس کے باعث چیخ پکار چاروں طرف مچ گئی۔ اس موقع پر نزدیک  قائ

بارہمولہ میں فوجی حوالدار گاڑی کی ٹکر سے زخمی

بارہمولہ // شمالی قصبہ بارہمولہ میں ایک فوجی اہلکار تیز رفتار گاڑی کی زد میں آکر زخمی ہوگیا ۔ معلوم ہوا ہے کہ جمعہ کے روز رات دیر گئے 46 آرآر سے وابستہ حوالدار کرنیل سنگھ نامی فوجی اہلکار معمول کے مطابق ایک ناکے پرڈیوٹی دے رہا تھا، اس دوران مذکورہ اہلکار کو ایک نجی گاڑی زیر نمبر  نے ٹکر  ماری جس کے نتیجے میں وہ زخمی ہوگیا ،اُسے فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا جہاں مذکورہ حوالدار کی حالت بہتر بتائی جاتی ہے ۔  

تحریک حریت کے جنرل سیکریٹری کوٹ بلوال جیل جموں منتقل

سرینگر/ /تحریک حریت کے جنرل سیکریٹری امیرحمزہ کوغیرقانونی سرگرمیوں کی پاداش میں پولیس نے گرفتار کرکے پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت  کورٹ بلوال جیل جموں منتقل کیا ہے۔کے این ٹی کے مطابق پولیس نے کچھ روزقبل تحریک حریت کے جنرل سیکریٹری امیرحمزہ کے گھر چھاپہ مارکرانہیں حراست میں لیااور سوپور تھانہ میں نظر بندکردیا۔گرفتار علیحدگی پسند لیڈر اور جنرل سیکریڑی تحریک حریت امیر حمزہ کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ انتظامیہ نے ان پر پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) کا نفاذ عمل میں لاکر اُسے کوٹ بلوال جیل جموں منتقل کردیا ہے۔نظربند علیحدگی پسند کے اہلخانہ نے بتایا کہ ان پرمختلف الزامات عائد کئے گئے ہیں۔اہلخانہ کے مطابق امیرحمزہ کی اہلیہ مہلک کینسر کی مریضہ ہے،جبکہ بیماری پر انہیں کافی اخراجات کا بوجھ اٹھانا پڑرہا ہے۔انہوں نے امیر حمزہ پر عائد پی ایس اے کو کالعدم قرار دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے انٹرنیشنل فورم آف ج

مزید خبرں

لاک ڈائون کی خلاف ورزی | اونتی پورہ میں 18گاڑیاں ضبط  سرینگر //کورونالاک ڈائون کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں پولیس نے اونتی پورہ میں 18گاڑیاں ضبط کیں جبکہ ماسک نہ پہننے پر 20افرادپر جرمانہ عاید کیاگیا۔ایک بیان کے مطابق پولیس نے اونتی پورہ میں لاک ڈائون کی خلاف ورزی کی پاداش میں 18گاڑیوں کو ضبط کرکے چالان کیا جبکہ ماسک نہ پہننے والے20افراد پرجرمانہ عائد کرکے10ہزارروپے جرمانہ وصول کئے گئے۔پولیس نے بیان میں عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ کورونا وائرس سے بچائو کیلئے جاری رہنماخطوط پر سختی سے عملدرآمد کریں۔       بھاجپااورچیف سیکریٹری کی بولی یکساں ہونا اتفاق نہیں:نیشنل کانفرنس سرینگر//جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس نے چیف سکریٹری بی وی آر سبرامنیم کے الزامات کو بے بنیاد ، من گھڑت اور ذہنی اختراع قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ موصوف کے بیان کے پیچھے گندی سیاست

چھانہ پورہ میں تشدد سے شہری کی ہلاکت | لواحقین کا پریس کالونی میں احتجاج،انصاف کی مانگ

سرینگر// چھانہ پورہ میں مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنانے کے دوران ایک شہری کی ہلاکت کے خلاف اہل خانہ نے پریس کالونی لالچوک میں احتجاج کرتے ہوئے حملہ کرنے والوں کو قانون کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کیا۔ پریس کالونی میں جمعہ کو چھانہ پورہ سے تعلق رکھنے والا ایک کنبہ اور انکے رشتہ دار جمع ہوئے اور احتجاج کرتے ہوئے انصاف کے حق میں نعرہ بازی کی۔احتجاجی مظاہرین نے بتایا کہ گزشتہ دنوں منی کالونی چھانہ پورہ میں مبینہ طور پر ایک شہری کو تشدد کا نشانہ بنا کر اسے ہلاک کیا گیا۔فوت شدہ شہری کی دختر نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ غلطی سے انکے گھر کے سامنے ایک لڑکی پر پانی کی چھینٹے پڑی اور اس نے شور و غل مچایا۔ مہلوک کی بیٹی صدف بقال نے بتایا کہ اس دوران مذکورہ لڑکی کا ایک رشتہ دار بھی وہاں پہنچا جو کہ پیشہ سے فٹ بال کھلاڑی ہے اور جموں کشمیر بنک میں کام کرتا ہے،نے اس کے والد پر اس کا لباس برباد کرنے کا

چیرکوٹ اور ڈانگری رامحال میں پانی کی قلت | 4سال قبل چرائی گئی پائپوں کو جوڑنے کی مانگ

کپوارہ//چیرکوٹ اور ڈنگری رامحال میں ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں۔ لوگوں کاکہناہے کہ مذکورہ علاقوں کوڈانگر واڑی واٹرسپلائی سکیم سے پانی فراہم کیا جاتا تھا لیکن 4سال قبل پنجواہ سے چیرکوٹ تک پانی سپلائی کرنے والی سروس پائپوں کی چوری ہوگئی جس کے باعث 17ہزار نفوس پر مشتمل آبادی پانی کی ایک ایک بوند کیلئے ترس رہی ہے۔ لوگوںکاکہنا ہے کہ پانی کیلئے ٹیوب ویل لگائے گئے لیکن خشک سالی کے سبب پانی کی سطح کم ہے اور صرف کئے گئے روپے ضائع ہوگئے۔ لوگوںکاکہنا ہے کہ خواتین کو 2 کلو میٹر پیدل جاکر ندی نالو ں سے پانی حاصل کرتے ہیں تاہم ہو نا قابل استعمال ہو تا ہے ۔مقامی لوگو ں نے بتا یا کہ ان علاقوں میں منقطع ہوئی واٹر سپلائی سکیم کو از سرنو جو ڑ نے کے لئے وہ گز شتہ 4برسوں سے محکمہ جل شکتی کے دفتروں کا چکر کا ٹ کاٹ کر تھک ٓچکے ہیں لیکن تا حال نئی پایپو ں کو نہیں جو ڑ دیا گیا ۔م

چاڈورہ ہسپتال میں لیڈی ڈاکٹروں کی عدم دستیابی | خواتین مریض دیگرہسپتالوں کا رخ کرنے کیلئے مجبور

سرینگر//سب ضلع اہسپتال چاڈورہ میں طبی عملے کی کمی کے باعث خواتین مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔ لوگوںکاالزام ہے کہ ہسپتال میں 2ماہر امراض خواتین تعینات ہے تاہم انتظامیہ نے ایک خاتون ڈاکٹر کو کووڈ۔19 ڈیوٹی پر تعینات کیا جبکہ دوسری سرجن ڈاکٹر کی عدم موجودگی کے باعث خواتین مریضوں کو دوسرے ہسپتالوں کا رخ کرنا پڑ رہا ہے ۔ کے این ایس کے مطابق مقامی لوگوں نے مانگ کی ہے کہ ہسپتال میں طبی عملے خاص کر خواتین امراض کے ڈاکٹروں کی موجودگی کویقینی بنانے کیلئے فوری اقدامات کئے جائیں۔  

بلال آبادکنڈ آستان ترال پائین کے لوگوں کی مانگ | سڑک پر میکڈم بچھانے سے قبل ڈرینج کا انتظام کیا جائے

ترال //ترال ستورہ روڑ پر واقع بلال آباد کنڈ آستان ترال پائین کے لوگوں نے ترال ستورہ روڑ کو تعمیر کرنے والی تعمیراتی ایجنسی سے مطالبہ کیا ہے کہ سڑک پر میکڈم بچھانے سے پہلے سڑک کے دونوں اطراف ایک ڈرین تعمیر کرنے کی ضرورت ہے ۔علاقے سے تعلق رکھنے والے لوگوں نے بتایا ہم سرکار کے شکر گزار ہیں کہ انہوں خستہ حال سڑک پر میگڈم بچھانے کا کا ہاتھ میں لیا ہے تاہم مذکورہ علاقے میں نذیر احمد بٹ کے مکان سے حاجی محمد انور ڈار کے مکان تک دونو اطراف سے ڈرین تعمیر کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے اس بارے میںمتعلقہ محکمے کے اعلیٰ حکام سے فوری مداخلت کی اپیل کی ہے ۔آبادی کا کہنا تھا کہ مذکورہ جگہ پر پانی کو باہر نکلنے کے لئے کوئی جگہ نہیں ہے اس لئے ڈرین تعمیر کرنے کی اشد ضرورت ہے۔انہوں نے بتایا اس حوالے سے اگر چہ لوگوں نے مقامی سب ضلع انتظامیہ سے مداخلت کی اپیل کی تھی تاہم تا حال کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائ

۔5 اگست 2019 سے5اگست2020تک 346 ہلاکتیں : رپورٹ

سری نگر// جموں و کشمیر کولیشن آف سول سوسائٹی (جے کے سی سی ایس) نے اپنی تازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ سال گذشتہ 5 اگست کو خصوصی آئینی حیثیت کے خاتمے کے بعد سے جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی صورتحال بد سے بد تر ہوگئی ہے۔’’دفعہ 370 کے خاتمے کے بعد ایک سال، جموں و کشمیر میں حقوق انسانی کی صورتحال‘‘ عنوان والی اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے کشمیر میں جنگجویت کو ختم کرنے اور تشدد کو کم کرنے کے دعوے سراب ثابت ہوئے ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا ہے،’’تشدد کم نہیں ہوا ہے دراصل جنگجوؤں اور سیکورٹی فورسز کے درمیان تصادم آرائیوں کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے۔ اگست 2019 سے اگست 2020 تک جموں و کشمیر میں کم سے کم 346 ہلاکتیں ہوئی ہیں جن میں 73 عام شہری، 76 سیکورٹی فورسز اہلکار اور 197 جنگجو شامل ہیں‘‘۔جے کے سی سی ایس نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ

دفعہ370کی منسوخی کے فائدے عوام کو عنقریب ملیں گے | وزیراعظم نے انتظامیہ صاف کرکے اِس کی نئی تعمیر کی ہدایت دی :چیف سیکریٹری

سرینگر//جموں کشمیر سے دفعہ 370کی منسوخی کے تمام فوائد کو حاصل کرنے کیلئے عوام کو صبر رکھنا ہوگا، کی بات کرتے ہوئے جموں کشمیر کے چیف سیکرٹری بی وی آر سبرامنیم نے کہا ہے کہ جموں کشمیر ایک ٹوٹی ہوئی ریاست تھی اور گزشتہ سال ماہ اگست میں لیڈران کی گرفتاری پر ایک بھی فرد نے آنسو نہیں بہایا ۔ اسی دوران انہوںنے کہا کہ پنچوں اور سر پنچوں کی خالی پڑی سیٹوں پر انتخابات موجودہ صورتحال میں بہتر ی آنے کے ساتھ ہی منعقد کرائے جائیں گے ۔ سی این آئی کے مطابق جموں کشمیر کے چیف سیکرٹری بی وی آر سبرامنیم نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کے لوگوں کو دفعہ 370 کی منسوخی کے بعد اس کے فوائد سے لطف اندوز ہونے کے لئے صبر کرنا ہوگا کیونکہ ابھی تک بہت سارے مثبت اقدامات مکمل طور پر سامنے نہیں آسکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر ایک ٹوٹی ہوئی ریاست تھی اور بد انتظامی ، بدعنوانی اور ناقابل یقین حد تک دھوکہ دہی کے سبب

مزید خبریں

دوردرازعلاقوں میں تعلیمی ڈھانچے کی توسیع |  23 نئے کیندر وِدیالیہ قائم کئے جارہے ہیں : سامون  سرینگر//جموںوکشمیر میں تعلیم کے بنیادی ڈھانچے کو توسیع دینے کے لئے دور دراز علاقوں میں 23کیندریہ وِدیالیہ قائم کئے جارہے ہیں۔پرنسپل سیکرٹری محکمہ تعلیم داکٹر اصغر حسن سامون نے میٹنگ میں جموںوکشمیر کے دُور دراز علاقوں میں درس و تدریسی کے عمل میں کیندریہ وِدیالیوں کی اہمیت کو اُجاگر کیا۔ڈاکٹر سامون نے کہا کہ جموںوکشمیر میں 36 کیندر وِدیالیہ کام کر رہے ہیں اور مزید 23کیندر ودِیالیوں کے قیام سے تعلیم کے بنیادی ڈھانچے کو مزید فروغ حاصل ہوگا۔جن علاقوںمیں یہ کیندر وِدیالیہ قائم کئے جارہے ہیںان میں ویری ناگ، رانی پورہ ، گندو کاستی گڈھ ، گاندربل ، جگتی ،بنی،رامکوٹ، کپواڑہ، آزوتی، گالندر ، رینی پورہ ، نوشہرہ ، ڈونگی ، رام بن ، گول ، ریاسی ، کٹرا ، ککریال، وِجے پور،شوپیاں ، شادت کریوا، منت