بانہال کا شہری پر اسرار طور ریاسی سے لاپتہ| لواحقین کا احتجاج

  بانہال// ریاسی میں ریلوے تعمیراتی کمپنی کے ساتھ کام کرنے والے بانہال کے ایک شخص کے پر اسرار حالات میں لاپتہ ہونے کے خلاف قصبہ بانہال میں لوگوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور شاہراہ کو بند کرنے کی کوشش کی لیکن پولیس نے انہیں ہر ممکن مدد دینے کی یقین دہانی کرکے انہیں شاہراہ پر دھرنا دینے سے باز رکھا۔   بانہال کے ڈولیگام اور اس کے ملحقہ علاقوں کے لوگوں نے بتایا کہ ریاض احمد وانی عمر 40ولد مرحوم غلام حسن وانی ساکنہ آڑپورہ ڈولیگام بانہال 12 مئی جمعرات کی شام سے ریاسی سے اس وقت سے لاپتہ ہے جب وہ اپنی رہائش سے زیر تعمیر ریلوے ٹنل  ریلوے ٹنل میں اپنی ڈیوٹی کیلئے نکلا تھا۔    انہوں نے کہا کہ ریاض احمد ریاسی کے علاقے میں ایک نجی ریلوے ٹنل تعمیراتی کمپنی IVRCL کے ساتھ کام کر رہا ہے۔  اس نے جمعرات کی شام زیر تعمیر ریلوے ٹنل نمبر 13میں داخل ہونے سے پہ

رام بن میں فوجی اہلکار کی مبینہ خود کشی

جموں// جموں وکشمیر کے ضلع رام بن کے نیل ٹاپ علاقے میں ایک فوجی جوان نے مبینہ طور پر اپنی ہی سروس رائفل سے اپنا کام تمام کر دیا۔   سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ’ضلع رام بن کے نیل ٹاپ علاقے میں ہفتے کی صبح ایک فوجی جوان نے اپنی ہی سروس رائفل سے اپنا کام تمام کردیا ہے‘۔   انہوں نے کہا کہ گولی کی آواز سنتے ہی وہاں موجود دوسرے فوجی اپنے ساتھی کی طرف دوڑ پڑے اور اس کو خون میں لت پت پایا۔   مذکورہ ذرائع نے بتایا کہ اگر چہ فوجی جوان کو نزدیکی ہسپتال پہنچایا گیا لیکن وہاں ڈاکٹروں نے اس کو مردہ قرار دیا۔ متوفی جوان کی شناخت روی کمار ولد رتن سنگھ ساکن روہتک ہریانہ کے بطور ہوئی ہے۔   جموں و کشمیر کے حالات پر گہری نظر رکھنے والے مبصرین کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورسز اہلکاروں میں خودکشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کی وجہ سخت ڈیوٹی، اپنے عزیز و اقا

شاہراہ پر ٹریفک جام ، قصبہ بانہال محور ، گھنٹوں تک معمول کی زندگی اثر انداز رہنا روز کامعمول

بانہال// جموں سرینگر قومی شاہراہ پر رام بن بانہال سیکٹر خاص کر شاہراہ پر واقع قصبہ بانہال میں آئے روز کا ٹریفک جام مقامی لوگوں اور شاہراہ کے مسافروں کیلئے درد سر بنا ہوا ہے اور شاہراہ کا دشوار سفر طے کرکے کشمیر وادی کی سیاحت پر انے جانے والے ہزاروں سیاحوں کے ذہنوں میں بھی شاہراہ پر ٹریفک جام کے حوالے سے منفی تصورات مرتب کر رہے ہے۔ پچھلے کئی ہفتوں کی طرح جمعہ کے روز بھی رام بن اور بانہال فورلین ٹنل کے درمیان کئی مقامات پر وقفے وقفے کا ٹریفک جام رہا جس کی وجہ سے ضلع رام بن کے نوگام ، بانہال، کھڑی ، ناچلانہ،  رامسو ، اْکڑال پوگل پرستان، ڈگڈول، بیٹری چشمہ ، سیری ، رام بن اور چندرکوٹ کے درجنوں مریضوں ، سرکاری ملازموں اور سکول اور کالج جانے والے بچوں کو اپنی اپنی جگہوں تک پہنچنے میں کم از کم دو گھنٹوں کی تاخیر کا سامنا رہا اور معمولات کی زندگی وقفے وقفے سے متاثر رہی۔ یہی حال وادی کشمیر

مغوی لڑکی 24 گھنٹوں کی ریکارڈ مدت میں بازیاب،ملزم دھر لیاگیا

  بانہال // منگل کے روز بانہال کے ایک گاؤں سے محمد شریف ڈار کی طرف سے پولیس کو ایک تحریری شکایت موصول ہوئی جس ڈار نے کہا تھا کہ ان کی نابالغ بیٹی سکول گئی تھی اور اسے اعجاز احمد گنائی ولد عبدالخالق گنائی تحصیل کپواڑہ نے اغوا کر لیا ہے۔ ضلع پولیس کی طرف سے جاری ایک بیان کے مطابق کہ اس شکایت کے موصول ہونے کے فوراً بعد پولیس تھانہ بانہال میں زیر دفعہ 363 انڈین پینل کوڈ کے تحت کیس درج کیا گیا اور اس کیس کی مزید تحقیقات اور کاروائی کیلئے اسسٹنٹ سب انسپکٹر نذیر احمد کی قیادت میں پولیس ٹیم تشکیل دی گئی۔ ٹیم کی  نگرانی ایس ڈی پی او بانہال نسار احمد خواجہ اور ایس ایچ او بانہال منیر احمد خان کر رہے تھے جبکہ ایس ایس پی رام بن موہیتا شرما نابالغ لڑکی کے اس اغواء کی مجموعی طور نگرانی کر رہی تھیں۔ ابتدائی تحقیقات کے بعد پولیس ٹیم کو اغواہ کار کو گرفتار کرنے کیکئے فوری طور پر کپواڑہ کیلئے

ایک روز کے وقفہ کے بعد جموں ضلع میں پھر3کورونا کیس

 جموں//حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران صوبہ جموں میں کورونا وائرس کے03نئے مثبت معاملے سامنے آے ہیںجبکہ4مریض شفایاب ہوئے ہیں۔اس دوران38افراد اس وقت بھی صوبہ میں مجموعی طور اس مرض سے جوجھ رہے ہیں۔حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلیٹن میںپچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران ضلع وار کووِڈمثبت معاملات کی رِپورٹ فراہم کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ صوبہ جموں کے ضلع جموںمیں ہی معاملات سامنے آئے ہیں جبکہ راجوری، ادھم پور ، کٹھوعہ ،ڈوڈہ ، سانبہ ،کشتواڑ ، پونچھ ، رام بن اور رِیاسی اضلاع سے کسی مثبت معاملے کی کوئی رِپورٹ نہیں آئی ہے۔ بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اَب تک 2,52,00,369ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے13؍مئی2022کی شام تک2,47,46,238نمونوں کی رِپورٹ منفی اور 4,54,131 نمونوں کی رِپورٹ مثبت پائی گئی ہے۔علاوہ ازیں اَب تک64,94,248افراد کو نگرانی میں رکھا گیا ہے جن کا

تازہ ترین