تازہ ترین

کشتواڑ میں سوچھ بھارت مشن کے نعرے سراب ثابت

 کشتواڑ //ملک بھر میں صفائی ستھرائی کیلئے سوچھ بھارت مشن چلایاگیا جس کے تحت نہ صرف بیت الخلاء بنے بلکہ جگہ جگہ پروگرام منعقد کرکے لوگوں اور طلاب کو جانکاری فراہم کی گئی تاہم ایسا لگتاہے کہ میونسپل کمٹی کشتواڑ کو اس سکیم کے بارے میں ابھی تک پتہ نہیں چل پایا اور یہی وجہ ہے کہ قصبہ میں کئی جگہوں پر گندگی کے ڈھیر جمع ہیں اور صفائی کے دعوے سراب ثابت ہورہے ہیں ۔کشتواڑ کے شکتی نگر اور وارڈ نمبر بارہ و کے وی سکول سے لیکر فیصل آباد کشتواڑ تک گندگی کی پریشانی ہمیشہ رہی ہے اورگھروں کے باہر و سڑکوں کے کناروں ہروقت گندگی کے ڈھیرجمع رہتے ہیں ۔ قصبہ میں صفائی ستھرائی کی حالت دیکھ کرایسا لگتاہے کہ سوچھ بھارت مشن کے مقاصد بالکل بھی پورے نہیں ہوئے اور لوگوں کو انہی مشکلات کاسامناہے جو انہیں پہلے درپیش تھیں ۔اگرچہ این ایچ پی سی کی طرف سے بھی کوڑے دان نصب کئے گئے اور صفائی مہم بھی چلائی گئی تاہم پھر

کشتواڑ میں 376پولنگ پارٹیاں متعلقہ اسٹیشنوں کیلئے روانہ

کشتواڑ //ضلع کشتواڑ کے دو اسمبلی حلقوں کشتواڑ اور اندروال میں آج لوک سبھا کیلئے ہورہی پولنگ کیلئے 376پارٹیوںکو متعلقہ پولنگ اسٹیشنوں کیلئے روانہ کردیاگیاہے ۔ان پولنگ پارٹیوں کو ضلع الیکشن افسر انگریز سنگھ رانا کی قیادت میں اپنے اپنے پولنگ اسٹیشنوں کیلئے روانہ کیاگیا ۔اس موقعہ پر دیگر افسران بھی موجو دتھے ۔ ضلع الیکشن افسر نے بتایاکہ 177پولنگ پارٹیاں کشتواڑ حلقہ جبکہ بقیہ پولنگ پارٹیاں اندروال حلقہ کو روانہ کی گئی ہیں ۔انہوںنے مزید بتایاکہ مڑواہ، واڑون و دیگر دور دراز علاقوں کیلئے پہلے سے ہی پولنگ عملہ کو روانہ کردیاگیاتھا۔پولنگ عملے کی مدد کیلئے ای سی آئی ایل کے 26انجینئروں کو بھی کئی علاقوں میں بھیجاگیاہے ۔ضلع الیکشن افسر نے بتایاکہ اس دوران تمام تر انتظامات کئے گئے ہیں تاکہ پولنگ کے عمل کو احسن طریقہ سے مکمل کیاجاسکے ۔دریں اثناء پولنگ عملے سے تبادلہ خیال کرتے ہوئے انگریز سنگھ رانا

گول کی پہاڑیوں پر ہلکی برف باری

گول// گزشتہ روز سے خطہ چناب کے ساتھ ساتھ گول میں بھی پہاڑوں پر ہلکی برف باری ہوئی اور میدانی علاقوں میں شدید بارشیں ہوئیں جس کی وجہ سے سردی پھر سے واپس لوٹ آئی ہے۔ شدید بارشوں کی وجہ سے گول بازار میں رش میں کافی کمی واقع ہوئی اور آج پارلیمانی انتخابات کے پیش نظر دور دراز علاقوں میں لوگوں کے ساتھ ساتھ پولنگ عملہ کو بھی کافی پریشانیوں کا سامناکرنا پڑا۔ تاہم گول رام بن شاہراہ پر ٹریفک بدستور جاری رہا البتہ چھپرن نالہ میں ہمیشہ کی طرح لوگوںکو پانی اور پسی آنے کی وجہ سے کافی دقتوں کا سامنا کرنا پڑا ۔

خطہ چناب میں ووٹنگ آج

بانہال // پارلیمانی انتخابات کے دوسرے مرحلے کیلئے آج وادی چناب ، ادہمپور اور کٹھوعہ کی چھ اضلاع پر مشتمل پارلیمانی نشست کیلئے ووٹ ڈالے جارہے ہیں جس کیلئے سیکورٹی کے زبردست بندوبست کئے گئے ہیں۔ پارلیمانی حلقہ انتخاب ادھپور ۔ڈوڈہ میں اس بار بارہ  اْمیدوار میدان میں ہیں جن میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے ڈاکٹر جتندر سنگھ،کانگریس پارٹی کے وکرم ادتیہ سنگھ،نیشنل پینتھرس پارٹی کے ہرش دیو سنگھ اور ڈوگرہ سوابھیمان سنگھٹن کے چودھری لال سنگھ قابل ذکر ہیں۔جغرافیائی طور پر سب سے بڑی پارلیمانی نشست ڈوڈہ ، کشتواڑ،ریاسی ، رام بن اور ادھپورو کھٹوعہ اضلاع پر مشتمل ہے اوراس نشست پر16لاکھ سے زائد رائے دہندگان حق رائے دہی کا مظاہرہ کریں گے۔اس مرتبہ خطہ چناب سے کوئی بھی سرکردہ سیاسی لیڈر الیکشن میں حصہ نہیں لے رہا اور مقابلہ براہ راست بی جے پی اور کانگریس کے درمیان متوقع ہے ۔اس پارلیمانی نشست کیلئے الیکشن ک

پسیوں اور پتھروں کے باوجود شاہراہ پر ٹریفک جاری

بانہال // بدھ کے روز بھی وقفے وقفے سے بارشوں کا سلسلہ جاری رہا تاہم اس کے باوجود ٹریفک کی آمدورفت ہوتی رہی ۔شاہراہ پر انوکھی فال ، رام بن اور پنتھیال میں پسیوں اور پتھروں کے گرنے کے باوجود گاڑیوں کی آمدورفت بغیر کسی خلل کے جاری رہی۔ اتوار اور بدھ کیلئے شاہراہ فورسز کی کانوائے کیلئے مخصوص رکھی گئی ہے لیکن اس بدھ کو فورسز کی کانوائے کیلئے مخصوص دن کے اعلان کو واپس لیکر عام ٹریفک کو بھی چلنے کی اجازت دی گئی اور اس کے بعد جموں اور ادہمپور میں روکی گئی مسافر بردار گاڑیوں نے وادی کشمیر کا سفر کیا۔ ٹریفک ذرائع نے بتایا کہ منگل اور بدھ کی رات ہوئی بارشوں کے نتیجے میں بدھ کی صبح ساڑھے چھ بجے انوکھی فال ، رام بن کے مقام شاہراہ پر ایک پسی گر آئی جس کی وجہ سے اسے ٹریفک کیلئے بند کردیاگیا اور دس بجے کے آس پاس اسے بحال کیا گیا۔ ذرائع نے کہا کہ تعمیراتی کمپنی کی مشینری اور افرادی قوت کی مدد سے شا

مزید خبرں

گاڑیوں کا پولنگ عملے کیلئے استعمال  رام بن میں مسافروں کو دربدر ہوناپڑگیا ایم ایم پرویز رام بن//بڑی تعداد میں گاڑیوں کے پولنگ عملہ کیلئے استعمال کی وجہ سے رام بن میںمسافروں کو ٹرانسپورٹ کی سہولت نہ مل سکی اور انہیں دربدر ہوناپڑگیا۔ضلع میں گاڑیوں کی کمی کی وجہ سے لوگوں کو پریشانی کے عالم میں اِدھر اُدھر گھومتے پھرتے دیکھاگیا ۔صورتحال اس قدر خراب تھی کہ مائیں بچوںکو گود میں اٹھاکر پیدل چلتی نظر آئیں اورعمر رسیدہ افراد بھی پیدل چلتے رہے ۔رام بن میں کئی میٹاڈوریں، ٹاٹاسومو اور دیگر مسافرگاڑیاں پولنگ عملہ کیلئے استعمال کی جارہی ہیں جس وجہ سے ٹرانسپورٹ کا نظام درہم برہم ہوکر رہ گیا۔مسافروںنے انتظامیہ پر سخت برہمی کا اظہا رکرتے ہوئے کہاکہ انتظامیہ کو گاڑیوںکو پولنگ عملے کیلئے استعمال کرنے سے قبل کوئی متبادل انتظام کرناچاہئے تھاتاہم ایسا نہیں کیاگیا۔ انہوںنے کہاکہ گاڑیاں نہ م

تازہ ترین