کتاب و سنت کے حوالے سے مسائل کا حل

کورونا متاثرہ میت کی تکفین و تدفین۔۔۔ چند اہم مسائل سوال:گذشتہ جمعرات دس افراد کرونا سے موت کے منہ میں چلے گئے ۔فوت شدہ افراد کے غسل اور کفن دفن کے مسائل سامنے آئے ۔کئی فوت شدہ افراد کو بغیر غسل دیئے تابوت میں ہی قبر کے حوالے کیا گیا ۔اس صورت حال میں یہ سوالات پیدا ہورہے ہیں کہ اس وبائی بیماری میں فوت ہونے والے افراد کے بارے میں تمام وہ احکام جو ایک مسلمان میت کے ساتھ منسوب ہوتے ہیں ،اُن پر عمل کے متعلق کیا کیا رخصت اور سہولت ہے، نیز غسل ،کفن دفن و جنازہ کس طرح اہتمام کیا جائے ۔اس لئے کہ ہمارے علاقہ میں ایک میت کو بغیر غسل کے دفن کیا گیا۔ عبدالعزیز ۔شوپیان جواب :کرونا کی وبائی بیماری سے فوت ہوئے شخص کے متعلق وہی سارے احکام ہیں جو دوسرے کسی بھی مسلمان کی میت کے لئے ہیں،البتہ اس سلسلے میں طبی ماہرین جو احتیاط برتنے کا حکم دیں، اُس کی پوری پابندی کی جائے۔اس سلسلے میں یہ امر م

سید الانبیاء صلی اﷲ علیہ وسلم کی خصوصیات

اللہ رب العالمین نے فرمایا’’جب اللہ تعالیٰ نے نبیوں سے(سید الانبیاء صلی اللہ علیہ وسلم کو چھوڑ کر تمام انبیائے کرام علیہم السلام سے)میثاق(عہد)لیاکہ جو کچھ میں تمہیںکتاب و حکمت دوں۔پھر تمہارے پاس وہ رسول (صلی اللہ علیہ وسلم )آئے،جو تمہارے پاس کی چیز کو سچ بتائے تو تمہارے لئے اُس پر ایمان لانا اور اُس کی مدد کرنا ضروری ہے۔فرمایا کہ تم اسکے اقراری ہو ؟اور اس پر میرا ذمہ لے رہے ہو؟سب نے کہا کہ ہمیں اقرار ہے۔فرمایا،تو اب گواہ رہو اور خود میں بھی تمہارے ساتھ گواہوں میں ہوں۔پس اس کے بعد بھی جو پلٹ جائیں وہ یقینا پورے نا فرمان ہیں۔‘‘(سورہ آل عمران آیت نمبر  ۸۱؎  ۸۲؎)  نبوت ازل سے ابد تک  سورہ آل عمران کی آیات نمبر۸۱؎ ، ۸۲ کی تفسیر میں مولانامفتی محمد شفیع آگے لکھتے ہیں۔’’اِس سے معلوم ہوا کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی نبوت &rs

تازہ ترین