تازہ ترین

اسلام ،میڈیا اور مسلمان

بہت سے حقائق اور فضیلت کی باتیں ناپید ہوگئی ہوتیں اور انسانیت وحشی درندوں کا ایک ریوڈ بن گئی ہوتی اگر اسلام رونما نہ ہوا ہوتا۔اسلام اللہ کا دین ہے اور اس دین سے ناواقف لوگوں کو اس طرف متوجہ کرنا چاہئے کہ یہ دین ِ فطرت ہے کیونکہ زندگی کے مختلف پہلوئوں سے متعلق اس کی تعلیمات فطرت ِ سلیمہ اور صحت مندانہ نظریات کے تقاضوں کے عین مطابق ہیں اور اس کے اصول و ضوابط انسان کو درجۂ کمال تک پہنچانے اور اُسے سکون و اطمینان میسر کرنے کے لئے ہی ہیں۔ لفط فطرت کے تعلق سے اختلاف ِ رائے ہوسکتا ہے ،یہ ممکن ہے کہ کوئی شخص اپنی طبیعت کے مطابق کسی چیز کو اچھا قرار دے اور کوئی اپنی طبیعت کے مطابق بُرا ،مگر فطرت کا لفظ جب بھی بولا جائے گا اس سے مُراد فطرت ِ سلیمہ ہی ہوگی،اگر اس میں کوئی خرابی دَر آئے تو اُسے قابل لحاظ نہیں سمجھا جائے گا ۔فطرت میں جو بھی نقص لاحق ہوگا وہ شاذ سمجھا جائے گا اور اس پر چُپ رہنے او

حضرت علیؓ شیرِ خدا

اسلامی تاریخ میںحضرت علی رضی اللہ عنہ کا شمار انتہائی اہم اور عظیم شخصیات میںہوتا ہے ۔آپ ؓ نہ صرف نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے محبوب ترین ساتھی تھے بلکہ آپؐ کے چچہیرے بھائی بھی تھے ،ساتھ ہی آپؓ کو حضور پاک ؐ کے داماد کا شرف بھی اُس وقت حاصل ہوا جب آنحضرت ؐ نے اپنی پیاری دختر حضرت فاطمہ ؓ کا نکاح آپؓ سے کردیا ۔ پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے چچا زاد بھائی حضرت علیؓ کی پرورش کی ذمہ داری اُس وقت لے لی جب آپؓ کی عمر دس سال کی تھی اور اس طرح حضرت علیؓ نے اپنا دورِ بچپن حضور اکرم ؐ کے زیر سایہ گزارااورحضور اکرمؓ سے ہی براہِ راست تعلیم و تربیت حاصل کی ۔حضرت علیؓ کی نبی اکرم ؐ کے ساتھ نزدیکی قربت کے باعث آپ ؓ نے نبی اکرمؐ کے اوصافِ حمیدہ کو بخوبی دیکھا  اور سمجھاتھا جس کے نتیجہ میںعمر بھرآپؓ بھی اُنہیں اصولوں پرکاربند رہ کر عمل پیرا رہے۔جناب ِ رسول اکرم ؐ

اپنی خواہشات کیلئے بچوں کی خواہشات قربان نہ کریں

چندروز قبل یعنی 26؍فروری کی صبح کوبورڈ آف اسکول ایجوکیشن نے دسویں جماعت کے امتحان کے نتائج جیسے ہی منظر عام پر لائے تو سماجی رابطہ کی ویب گاہوں پہ چار سُو لوگ ایک دوسرے کو مبار ک بادی کے پیغامات دینے شروع ہو گئے ۔کہیں پہ غربت کے باوجود کسی بچے کو امتخان میں کامیابی کی مبارک باد دی جا رہی تھی تو کہیں پہ قوت گویائی اور سماعت سے محروم اننت ناگ کے ایک مضافاتی گائوں کی ایک معذور بچی کا حیرت انگیز طریقے سے90فیصد نمبرات سے کامیاب ہونے پر اسکو فیس بُک صارفین کی طرف سے حوصلہ افزائی کی جا رہی تھی۔اس امتحان میں بھی ایک بار پھر لڑکیوں نے لڑکوں کو پیچھے چھوڑتے ہوئے اچھے نمبرات حاصل کیے۔بورڈ حکام کے مطابق 75فی صد اُمیدواروں نے کامیابی حاصل کی ۔اعداد و شمار کے مطابق لڑکوں میں کامیابی کی شرح 74.04فیصد جب کہ لڑکیوں میں 76.09فیصدرہی ۔اخباری رپورٹس کے مطابق اس امتحان میں مجموعی طور پر 75132اُمیدوار شامل

انڈین اکنامک سروس اور انڈین سٹیٹسٹیکل سروس

مسابقتی امتحانات کی اہمیت سے ہم تمام واقف ہیں۔ ملک کے تمام بڑے انتظامی عہدوں کیلئے جس قابلیت کی ضرورت ہوتی ہے ان کی جانچ کے لیے ملک میں مختلف مسابقتی امتحانات مرکزی اور ریاستی سطح پر منعقد کیے جاتے ہیں۔ مرکزی سطح پر یونین پبلک سروس کمیشن جبکہ ریاستی سطح پر مختلف ریاستوں کے پبلک سروس کمیشن کے تحت یہ امتحانات منعقد کیے جاتے ہیں۔ اس کے علاوہ ریلوے کی اسامیوں کو پُر کرنے کے لئے ریلوے ریکروٹمنٹ بورڈ، مختلف مرکزی محکموں میں گریڈ بی کی سطح کی اسامیوں کوپُر کرنے کے لئے ایس ایس سی (اسٹاف سلیکشن کمیشن) ، عوامی شعبہ کی بینکوں میں پروبیشنری آفیسرس کی تقرری کے لیے آئی بی پی ایس (انڈین بینکنگ پرسونل سلیکشن) ، فوج میں شمولیت کے لیے این ڈی اے، کمبائنڈ ڈیفینس سروس و غیرہ کے تحت امتحانات منعقد کیے جاتے ہیں۔ ان تمام مسابقتی امتحانات میں کسی مخصوص شعبہ کی تعلیمی قابلیت  یا ڈگری کی ضرورت نہیںہوتی۔ ا

کیا ہم مسلمان ہیں ؟

اگر اقوام عالم کی تاریخ کا موازنہ مسلمانوں کی تاریخ کے ساتھ کیا جائے تو مسلمان وہ واحد ملت ہوگی جسکی تواریخ میں اپنے فرائض کے تئیں وفادار کم اور منافق وغدار زیادہ ہونگے ۔ یہ بات اظہر من الشمس کی طرح عیاں و بیاں ہے کہ مسلمانوں نے جتنی بھی جنگیں لڑی اور فتوحات حاصل کیں وہ ظاہری اسباب مثلاً افواج کی تعداد و لوہے کی بنیادپر حاصل نہیں کیں بلکہ اللہ پاک پر راسخ ایمان و اعتماد ہونے کی وجہ سے حاصل کی پھر چاہے میدان بد ہو یا کوئی اور اُسکے بعد ہمیں یہ بات بھی ذہن نشین رکھنی چاہئے کہ میدان بدر رونما ہونے کے بعد پیغمبر اعظم ﷺ کے مبارک دور میں پھر اسکے بعد خصوصاً خلیفہ اول و دوم کے ادوار میں جس طرح مسلمان فتوحات سے ہمکنار ہوتے چلے گئے، تواریخ کا مطالعہ کرنے سے پتہ چلتا ہے شائد اب ایک قلیل عرصے میں ہی پوری دنیا پر اسلامی نظام نافذ ہونے والا ہے مگر بدقسمتی سے یہ نہ ہوسکا جسکی وجہ خاصکر مسلمانوں میں

تازہ ترین