دو ماہ بعد پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں پھر اضافہ

نئی دہلی// دو ماہ بعد منگل کے روز پہلی بار پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا۔ ملک کی سب سے بڑی آئل مارکیٹنگ کمپنی انڈین آئل کارپوریشن کے مطابق قومی دارالحکومت دہلی میں آج پٹرول 15 پیسے مہنگا ہر کر 90.55 روپے فی لیٹر پر پہنچ گیا۔ ڈیزل کی قیمت 18 پیسے بڑھی اور یہ 80.91 روپے فی لیٹر ہو گیا۔ رواں برس 27 فروری کے بعد پہلی مرتبہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا ہے۔ دریں اثنا 24 مارچ ، 25 مارچ ، 30 مارچ اور 15 اپریل کو ان کی قیمتوں میں کٹوتی کی گئی تھی ، جبکہ باقی دن قیمتیں مستحکم رہیں۔ ممبئی اور چنئی میں پٹرول 12-12 پیسے مہنگا ہو کربالترتیب 96.95 اور 92.55 روپے فی لیٹر فروخت ہوا۔ کولکتہ میں اس کی قیمت 14 پیسے بڑھ کر 90.76 روپے فی لیٹر ہوگئی۔ ڈیزل ممبئی میں 17 پیسے ، چنئی میں 15 پیسے اور کولکتہ میں 17 پیسے مہنگا ہوگیا۔ ممبئی میں اس کی قیمت 87.98 روپے ، چنئی میں 85.9

کھاد و جراثیم کش ادویات کی دکانیں کھلی رکھنے کے احکامات جاری

سرینگر //کاشتکاروں  اور باغ مالکان کو راحت دینے کیلئے ، جموں و کشمیر حکومت نے کشمیر میں لاک ڈاؤن کے دوران کھاد اور جراثیم کش ادویات کی دکانوں کو کھلا رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔حکومت نے ایک حکم نامہ جاری کیا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران کشمیر میں کھاد اور کیڑے مار ادویات کی تھوک اور  پرچون دکانیں کھلی رہیں گی۔ اس ضمن میںڈائریکٹر ہارٹیکلچر کشمیر اعجاز احمد بٹ نے بھی کام کاج کو یقینی بنانے کے لئے ایک اجلاس طلب کیا۔جس دوران انہوں نے کاشتکاروں / باغبانیوں کو مشورہ دیا کہ وہ کسی بھی مدد کے لئے اپنے متعلقہ چیف باغبانی افسران سے رابطہ کریں۔ مزید یہ کہ کاشتکاری برادری کی سہولت کے لئے محکمہ نے 0194-2311484  ایک ہیلپ لائن نمبر قائم کیاہے۔ ڈائریکٹر نے لاک ڈاؤن کے دوران کھاد اور کیڑے ادویات کی دکانوں کو چلانے کی اجازت دینے پر ایل جی انتظامیہ کا شکریہ ادا  کیا۔

مقامی معیشت کو فروغ دینے کی کوشش

جموں// پرنسپل سیکرٹری زرعی پیداوار اور کسانانِ بہبود محکمہ نوین چودھری نے جموں وکشمیر کے زراعت اور باغبانی مصنوعات کی برآمدات کو بڑھاوا دینے کے منصوبے پر عمل درآمد پر تبادلہ خیال کرنے کے لئے ایک میٹنگ کی صدارت کی۔میٹنگ میں اس منصوبے پر عمل درآمد کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا، جس کا عنوان تھا ’’ ڈیولپنگ ایکسپورٹ اورنٹیڈ ایگریکلچر اینڈ ہارٹیکلچر فار انہنسنگ فارمرس‘‘جسے اے پی ڈی اے نے اے ایف سی کے ساتھ عملایا ہے۔ اس منصوبے کے تحت مقامی معیشت کو فروغ دینے کے لئے جموں و کشمیر کے منتخب زراعت اور باغبانی مصنوعات کی پیداوار ، پروسیسنگ اور مارکیٹنگ کی جائے گی۔دورانِ میٹنگ پرنسپل سیکرٹری نے پاور پوائنٹ پرزنٹیشن پیش کی اور سیب اور اخروٹ کے لئے زرعی برآمد زون قائم کرنے اور جموں و کشمیر کی اہم فصلوں جیسے زعفران ، باسمتی اور چیری کو فروغ دینے کی حکمت عملی کے بارے میں جا

تازہ ترین