’اگر جاوید میانداد نہ ہوتے تو وسیم اکرم وسیم اکرم نہ ہوتا‘

  لاہور/سابق پاکستانی پیسر نے اپنے انٹرنیشنل ون ڈے کیریئر کا آغاز 1984ء میں نیوزی لینڈ کے خلاف فیصل آباد میں میچ سے کیا تھا ۔سابق لیجنڈ بالر وسیم اکرم نے اپنا تابناک کیریئر جاوید میاں داد کی مرہون منت قرار دے دیا۔سابق پیسر نے سوشل میڈیا پر ایک تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا ہے کہ یہ وہ لمحہ تھا جب 1984ء  میں راولپنڈی میں یہ 17 سالہ نوجوان پاکستان کے لیے منتخب ہوا، اگر جاوید میانداد نہ ہوتے تو وسیم اکرم وسیم اکرم نہ ہوتا۔یاد رہے کہ سابق پیسر نے اپنے انٹرنیشنل ون ڈے کیریئر کا آغاز 1984ء میں نیوزی لینڈ کے خلاف فیصل آباد میں میچ سے کیا تھا۔ وسیم اکرم کا شمار کرکٹ کی تاریخ کے عظیم ترین فاسٹ بولرز میں ہوتا ہے۔ انہیں ون ڈے کرکٹ میں 500 وکٹیں لینے والے پہلے بولر کا اعزاز حاصل ہے۔  

ٹی آر سی فٹبال سٹیڈیم میں تقریب

 سرینگر//نیشنل اینڈ انٹرنیشنل فٹ بالرز فورم جموں کشمیر کی جانب سے سنیچرکو’’ ٹی آر سی‘‘ ٹرف فٹبال اسٹیڈیم سرینگر میں مختلف اضلاع میں نئی قائم کی گئی فٹ بال اکیڈمیوں میں کٹ تقسیم کئے گئے۔تقریب کی صدارت مشیر برائے لیفٹنٹ گورنر جموں کشمیر فاروق خان نے کی   جو اس موقعہ پر مہمان خصوصی تھے۔ فاروق خان نے خطاب میں کہا ’’یہ دیکھ کر بہت اچھا لگتا ہے کہ نیشنل اینڈ انٹرنیشنل فٹ بالرز فورم جیسی رضاکارانہ تنظیم کھلاڑیوں کی حوصلہ افزائی اور کھیل کی بہتری کے لئے آگے آرہی ہے۔فاروق خان نے اس طرح کی تقاریب کو کامیاب انداز میں منعقد کرنے پر نیشنل اینڈ انٹرنیشنل فٹ بالرز فورم کے منتظمین کو مبارکباد پیش کی۔ مشیر نے بین الاقوامی فٹ بالرز جن میں محمد یوسف ڈار ، خورشید احمد بابا ، محمد سید ، اسلم پرویز ، ظہور ہارون ، معراج دین وڈو ، ساجد ڈار اور ہلال پرے سے

تازہ ترین