ملک میں کورونا وائرس کے 36652نئے معاملے،512تازہ اموات

نئی دہلی//صحت و خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کی جانب سے ہفتے کے روز جاری اعداد و شمار کے مطابق، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے 36652 نئے معاملے سامنے آئے ہیں، جس سے متاثرہ افراد کی تعداد 96.08 لاکھ ہوگئی ہے۔  اس دوران 42533 مریض صحتمند ہوئے اور اسی کے ساتھ ری کوری کی شرح 94.28 فیصد ہوگئی۔  نئے سرگرم معاملوں کے مقابلے کورونا سے نجات پانے والوں کی تعداد زیادہ رہنے سے سرگرم معاموں میں 6393 کی کمی واقع ہوئی ہے اور ان کی تعداد کم ہوکر 409689 رہ گئی ہے۔  اسی عرصے میں 512 مزید مریضوں کی اموات کے ساتھ تعداد اموات بڑھ کر 139700 ہوگئی ہے اور اموات کی شرح اب بھی 1.45 فیصد ہے۔

ملک میں کورونا متاثرین کی تعداد 96 لاکھ کے قریب

 نئی دہلی// ملک میں کورونا کے نئے کیسز میں کچھ دن سے کمی کے باوجود متاثرہ افراد کی تعداد 96 لاکھ کے قریب پہنچ گئی ہے وہیں اس وبا کو شکست دینے والوں کی تعداد مسلسل بڑھ کر 90 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے ۔پچھلے پانچ دنوں سے کرونا کے نئے معاملے 40 ہزار سے کم رہے ہیں اور صحت مند افراد کا تناسب اس سے کہیں زیادہ ہے جس کی وجہ سے فعال معاملوں کی شرح کم ہوکر 4.35 فیصد ہوگئی ہے ۔صحت اور خاندانی بہبود کی مرکزی وزارت کی جانب سے جمعہ کو جاری کئے گئے اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 36595 نئے کیس سامنے آئے ہیں اور متاثرہ افراد کی تعداد 95.71 لاکھ ہوگئی ہے ۔ اس دوران 42916 مریض صحتمند ہوئے اور اس کے ساتھ ری کوری کی شرح بڑھ کر 94.20 فیصد ہوگئی۔ اب تک 90.16 لاکھ مریض اس بیماری کو شکست دے چکے ہیں۔ نئے معاملوں کے مقابلے صحت مند ہونے والوں کے معاملوں میں 6861 کی کمی واقع ہوئی اور ان کی تعداد

سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کی کسان تحریک کی حمایت

جالندھر//سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن نے جمعہ کے روز تینوں زرعی قوانین کی مخالفت کرنے والے کسانوں کی جدوجہد کی حمایت کرنے کا اعلان کیا۔سینئر ایڈووکیٹ ایچ ایس پھولکا نے جمعہ کے روز یہاں جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ ایسوسی ایشن  کے صدر، دوشینت دوے، نے  کسانوں کے نمائندے گرنام سنگھ چڈونی (ہریانہ کے کسان رہنما) ، بلدیو سنگھ سرسا (کسان رہنما) ، رنجیت سنگھ راجو (راجستھان کے کسان رہنما) کے ساتھ میٹنگ کی اور کسانوں کی حمایت کرنے کا اعلان کیا۔ مسٹر دوے  نے یہ بھی کہا کہ وہ کسی بھی قسم کی قانونی مدد اور کسانوں کے معاملے میں  لڑنے کے لئے تیار ہیں۔مسٹر پھولکا نے آج پنجاب بار کونسل کو بتایا کہ دہلی بار کونسل نے پہلے ہی کسانوں کی مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے اور وزیر اعظم کو ایک خط لکھ کر کاشتکار مخالف تینوں قوانین کو واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ پنج

میڈیا کسانوں کو خالصتانی نہ کہے : ایڈیٹرز گلڈ

نئی دہلی//ایڈیٹرز گلڈ آف انڈیا نے میڈیا کے ایک حصے کی طرف سے دارالحکومت میں کسانوں کی تحریک میں حصہ لینے آنے والے کسانوں کو "خالصتانی" اور "غدار" قرار دینے  کی شدید مذمت کی ہے اور میڈیا سے ذمہ دار اور غیرجانبدارانہ صحافت کرنے کی اپیل کی ہے۔ایڈیٹرز گلڈ آف انڈیا کی صدر سیما مصطفی اور جنرل سکریٹری سنجے کپور کے ذریعہ یہاں جمعہ کے روز جاری کردہ ایک ریلیز میں ، تشویش کا اظہار کیا گیا ہے کہ میڈیا کا ایک طبقہ کسانوں کو خالصتانی اور غدار قرار دے رہا ہے اور ان کی تحریک کو بدنام کررہا ہے۔ بغیر کسی ثبوت کے کسانوں کے خلاف اس طرح کے الزامات لگانا مناسب نہیں ہے۔ یہ صحافت کی ذمہ داری اور اخلاقیات کے منافی ہے ، لہذا ، میڈیا اداروں کو خبریں دیتے ہوئے منصفانہ اور توازن کی پیروی کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے اور تعصب کی پیروی نہ کریں۔ وہ  کسی غلط اور غلط جھوٹ پروپیگنڈہ  کا

سیاستدان اپنے مخالفین کو دشمن نہ سمجھیں

نئی دلی//نائب صدر جمہوریہ ہند ایم وینکیا نائیڈو نے تمام سیاسی پارٹیوں سے ‘ملک پہلے ’ کی پالیسی اختیار کرنے کی اپیل کرتے ہوئے جمعہ کے روز کہا کہ تمام سیاستدانوں کو اپنے مخالفین کو صرف حریف سمجھنا چاہیے اور انھیں آپس میں اچھی رسم و راہ رکھنی چاہیے ۔مسٹرنائیڈو نے یہاںکل آنجہانی وزیراعظم آئی کے گجرال کے اعزاز میں ورچوول طور پر ایک یادگاری ڈاک ٹکٹ جاری کرتے ہوئے انہیں زبردست خراج عقیدت پیش کیا اور کہا کہ سیاستدانوں کو اپنے مخالفین کو صرف حریف سمجھنا چاہیے ، دشمن نہیں سمجھنا چاہیے بلکہ انھیں باہم اچھے سماجی رشتے رکھنے چاہیئیں۔ تمام پارٹیوں ست ‘ملک پہلے ’ کی پالیسی پر عمل کرنے کی تلقین کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ اپنے اختلافات کو الگ رکھ کر قومی مفاد میں خارجہ پالیسی کی حمایت کرنی چاہیے ۔ اس بات کو اجاگر کرتے ہوئے کہ جنوبی ایشیا دنیا کی تقریبا ایک چوتھائی آبادی کا مس

تازہ ترین